Book Name:Garmi say hifazat kay Madani Phool

مطابق عمل کریں )   {۱۳}  ستو کا شربت ، کھیرے کا جوس ،  ناریل کاپانی ، گنّے کا خالص رس، شہد ملاپانی،  لیمو پانی اورنمکین چھاچھ استِعمال کیجئے {۱۴} چھاچھ میں کالا نمک اور پِسی ہوئی اجوائن ملا کر پینے سے گرمی کم لگتی اور وزن بھی کم ہوتاہے {۱۵} چائے،  کافی ، ابلے ہوئے انڈے، زیادہ میٹھے شربت،  خوب میٹھی ڈشوں ،  کولڈ ڈرنکس ،  زیادہ گھی تیل والے کھانوں اور دیر میں ہضم ہونے والی غذاؤں نیز کیفین  (Caffeine)   والی اشیا مَثلاً چاکلیٹ وغیرہ کا استعمال کم سے کم کیجئے  {۱۶} بازاری شربتوں اور گولے گنڈوں کا استِعمال پیسے دے کر بیماریاں خریدنے کے مترادِف ہے {۱۷} تیز دھوپ سے آتے ہی پسینے سے شرابور ٹھنڈا پانی پینا نقصان دِہ ہے {۱۸} کدو شریف ،  بینگن، چُقَندر ، مُولی وغیرہ سبزیوں کا استعمال خوب بڑھا دیجئے {۱۹} سحری و اِفطاری میں پانی اور دہی کا استعمال زیادہ کیجئے {۲۰} گرمیوں میں  آم، آڑو،  خوبانی ،  امرود ، خربوزہ،  تربوز ،  جسم کو توانائی بخشنے کے ساتھ ساتھ جگر  (Liver) اور معدے کی گرمی بھی دور کرتے ہیں نیز موسم کے دیگر پھلوں کا بھی خوب استعمال کیجئے  {۲۱} سادہ اورہلکی غذا استعمال فرمایئے،  کَھجْلا پھینی ،  (پھے ۔  نی)  کباب،  سموسوں ،  پکوڑوں وغیرہ تلی ہوئی چیزوں کا استعمال بہت کم کیجئے، بلکہ ان سے دُورہی رہئے اِنْ شَآءَاللہ عَزَّ وَجَلَّخود ہی فائدہ دیکھ لیں طگے اور رمضان المبارک کے روزوں اوردیگر عبادتوں میں آسانی حاصِل ہو گی {۲۲} سحری و افطار میں کھانا کم کھایئے {۲۳} فوم کے گدیلے پر سونے سے بچئے {۲۴} چھوٹے بچوں اور بزرگوں کو گرمی سے بچانے کی زیادہ ضرورت ہے  {۲۵}  رحم کھاتے ہوئے اپنے مویشیوں اور مرغیوں وغیرہ کو بھی گرمی سے بچانے کی تدبیر کیجئے۔ 

پھلوں کا بادشاہ  (آم)

’’آم بھی ربِّ کریم کی کیا خوب نعمت ہے‘‘ کے پچیس حروف کی نسبت سے آم کے 25 مدنی پھول

