Book Name:Dilchasp Malomaat Sawalan Jawaaban Part 01

جواب   دَجّال کی ایک آنکھ ہوگی، وہ کانا ہوگا اور اس کی پیشانی پر” کافر“لکھا ہوگا۔([1])

سوال   دجّال کے ساتھ کس کی فوجیں ہوں گی؟

جواب   دجّال کے ساتھ یہود کی فوجیں ہوں گی۔([2])

سوال   دجّال کتنے دن میں تمام رُوئے زمین کا گَشت کرے گا؟

جواب   دجّال حَرَمَین طَیِّبَیْن کے سواتمام رُوئے زمین  کاچالیس(40)دن میں گشت کرے گا۔([3])

سوال   اتنے کم دنوں میں ساری زمین کا گشت کیسےہوگا؟

جواب   کیونکہ چالیس دن میں پہلا دن سال بھر کے برابر ہوگا، دوسرا دن مہینے بھر کے برابر، تیسرا دن ہفتے کے برابراور باقی دن چوبیس گھنٹے کے ہوں گے اور وہ بہت تیزی کے ساتھ سفر کرےگاجیسے بادل کہ جس کو ہَو ا اُڑاتی ہے۔([4])

سوال   حضرتِ سَیِّدُنا عیسیٰ عَلَیْہِ السَّلَام کا دَجّال پر کیا اثر ہوگا ؟

جواب   لعین دَجّال جب حضرتِ سَیِّدُناعیسیٰ عَلَیْہِ السَّلَام کو دیکھے گاتوایسے پگھلے گاجیسے پانی میں نمک گُھلتا ہے اوروہ آپ سے بھاگے گا۔([5])

سوال   دجّال کس کے ہاتھوں قتل ہوگا؟

جواب   حضرتِ عیسیٰ عَلَیْہِ الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَام  اسے  جہنّم واصِل کریں گے ۔ ([6])

سوال  قریبِ قیامت نکلنے والا جانور”دَا بَّۃُ الْاَرْضْ“ہرشخص پرکیا نشانی لگائے گا؟

جواب  ہر مسلما ن کی پیشانی پر ایک نشان نورانی بنائے گا اور انگشتری (یعنی انگوٹھی)سے ہر کافر کی پیشانی پر ایک سخت سیاہ دھبّا،  اُس وقت تمام مسلم و کافر علانیہ ظاہر ہوں گے۔([7])

قیامت

سوال  قیامت کے دن لوگ قبروں سے کس حالت میں اُٹھیں گے؟

جواب  قیامت کے دن لوگ اپنی قبروں سے ننگے بدن،  ننگے پاؤں،  ناختنہ شُدہ اُٹھیں گے۔([8])

سوال  قیامت کے دن کون  حشر کے میدان میں منہ کے بَل چل کر جائیں گے؟

جواب  قیامت کے دن کافر منہ کے بَل  چل کر حَشر کے میدان میں جائیں گے۔([9])

سوال  قیامت کا دن کتنے سال کا ہوگا؟

جواب  پچاس ہزار سال کا۔([10])

سوال  مُنکِرِقیامت  کا کیا حکم ہے ؟

جواب   اِس کا اِنکار کرنے والا کافر ہے ۔([11])

سوال   اِسرافیل عَلَیْہِ السَّلَام جب دوسری بار  صُور پھونکیں گے  تو اپنی قبرِ مُبارک   میں سے سب سے پہلے  کون باہر تشریف لائیں گے؟

جواب   سرکارِ دو عالَم صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم۔([12])

سوال   میدانِ مَحشرکس زمین پر قائم ہوگا؟

جواب   ملکِ شام کی سرزمین پر۔([13])

 



5   بخاری، کتاب الفتن، باب ذکر الدجال، ۴/۴۵۱، حدیث: ۷۱۳۱۔

1    ابن ماجه، ابواب الفتن، باب فتنة الدجال، ۴/۴۰۶، حدیث: ۴۰۷۷۔

2   مسلم، کتاب الفتن، باب قصة الجساسة، ص۱۵۷۴، حدیث:۲۹۴۲۔

3   مسلم، کتاب الفتن، باب فی ذکر الدجال   الخ، ص۱۵۶۸، حدیث:۲۹۳۷۔

4   ابن ماجه، ابواب الفتن، باب فتنة الدجال   الخ، ۴/۴۰۶، حدیث: ۴۰۷۷۔

5   ابن ماجه، ابواب الفتن، باب فتنة الدجال   الخ، ۴/۴۰۶، حدیث: ۴۰۷۷۔

1   ابن ماجه، ابواب الفتن، باب دابة الارض، ۴/۳۹۳، حدیث: ۴۰۶۶۔   بہار شریعت، حصہ ۱، ۱/۱۲۶، ملتقطاً۔

2   مسلم، کتاب الجنۃ وصفۃ نعیمھا واھلھا، باب فناء الدنیا۔۔۔الخ، ص۱۵۲۹، حدیث:۲۸۶۹۔

3   مسلم، کتاب صفات المنافقین واحکامھم، یحشر الکافر علی وجھه، ص۱۵۰۸، حدیث: ۲۸۰۶۔

4   پ۲۹، المعارج: ۴۔

1   منح الروض الازھر ، ص۱۹۵ ۔

2   ترمذی، کتاب المناقب، باب قولہ صلی اللہ علیہ وسلم   الخ، ۴ /۳۷۸، حدیث:۳۶۸۹۔

3   مسند امام احمد، حدیث بھز بن حکیم ، ۷/۲۳۵، حدیث: ۲۰۰۴۲۔



Total Pages: 99

Go To