Book Name:Dilchasp Malomaat Sawalan Jawaaban Part 01

سوال      رمضانُ المبارک میں لوگ مسجِد میں جو اِفطاری بھجواتے ہیں  کیا غیر روزہ دار اُسے کھاسکتاہے؟

جواب     جو افِطاری روزہ داروں کے لیے  بھیجی جاتی ہے وہ غیر روزہ دار نہیں کھاسکتا،  بِالفرض کوئی مریض یا مُسافِر ہے یا کسی وجہ سے اُس کا روزہ ٹوٹ چکا ہے تو وہ اُس اِفطاری میں شریک نہ ہو۔ اعلیٰ حضرت امام احمد رضا خان عَلَیْہِ رَحْمَۃُ الرَّحْمٰنفرماتے ہیں: غیر روزہ دار وں کو اس کا کھانا حرام ہے۔([1])

سوال      کیا مُتولِّی مسجد کا چندہ کسی کو ادھاردے سکتا ہے؟

جواب     اعلیٰ حضرت امام احمدرضا خان عَلَیْہِ رَحْمَۃُ الرَّحْمٰن فرماتے ہیں: مُتولِّی کو روا(یعنی جائز)نہیں کہ مالِ وَقْف کسی کو قرض(دے) یا بطورِ قرض اپنے تَصرُّف میں لائے۔([2])

سوال   کیا بچ جانے کی صورت میں مدرسے میں پکایا گیا کھانا محلے میں تقسیم کرسکتے ہیں؟

جواب   وہ کھانا جو مدرَسے میں پکایا گیا ہو اور بچ جائے، دوسرے وَقْت طَلَبہ بھی نہ کھائیں، خراب ہوجانے کا اندیشہ ہونے کی صُورت میں محلے یا عام مسلمانوں میں تقسیم کرسکتے ہیں۔([3])

سوال   اپنی دکان پر یا گھر میں پینے کے لیے مسجد یا مدرَسے کے کولر سے ٹھنڈا پانی بھر کر لے جانا کیسا؟

جواب   ناجائز ہے، مؤذِّن، خادم یا امام بلکہ مُتولِّی بھی چندے کی ان چیزوں کو خلافِ شریعت استعمال کرنے کی اجازت نہیں دے سکتے۔([4])

سوال کسی سے مدرسے کا ڈیسک ٹوٹ گیا تو کیاحکم ہے؟

جواب اگر اس کی اپنی غلَطی سے ڈَیسک ٹوٹا یا کوئی سا نقصان ہوا تو تاوان دینا ہوگا اگر اپنی غلَطی سے ایسا نہیں ہوا تو اِس پر مُؤاخذَہ نہیں۔([5])

سوال مدرسے کے ڈیسک ، دروازے اور دیوار وغیرہ پر کچھ لکھنا کیسا؟

جواب مدرسَہ اور مسجِد کی چیزوں پر کُجا،  کسی دوسرے کے مکان، دُکان دیوار، دروازے یا گاڑی اور بس وغیرہ چیزوں پر بھی بِلا اجازتِ شرعی کچھ لکھنا اسٹیکر یا اِشتِہار چَسپاں کرنا ممنوع ہے۔([6])

سوال  زکوٰۃ و فِطرے کا حیلہ کرنے کا آسان طریقہ بتائیے؟

جواب  کسی فَقیرِ شَرعی کو یا اس کے وکیل کو مالِ زکوٰۃ و فِطرہ کا مالِک بنادیا جائے مثلاً اُس کو نوٹوں کی گڈّی یہ کہہ کر دیدی کہ یہ آپ کی مِلک ہے۔وہ اُس کو ہاتھ میں لے کر یا کسی طرح قبضہ کرلے اب یہ اِس کا مالک ہوگیا اور کسی بھی کام(مثلاً مسجِد کی تعمیر وغیرہ)میں صَرْف کردے۔یوں زکوٰۃ ادا ہونے کے ساتھ ساتھ دونوں ثواب کے بھی حقدار ہوں گے۔اِنْ شَآءَاللهُ عَزَّ  وَجَلَّ۔([7])