         گرمی کے موسم میں آنے والا آم اللہ تَعَالٰی کی بہت ہی پیاری نعمت ہے،  اس کے بے شمار فوائد ہیں :  ٭ …  آم نیا خون بناتا ہے ،  آم آنتوں کو قُوّت دیتا،  مِعدے ،  گُردے،  مثانے اور اَعْصاب کو طاقت بخشتا ہے ٭ …  آم کھانے سے تیزابیت  (Acidity )  کے مرض میں فائدہ ہوتا ہے البتّہ کاربائڈ (Carbide)  نامی کیمیکل کے ذریعے پکایا ہوا آم کھانے سے تیزابیت کم ہونے کے بجائے بڑھ سکتی ہے ٭ …  جس کو نیند نہ آتی ہو وہ ایک آم کھا کر ٹھنڈا دودھ پی لے اِنْ شَآءَاللہ عَزَّ وَجَلَّ نیندآ جائے گی  ٭ آم کاا ستعمال کینسر والوں اور دل کے مریضوں کیلئے فائدہ مند ہے ٭ آم کھانے سے موٹا پا آتا ہے  ٭ …  آم قبض دور کرتا ہے٭ آم کھانے کے بعد دودھ یا دودھ کی لسی (یعنی دودھ ملا پانی)  یا تھوڑے سے جامَن کھالینے سے اس کی گرمی دور ہو جاتی ہے۔   اگر دودھ سے گیس ہوتا ہو تو تھوڑی سی ادرک ملا لینی چاہئے ٭ میٹھے اور تازہ آم کا تھوڑا سا گُودا حاملہ کو روزانہ کھلایاجائے تو اِنْ شَآءَاللہ عَزَّ وَجَلَّبچہ تندرست پیدا ہو گا ٭ دودھ پلانے والی عورت آم کھائے کہ اِس سے دودھ بڑھتا ہے ٭ …  آم پیاس بجھاتا ہے ٭ …  کاٹ کر کھانے کے بجائے آم چوس کر کھانا بہتر ہے ٭ …  آم کھا کر کچی لسی  (یعنی دودھ ملا پانی)  پینا آنکھوں کی روشنی اور بدن کی کمزوری دور کرنے کیلئے مفید ہے٭ آم ہمیشہ ٹھنڈا کر کے استِعمال کرنا چاہئی٭ بغیر ٹھنڈا کئے آم کھانا بدن پر پھوڑے پھنسیاں اور آنکھوں کی بیماریاں پیدا کرسکتا ہے ٭ آم کم مقدار میں کھایئے٭ …  آم زیادہ کھانے سے جگر (Liver)  کی کمزوری اور مرض اِستِسقا (اِس۔  تِسْ۔  قا)  کا اندیشہ ہے جس میں پیٹ بڑھ جاتا ہے اور پیاس بہت لگتی ہے  ٭ آم کی سوکھی گٹھلی کے باریک پسے ہوئے 3گرام مغزکو پانی کے ساتھ کھانے سے دَستوں  (موشن۔  Motions)  کے مرض میں فائدہ ہوتا ہے ٭ …  عورَتوں کو مخصوص ایام میں خون زیادہ آتا ہو،  تو آم کی سوکھی گٹھلی کے مغز کا پاؤڈر صبح و شام ایک ایک چمچ کھانے سےاِنْ شَآءَاللہ عَزَّ وَجَلَّ  فائدہ ہو جائے گا۔   خونی بواسیر کے لئے بھی یہ علاج مفید ہے ٭ قلمی آم ثَقِیل ( یعنی مِعدے کیلئے بھاری)  اوردیر سے ہضم ہوتا ہے۔    (قلمی آم کی کافی قسمیں ہیں :  سَرولی، لنگڑا،  چونسا اور سندھڑی وغیرہ بھی ان میں شامل ہیں )  ٭ بلغمی یا صفراوی مزاج والوں کو نَہار منہ  (یعنی خالی پیٹ)  آمنہیں کھانا چاہئے کہ اس سے مِعدے کونقصان پہنچتا اور اس میں گرمی پیدا ہوتی ہے ٭ …  کھٹّا آم کھانے سے گلے اور دانتوں کونقصان ہوتا ہے،  اس سے زُکام اور خون میں خرابی بھی پیدا ہوسکتی ہے ٭ …  آم پیشاب لاتا ہے ٭ …  آم اور دیگر پھلوں کوپکانے کیلئے کاربائڈ (Carbide)  نامی کیمیکل استعمال کیا جاتا ہے ،  لہٰذا کچھ دیر پانی میں بھگونے کے بعد اچھی طرح دھوکر استعمال کیجئے۔   ‘’ کاربائڈ‘‘ کی معمولی سی مقدار بھی پیٹ میں جانے سے مِعدے اور آنتوں کی بیماریوں کے علاوہ کینسر کا بھی خطرہ پیدا ہوتا ہے ٭ …  آم اچھی طرح دھو لیجئے تا کہ اس کی گوند صاف ہو جائے ورنہ وہ گلے میں خراش کا سبب بن سکتی ہے۔  ٭ ہائی شوگر کے مریض ڈاکڑ کے مشورے کے بغیر آم نہ کھائیں ۔ 

صَلُّوا عَلَی الْحَبِیْب!                                    صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلٰی مُحَمَّد

 



Total Pages: 7

Go To