Book Name:Dilchasp Malomaat Sawalan Jawaaban Part 01

سوال             کیا نمازِوتر پڑھنے کے بعد تراویح پڑھی جاسکتی ہے؟

جواب   عام طور پر تراویح وِتروں سے پہلے پڑھی جاتی ہے لیکن اگر کوئی وتر پہلے پڑھ لے تو تراویح بعد میں بھی پڑھ سکتا ہے ۔([1])

قضا نمازیں

سوال   کیا قضا نمازکے لئےکوئی وقت مُعَیَّن ہے اور کب قضا نماز پڑھنا جائز نہیں؟

جواب   قضا کے ليے کوئی وقت معین نہیں عمر میں جب پڑھے گا بَرِیُٔ الذِّمَّہ ہو جائے گا مگر طلوع و غروب اور زوال کے وقت کہ ان وقتوں میں نماز جائز نہیں۔([2])

سوال      جان بوجھ کر نماز قضاء کرنے والوں کے لئے کیا  وعید ہے؟

جواب   قرآنِ پاک میں اِرشاد ہوتا ہے: (فَوَیْلٌ لِّلْمُصَلِّیْنَۙ(۴)الَّذِیْنَ هُمْ عَنْ صَلَا تِهِمْ سَاهُوْنَۙ(۵)) (پ۳۰، الماعون: ۵، ۴)  ترجمۂ کنز الایمان:  ’’ تو ان نمازیوں کی خرابی ہے جو اپنی نماز سے بھولے بیٹھے ہیں۔ ‘‘ حدیثِ پاک میں ہے : اس سے مراد وہ ہیں جو نماز کا وقت گزار کر پڑھیں۔([3])

سوال             وہ کون سی نماز ہے جسے لوگوں پر ظاہر کرنا گناہ ہے؟

جواب   قضاء نماز کا لوگوں پر ظاہر کرنا گناہ ہے کیونکہ نماز کا ترک کرنا گناہ ہے اور گناہ کا ظاہر کرنا بھی گناہ ہے۔([4])

سوال             قضا ء نمازوں میں تاخیر کرنے  کا گناہ کیسے معاف ہوگا؟

جواب   قضاء نمازوں میں تاخیر کرنے کا گناہ توبہ یا حجِ مقبول سے معاف ہوجائے گااور جو نماز چھوٹ گئی ہے اس کی قضا ضروری ہے۔([5])

سوال             کس اندیشہ کی وجہ سے نماز قضاء کرنا جائز ہے؟

جواب   مسافر کو چور اور ڈاکوؤں کا صحیح اندیشہ ہے یونہی دائی کو نماز پڑھنے کی وجہ سے بچے کے مرجانے کا اندیشہ ہے تو نماز قضاء کرنا جائز ہے۔([6])

سوال             وہ کونسا تندرست مسلمان ہے جس سے نمازیں فوت ہوجائیں تو اُس پر قضاء واجب نہیں؟

جواب   دارُ الحرب میں کوئی مسلمان ہوا اور اُسے اَحکامِ شَرْعِیَّہ نماز، روزہ اور زکوٰۃ وغیرہ کی اِطلاع نہ ہوئی تو جب تک وہاں رہا اُن دِنوں کی قضا اُس پر واجب  نہیں۔([7])

سوال             وہ کون سا مریض ہے جس سے نمازیں فوت ہوجائیں تو اس پر قضاء نہیں؟

جواب   ایسا مریض کہ اشارہ سے بھی نماز نہیں پڑھ سکتا اگر یہ حالت پورے چھ وقت تک رہی تو اس حالت میں جو نمازیں فوت ہوئیں ان کی قضا واجب نہیں۔([8])

سوال             جس پر قضاء نمازیں ہوں کیا وہ انہیں چھوڑ کر سُنَن ونَوافل پڑھ سکتا ہے؟

جواب   قضا نمازیں نوافل سے اہم ہیں یعنی جس وقت نفل پڑھتا ہے انھيں چھوڑ کر ان کے بدلے قضائیں پڑھے کہ بَرِیُٔ الذِّمَّہ ہو جائے البتہ تراویح اور بارہ رَکعتیں سُنّتِ مُؤکَّدہ کی نہ چھوڑے۔([9])

سوال             نمازِ فجر قضاء ہونے کا اندیشہ ہو توبلاضرورتِ شَرْعِیَّہ رات دیر تک جاگنا کیسا؟

جواب   نمازِ فجرقضاء ہونے کا اندیشہ ہو تو بلاضرورتِ شرعیہ رات دیر تک جاگنا ممنوع ہے۔([10])

سوال             ایک دن کی قضاء نمازوں کی کتنی رکعتیں ہیں؟

جواب   ایک دن کی قضاء نمازوں کی 20رکعتیں ہیں۔ دورکعتیں فجرکی ، چار ظہر، چار عصر، تین مغرب ، چار عشاء کی اور تین وتر۔([11])

سوال             جس نے کبھی نمازیں ہی نہ پڑھی ہوں وہ قضائے عمری کیسے پڑھے؟

جواب   جس نے کبھی نمازیں نہ پڑھی ہوں اور اب توفیق ہوئی اور قضائے عمری پڑھنا چاہتا ہے وہ جب سے بالغ ہوا ہے اُس وقت سے حساب لگائے اور تاریخِ بلوغ بھی نہیں معلوم تو احتیاط اسی میں ہے کہ عورت نوسال کی عمرسے اور مرد بارہ سال کی عمر سے نمازوں کا حساب لگائے۔([12])

 



5   تنویر الابصار ودر مختار، کتاب الصلاۃ، باب الوتر والنوافل، مبحث صلاۃ التراویح ،  ۲/۵۹۷۔

1   بہار شریعت، حصہ ۴، ۱/ ۷۰۲۔

2   سنن کبری للبیھقی، کتاب الصلوۃ ، باب الترغیب فی حفظ   الخ ، ۲/۳۰۴ ، حدیث : ۳۱۶۳۔

3   در مختار ورد المحتار، کتاب الصلاۃ، باب قضاء الفوائت، فروع فی قضاء الفوائت، ۲/۶۵۰۔

4   رد المحتار، کتاب الصلاۃ، باب قضاء الفوائت ، ۲/۶۲۶۔

1   بہار شریعت ، حصہ ۴، ۱/۷۰۲ ملخصاً۔

2   رد المحتار، کتاب الصلاۃ، باب قضاء الفوائت ، ۲/۶۴۷۔

3   بہار شریعت ، حصہ ۴، ۱/۷۰۲۔

4   بہار شریعت، حصہ ۴، ۱/ ۷۰۶۔

1   رد المحتار، کتاب الصلاۃ، مطلب فی طلوع الشمس من مغربھا ، ۲/۳۳۔

2   نماز کے احکام، ص۳۳۸۔

3   فتاوی رضویہ، ۸/۱۵۴ماخوذاً۔



Total Pages: 99

Go To