سوال      مَدَنی قافلے کے اختتام پر اگر مُشترکہ رقم بچ جائے توکیا کیا جائے؟

جواب     واجِب ہے کہ پائی پائی کا حساب کرکے ہر ایک کو اُس کے حصّے کی رقم لوٹادی جائے۔ہاں جو مرضی سے اپنے حصّے کی رقم کسی کار خیر میں دینا چاہے تو دے سکتا ہے، باہَم مشورہ سے مثلاً یہ بھی طے کیا جاسکتا ہے کہ ہم بچی ہوئی رقم اسی مسجد کے چندے میں پیش کردیتے ہیں۔([8])

مسجد

سوال      کونسی عمارت شیطان سے  بچاؤکے لیے قلعہ ہے؟

جواب     مروی ہے کہ اَلْمَسْجِدُ حِصْنٌ حَصِینٌ مِّنَ الشَّیْطٰن۔یعنی مسجد شیطان سے بچنے کے لیے ایک مضبوط قَلعہ ہے۔([9])

 

سوال   رضائے الٰہی کے لیے مسجد بنانے کا کیا ثواب ہے؟

جواب   حضور نبیِّ مکرم صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم  نے ارشاد فرمایا: جواللہ عَزَّ  وَجَلَّ کے لئے ایک مسجد بنائے گا اللہ عَزَّ  وَجَلَّ اُس کے لئے جنت میں ایک گھر بنائے گا۔([10])

سوال   کسی عمارت کے مسجد ہونے  کے لیے کیا ضروری ہے؟

جواب   مسجد ہونے کے لیے یہ ضرور ہے کہ بنانے والا کوئی ایسا فعل کرے یا ایسی بات کہے جس سے مسجد ہونا ثابت ہوتا ہو محض مسجد کی سی عمارت بنا دینا مسجد ہونے کیلئے کافی نہیں۔([11])

سوال   مسجد بنائی اور جماعت کی اجازت دے دی تو کیا یہ مسجد ہونے کیلئے کافی ہے؟

جواب   مسجد بنائی اور جماعت سے نماز پڑھنے کی اجازت دیدی مسجد ہو گئی اگرچہ جماعت میں دو ہی شخص ہوں مگر یہ جماعت علی الاعلان یعنی اذان و اقامت کےساتھ ہو۔([12])

سوال   مسجدیں خوشبودار رکھنے کے متعلق حدیثِ پاک میں کیاحکم ہے؟

 



3   فتاوی رضویہ، ۱۶/ ۴۸۷۔

1   فتاوی رضویہ، ۱۶/ ۵۷۴۔

2   چندے کے بارے میں سوال جواب، ص۵۵۔

3   چندے کے بارے میں سوال جواب، ص۵۷۔

4   چندے کے بارے میں سوال جواب، ص۶۱۔

1   چندے کے بارے میں سوال جواب، ص۶۱۔

2   چندے کے بارے میں سوال جواب، ص۷۱۔

3   چندے کے بارے میں سوال جواب، ص۹۲۔

4   مصنف ابن ابی شیبة، کتاب الزھد، باب ماجاء فی لزوم المساجد، ۸/ ۱۷۲، حدیث: ۴۔

1   ابن ماجہ ، کتاب المساجد، باب من  بنی للّه مسجدا، ۱/ ۴۰۸، حدیث: ۷۳۷۔

2   فتاوی خانیة، کتاب الوقف، باب الرجل یجعل دارہ...الخ، ۲/ ۲۹۶۔بہار شریعت ، حصہ۱۰، ۲/۵۵۷۔

3   بہار شریعت ، حصہ ١٠، ۲/ ۵۵۷۔



Total Pages: 99

Go To