We have moved all non-book items like Speeches, Madani Pearls, Pamphlets, Catalogs etc. in "Pamphlet Library"

Book Name:Yateem kisay kehtay hain?

قرآنِ پاک کا حامِلہ عورت کی عِدَّت اور اس کے نان نفقے کا  بیان کرنا اس بات کی دلیل ہے کہ حالتِ حَمَل میں طلاق واقِع ہو جا تی ہے۔ یاد رکھیے! حامِلہ عورتوں کی عِدَّت وَضْعِ حمل(یعنی بچّہ جننے تک ) ہے خواہ وہ عِدَّت طلاق کی ہو یا وفات کی ۔جیسے ہی بچہ پیدا ہوا عِدَّت ختم ہو جائے گی  مثَلاً ایک دِن میں بچّہ پیدا ہو گیا تو ایک ہی دن میں عِدَّت ختم اور اگر مثلاً چھ ماہ میں بچہ پیدا ہوا تو چھ ماہ تک عِدَّت رہے گی۔

جہیز کا مالِک کون؟

سُوال:جہیز مَرد یا عورت میں سے کس کی مِلک ہوتا ہے؟

جواب:جہیز عورت کی مِلک ہوتا ہے۔(1)شادی بیاہ کے موقع پر لڑکی کو جو کچھ جہیز میں(زیورات اور دیگر سامان وغیرہ)والدین،عزیز و اَقارِب اور لڑکے والوں کی طرف سے دیا جاتا ہے، وہ سب لڑکی کی مِلکیَّت ہوتا ہے کیونکہ جہیز کے معاملے میں فقہا نے عُرف (معاشرے میں جیسا رواج ہے اس)کو معتبر جانا ہے۔ فِقہ کی کتابوں میں عرب و عجم کے بارے میں یہی لکھا ہے کہ جہیز اور شادی کے وقت لڑکی کو دونوں جانب سے جو زیورات اور کپڑے وغیرہ دیئے جاتے ہیں وہ لڑکی ہی کی مِلکیَّت ہوتے ہیں لہٰذا عُرف کا اِعتبار ہو گا۔ نیز طلاق کے بعد بھی یہ تمام

مـــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــدینـــہ

1…… رَدُّالْمُحْتار،کتاب الطلاق،مطلب  فیما لوزفت الیہ بلاجھاز یلیق  بہ ،۵/۳۰۲ 

 



Total Pages: 28

Go To