We have moved all non-book items like Speeches, Madani Pearls, Pamphlets, Catalogs etc. in "Pamphlet Library"

Book Name:Yateem kisay kehtay hain?

جاتا ہے بشرطیکہ اس نے یہ جہیز حالتِ صحت میں بیٹی کے سپرد کیا ہو (یعنی مرض الموت میں نہ دیا ہو)۔ (1)

شوہر زوجہ کا جہیز نہیں رکھ سکتا

سُوال:زوجہ فوت ہو جائے  تو کیا سارا جہیز شوہر رکھ سکتا ہے یا نہیں؟

جواب:زوجہ  فوت ہو جائے تو شوہر یا کوئی اور اس کے جہیز وغیرہ  کا تنہا مالِک یا حقدار نہیں ہو سکتا بلکہ وہ سارا سامان جو عورت کی ذاتی  ملکیت تھا ، اس کے مرنے کے بعد شرعی قانون کے مطابق وُرَثاء میں تقسیم ہو گا جیسا کہ میرے آقا اعلیٰ حضرت،امامِ اہلسنَّت مولانا شاہ امام احمد رضا خانعَلَیْہِ رَحْمَۃُ الرَّحْمٰن فرماتے ہیں: جہیز ہمارے بِلاد کے عُرفِ عام شائع سے خاص مِلکِ زوجہ ہوتا ہے جس میں شوہر کا کچھ حق نہیں،طلاق ہوئی تو کُل لے گی اور مَر گئی تو  اسی کے وُرَثاء پر تقسیم ہو گا ۔(2)

زوجہ کے تَرکے میں شوہر کا حصّہ

سُوال:اگر زوجہ فوت ہو جائے تو اس کے مال  میں سے شوہر کو کیا ملے گا ؟

جواب:زوجہ فوت ہوجائے تو اس کے مال  میں سے سب سے پہلے سنَّت کے مطابق اس کی تجہیز وتکفین اور تدفین کا اِہتمام کیا جائے ،پھر اس کے بعد اس کا قرض ہو تو

مـــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــدینـــہ

1…… دُرِّمُخْتار ،کتاب النکاح ،باب المھر،۴/۳۰۴

2…… فتاویٰ رضویہ ،۱۲/۲۰۳


 

 



Total Pages: 28

Go To