Book Name:Dilchasp Malomaat Sawalan Jawaaban Part 01

سوال   کیا قبر میں چٹائی وغیرہ بچھاسکتے ہیں ؟

جواب   قبر کے اندر چٹائی وغیرہ بچھاناجائزنہیں  ہے کہ بے سبب مال ضائع کرنا ہے۔([1])

سوال   میت کو قبر میں لِٹانے کا کیا طریقہ ہے ؟

جواب   میت کو  سیدھی کَروَٹ پر اس طرح لِٹائیں کہ اس کا منہ اور سینہ قبلے کی طرف ہو جائے۔([2])

سوال   کیا میت کو قبر میں لِٹانے کے بعد کفن کی بندش کھول سکتے ہیں ؟

جواب   جی ہاں! قبر میں  رکھنے کے بعد کفن کی بندش کھول دیں کہ اب ضرورت نہیں اور اگر بندش نہیں کھولی تو بھی حَرج نہیں ۔([3])

سوال   قبر اوپر سے کس شکل کی بنائی جائے ؟

جواب   قبر اونٹ کی کوہان کی طرح ڈھال والی بنائیں چَوکَھٹی نہ بنائیں۔([4])

سوال   قبر پر پانی چھڑکنا کیسا ہے ؟

جواب   بعدِ دفن قبر پر پانی چھڑکنا مَسنُون ہے۔([5])اس کے علاوہ بعد میں پودے وغیرہ کو پانی دینے کی غرض سے چھڑکیں تو جائز ہے۔([6]) بعض لوگ اپنے عزیز کی قبر پر بلا مقصدِ صحیح محض رسمی طور پر پانی چھڑکتے ہیں یہ ناجائز اور اِسراف ہے۔([7])

زکوٰۃ

سوال   زکوٰۃ کا کیا مطلب ہے؟

جواب   زکوٰۃ سے مراد شریعت کے مقرر کَرْدَہ مال کے ایک حصہ کو اللہ تعالٰی کے لیے کسی مسلمان فقیر (مُستَحق)کو مالک بنا دینا ہے جو ہاشمی ہو اور نہ ہی کسی ہاشمی کا آزاد کردہ غلام ہواور مالک بنانے والا اُس مال سے اپنا نفع بالکل جدا کرلے۔([8])

سوال   زکوٰۃ کی شرعی حیثیت کیا ہے؟

 

جواب   زکوٰۃ فرض ہے ، اس کا مُنکرکافر اور ادا میں تاخیر کرنے والا گُنہگار ہے۔([9])

سوال   قراٰن کریم میں زکوٰۃ ادا نہ کرنے والوں کے لیے کیا وعید آئی ہے؟

جواب    ایسوں کو قیامت میں دردناک عذاب ہوگا۔ارشادِ باری تعالٰی ہے۔(وَ الَّذِیْنَ یَكْنِزُوْنَ الذَّهَبَ وَ الْفِضَّةَ وَ لَا یُنْفِقُوْنَهَا فِیْ سَبِیْلِ اللّٰهِۙ-فَبَشِّرْهُمْ بِعَذَابٍ اَلِیْمٍۙ(۳۴) یَّوْمَ یُحْمٰى عَلَیْهَا فِیْ نَارِ جَهَنَّمَ فَتُكْوٰى بِهَا جِبَاهُهُمْ وَ جُنُوْبُهُمْ وَ ظُهُوْرُهُمْؕ-هٰذَا مَا كَنَزْتُمْ لِاَنْفُسِكُمْ فَذُوْقُوْا مَا كُنْتُمْ تَكْنِزُوْنَ(۳۵))

                                                        (پ۱۰، التوبۃ: ۳۴، ۳۵) ترجمۂ کنز الایمان: اور وہ کہ جوڑ کر رکھتے ہیں سونا اور چاندی اور اسے اللّٰہ کی راہ میں خرچ نہیں کرتےانہیں خوشخبری سناؤ دردناک عذاب کی جس دن وہ تپایا جائے گا جہنّم کی آگ میں پھر اس سے داغیں گے ان کی پیشانیاں اور کروٹیں اور پیٹھیں یہ ہے وہ جو تم نے اپنے لئے جوڑ کر رکھا تھا اب چکھو مزااس جوڑنے کا۔

سوال   اَحادیثِ کریمہ میں زکوٰۃ ادا کرنے کے کیا فوائد بیان ہوئے ہیں ؟

جواب   احادیثِ مُبارکہ میں زکوٰۃ کی ادائیگی کے بعض فوائد یہ بیان ہوئے ہیں : (1) زکوٰۃ دینابندے کے اسلام کی تکمیل ہے۔([10]) (2)زکوٰۃ کی ادائیگی سے مال کی حفاظت ہوتی ہے۔([11]) (3)زکوٰۃ ادا کرنے سے مال کا شر دور ہوجاتا ہے۔([12])

سوال   زکوٰۃ کس پر اور کب واجب ہوتی ہے؟

جواب زکوٰۃ واجب ہونے کی دس شرائط ہیں: (1)مسلمان ہونا (2)بلوغ (3)عقل (4)آزاد ہونا (5)مال بقدرِ نصاب اس کی مِلک میں ہونا،  اگر نصاب سے کم ہے تو زکوٰۃ واجب نہ ہوئی (6)پورے طور پر



5   رد المحتار، کتاب الصلاة، باب صلاة الجنازة، مطلب: فی دفن المیت، ۳/ ۱۶۴۔

6   فتاوی ھندیة، کتاب الصلاة، الباب الحادی و العشرون فی الجنائز، ۱/ ۱۶۶۔

1   جوھرة النیرة، کتاب الصلاة، باب الجنائز، ص ۱۴۰۔

2   رد المحتار، کتاب الصلاة، باب صلاة الجنازة، مطلب: فی دفن المیت، ۳/ ۱۶۹۔

3   فتاویٰ رضویہ، ۹/ ۳۷۳۔

4   مدنی وصیت نامہ، ص ۱۵۔

5   فتاویٰ رضویہ، ۹/ ۳۷۳ مفہوماً۔

6    تنویر الابصار ، کتاب الزکاة، ۳/ ۲۰۳-۲۰۶۔

1   فتاوی ھندیة، کتاب الزکاة، الباب الاول، ۱/ ۱۷۰، ملتقطاً۔

2   الترغیب والترہیب، الترغیب فی اداءالزکاۃ وتاکیدوجوبہا، ۱/۳۰۱، حدیث:۱۲۔

3   معجم کبیر، ۱۰/۱۲۸، حدیث:۱۰۱۹۶۔

4   مستدرک للحاکم، کتاب الزکاۃ ، باب التغلیظ فی منع الزکاۃ، ۲ /۶، حدیث: ۱۴۷۹۔



Total Pages: 99

Go To