Book Name:Khof e Khuda عزوجل

(عرشِ الٰہی کے سائے میں ۔۔۔۔)

        حضرت ابو ہریرہ رَضِیَ اللہُ  تَعَالٰی  عَنْہُ  سے مروی ہے کہ مکی مدنی سلطان صَلَّی اللہُ  تَعَالٰی  عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  کا فرمانِ عالیشان ہے کہ ’’سات قسم کے لوگ ایسے ہیں کہ جنہیں اللہ   تَعَالٰی  اپنے عرش کے سائے میں اس دن جگہ دے گا کہ جس دن اس سایہ کے سوا کسی چیز کا سایہ نہ ہو گا : (۱) عادل حکمران۔(۲)  وہ آدمی جس کو کسی منصب و جمال والی عورت نے تنہائی میں اپنے پاس بلایا اور اس نے جواب میں کہا کہ میں اللہ  عَزَّوَجَلَّ  سے ڈرتا ہوں ۔(۳) وہ شخص کہ جس کا دل مسجد میں لگارہے۔(۴) وہ نوجوان جس نے بچپن میں قرآن سیکھا اور جوانی میں بھی اس کی تلاوت کرتا ہو۔(۵) وہ آدمی جو چھپا کر صدقہ کرے حتی کہ اس کے بائیں ہاتھ کو بھی خبر نہ ہو کہ اس کے دائیں ہاتھ نے کتنا خرچ کیا۔ (۶) وہ شخص کہ جس نے تنہائی میں اپنے رب  عَزَّوَجَلَّ  کو یاد کیا اور اس کی آنکھوں سے آنسو نکل گئے۔ (۷)وہ آدمی جو اپنے بھائی سے کہے کہ میں تجھ سے اللہ   عَزَّوَجَلَّ  کی خاطر محبت رکھتا ہوں اور دوسرا جواب دے کہ میں بھی رضائے الٰہی کے لئے تجھ سے محبت کرتا ہوں ۔

(شعب الایمان ، باب فی الخوف من اللہ  تعالٰی ، ج۱، ص۴۸۷، رقم الحدیث ۷۹۳ )

(بڑی گھبراہٹ کے دن امن میں ۔۔۔۔)

        حضرت ابنِ عباس رَضِیَ اللہُ  تَعَالٰی  عَنْہُ  سے روایت ہے کہ ’’رسول اللہ صَلَّی اللہُ  تَعَالٰی  عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ نے اپنی وفات سے پہلے ایک خطبے میں ارشاد فرمایا، ’’جس شخص نے کسی لونڈی یا عورت پر گناہ کی قدرت پائی لیکن اسے خدا کے خوف کے سبب چھوڑ دیاتو اللہ   تَعَالٰی  اسے بڑی گھبراہٹ کے دن میں امن نصیب کرے گا، اس کو دوزخ پر حرام اور جنت میں داخلہ عطا فرمائے گا۔‘‘

(ذم الھوٰی ، ص ۱۹۴ )

پیارے اسلامی بھائیو!

                اَلْحَمْدُلِلّٰہِ  عَزَّوَجَلَّ  !ہمارے اسلاف ِکرام نے بھی خوف ِ خدا   عَزَّوَجَلَّ  کے فضائل بیان فرمائے ہیں جن میں سے چند درجِ ذیل ہیں …

(بھلائی کی طرف راہنمائی… )

        حضرت سَیِّدُنا فضیل رَضِیَ اللہُ  تَعَالٰی  عَنْہُ   فرماتے ہیں کہ’’ جو شخص اللہ   تَعَالٰی  سے ڈرتا ہے تو یہ خوف ہر بھلائی کی طرف اس کی راہنمائی کرتا ہے ۔‘‘

(احیاء العلوم ، کتاب الخوف والرجاء ج ۴، ص۱۹۸ )

(خوف ِ خدا عَزَّوَجَلَّ کا فائدہ… )

        حضرت سَیِّدُنا ابراہیم بن شیبان رَضِیَ اللہُ  تَعَالٰی  عَنْہُ  نے فرمایا کہ’’جب دل میں خوفِ خدا  عَزَّوَجَلَّ  پیدا ہوجائے تو اس کی شہوات کو توڑ دیتا ہے ، دنیا سے بے رغبت کردیتا ہے اور زبان کو ذکر ِ دنیا سے روک دیتا ہے ۔ ‘‘(شعب الایمان ، باب فی الخوف من اللہ  تعالٰی ، ج۱، ص۵۱۳، رقم الحدیث ۸۸۶ )

(حکمت کا دروازہ… )

        حضرت سَیِّدُنا شبلی رَضِیَ اللہُ  تَعَالٰی  عَنْہُ  نے فرمایا، ’’میں جس دن اللہ   تَعَالٰی  سے ڈرتا ہوں ، اسی دن حکمت وعبرت کا ایسا دروازہ دیکھتا ہوں جو پہلے کبھی نہیں دیکھا۔‘‘

(احیاء العلوم ، کتاب الخوف والرجاء ج ۴، ص ۱۹۸)

(جنت میں داخلہ… )

        حضرت سَیِّدُنایحییٰ بن معاذرَضِیَ اللہُ  تَعَالٰی  عَنْہُ  نے فرمایا، ’’ یہ کمزور انسان اگر جہنم سے اسی طرح ڈرے جس طرح محتاجی سے ڈرتا ہے تو جنت میں داخل ہو۔‘‘

(احیاء العلوم ، کتاب الخوف والرجاء ج ۴، ص۱۹۹ )

(خوف ِ خدا  عَزَّوَجَلَّ  شفاء دیتا ہے… )

        حضرت سَیِّدُنا ابراہیم بن ادھم رَضِیَ اللہُ  تَعَالٰی  عَنْہُ   فرماتے ہیں کہ’’خواہشات ِ نفس ہلاکت میں ڈالتی ہیں اور خوف ِ خدا شفاء دیتا ہے ۔یاد رکھو! تمہاری خواہشاتِ نفس اسی وقت ختم ہونگی جب تم اس سے ڈرو گے جو تمہیں دیکھ رہا ہے ۔ ‘‘(شعب الایمان ، ج۱، ص۵۱۱، رقم الحدیث ۸۷۶ )

(دل کو خالی کر لو… )

        خلیفہ مامون رشید ‘حضرت سَیِّدُنا فضیل بن عیاض رَضِیَ اللہُ  تَعَالٰی  عَنْہُ  کی خدمت میں حصولِ نصیحت کی غرض سے حاضر ہوا تو آپ نے فرمایاکہ’’اپنے دل کو غم اور خوف کے لئے خالی کر لو ، یہ تجھے اللہ   تَعَالٰی  کی نافرمانی سے بچائیں گے اور عذاب ِ جہنم سے چھٹکارا دلائیں گے ۔‘‘(شعب الایمان ، باب فی الخوف من اللہ   تَعَالٰی  ، ج۱، ص۵۱۴، رقم الحدیث ۸۸۸ )

(ان سے بہتر ساتھی کوئی نہیں … )

        حضرت سَیِّدُنا حاتم اصم رَضِیَ اللہُ  تَعَالٰی  عَنْہُ نے کسی بزرگ کو فرماتے سنا کہ’’بندے کے لئے غم اور خوف سے بہتر ساتھی کوئی نہیں ، غم اس چیز کا کہ پچھلے گناہوں کا کیا بنے گا؟ اور خوف اس بات کا کہ بندہ نہیں جانتا کہ اس کا ٹھکانہ کہاں ہوگا؟‘‘(شعب الایمان ، باب فی الخوف من اللہ   تَعَالٰی  ، ج۱، ص۵۱۵، رقم الحدیث ۸۹۵ )

کب گناہوں سے کنارہ میں کروں گا یا رب   عَزَّوَجَلَّ

نیک کب اے میرے اللہ  ! بنوں گا یارب   عَزَّوَجَلَّ

گَر تُو ناراض ہوا میری ہلاکت ہوگی

ہائے ! میں نارِ جہنم میں جلوں گا یارب  عَزَّوَجَلَّ  

(3) اپنی کمزوری وناتوانی کو سامنے رکھ کر جہنم کے عذابات پر غورو تفکر کرنا :

                 اپنے دل میں خوف ِ خدا عَزَّوَجَلَّ بیدار کرنے کے سلسلے میں تیسرا طریقہ یہ ہے کہ انسان جہنم کے عذابات کو پیش ِ نظر رکھتے ہوئے اپنی ناتوانی پر غور کرے۔جہنم کے عذابات کی



Total Pages: 42

Go To