Book Name:Garmi say hifazat kay Madani Phool

ہِیٹ اسٹروک‘‘ یعنی گرمی لگنے کے سبب چارہزار آٹھ سو (4800) اَموات ہوئی تھیں ! ان میں جتنے مسلمان تھے اللہُ رَبُّ العِزِّتْاُن سب کی بے حساب مغفِرت فرمائے۔    اٰمِیْن بِجَاہِ النَّبِیِّ الْاَمِیْن  صَلَّی اللہ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّم

ہِیٹ اسٹروک یا لُو لگنے کی 12 علامات

  ٭ سردرد، چکر آنا یا سر گھومنا ٭ …  سخت پیاس لگنا٭ …  کمزوری اور پٹھوں  (مسلز ،  Muscles )  میں کھنچاؤ٭ جلد (Skin) پرسرخی اور ٭ …  خشکی آنا ٭…  اچانک تیز بخار چڑھنا ٭ …  اُلٹی اورمتلی آنا٭ بے ہوشی یا جھٹکے آنا٭ نکسیر پھوٹنا (یعنی ناک سے خون بہنا)  ٭ …  لمبی اور بڑی بڑی سانسیں شروع ہو جانا٭ ایک دم Lowہونا٭ …  غُنودگی  ( یعنی اونگھ ۔   نیند)  طاری ہونا۔ 

ابتِدائی طِبّی امداد کے سات مَدَنی پھول

    ٭ جسے گرمی یا لُولگ گئی ہو اُس کو پانی اور نمکول پلایئے٭ …   فوراً ٹھنڈی جگہ منتقل کر دیجئے٭ …  غیر ضروری کپڑے اتار دیجئے٭ …  بِغیر تکیے کے لٹا کر ٹانگوں کو کسی چیز کے سہارے قدرے بُلند کر دیجئے ٭ بَرْف یا ٹھنڈے پانی کی پٹیاں خصوصاً پیٹھ ،  بغل ، گردن اور رانوں پر رکھئے٭ ٹھنڈے پانی سے بھیگا ہوا تولیا (Towel) بدن پر نرمی کے ساتھ رگڑیئے٭ …  جلد ی اَسپتال لے جایئے۔ 

شدت کی گرمی جن کیلئے زیادہ خطرناک ہے

          ٭ بچی٭ …  بوڑھی٭ …  بے گھر افراد٭ …  سورج کی تپش میں مزدوری کرنے والے ٭ …  نشے کے عادی ٭ …  جو طویل عرصے سے کسی بیمار ی میں مبتلا ہوں یا جو لمبے عرصے تک دِل یا سانس کے مریض رہے ہو ں ٭ …   پرندے اور جانور ۔ 

صَلُّوا عَلَی الْحَبِیْب!                                    صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلٰی مُحَمَّد

گرمی کی دعا کی فضیلت

          دُنیاکی گرمی کی شدت کے وقت آخِرت کی کڑی دھوپ اور تڑپا دینے والی پیاس نیز جہنَّم کی خوفناک آگ کو یاد کرکے ان سے پناہ مانگئے۔   فرمانِ مصطَفٰے صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ: جب سخت گرمی ہوتی ہے تو بندہ کہتا ہے:  لَا اِلٰہ اَلَّا اللہُ آج بڑی گرمی ہے ! ’’ اَللّٰھُمَّ اَجِرْنِیْ مِنْ حَرِّجَہَنَّمَ ۔  ‘‘یعنی اے اللہ  (عَزَّ وَجَلَّ) ! مجھے جہنَّم کی گرمی سے پناہ دے۔   اللہ عَزَّ وَجَلَّدوزخ سے فرماتا ہے : ‘’ میرا بندہ مجھ سے تیری گرمی سے پناہ مانگ رہا ہے اور میں تجھے گواہ بنا تا ہوں کہ میں نے اسے تیری گرمی سے پناہ دی۔   ‘‘ اور جب سخت سردی ہوتی ہے تو بندہ کہتا ہے :  لَا اِلٰہ اَلَّا اللہُ آج کتنی سخت سردی ہے! ‘’  اَللّٰھُمَّ اَجِرْنِیْ مِنْ زَمْھَرِ یْرِ جَھَنَّمَ۔  ‘‘یعنی اے اللہ  (عَزَّ وَجَلَّ) ! مجھے جہنَّم کی زَمْھَرِیر سے بچا۔   اللہ تَعَالٰی جہنَّم سے کہتا ہے : ‘’ میرا بندہ مجھ سے تیری زَمْھَرِیر سے پناہ مانگ رہا ہے اور میں نے تیری زَمْھَرِیر سے اسے پناہ دی ۔  ‘‘ صحابۂ کرام عَلَیْہِمُ الرِّضْوَان نے عرض کی:  جہنَّم کی زَمْھَرِیرکیا ہے؟ فرمایا:  ’’ وہ ایک گڑھا ہے جس میں کافر کو پھینکا جائے گا تو سخت سردی سے اس کا جسم ٹکڑے ٹکڑے ہو جائے گا۔  ‘‘ (البدور السافرۃ  ص۴۱۸حدیث۱۳۹۵)

صَلُّوا عَلَی الْحَبِیْب!                                    صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلٰی مُحَمَّد

بغیر عذرِ شرعی ایک روزہ چھوڑنے والا بھی جہنَّمی ہے

   جب تک شریعت اجازت نہ دے اُس وقت تک گرمی کی وجہ سے روزہ چھوڑنا جائز نہیں ۔   یاد رکھئے! جان بوجھ کر رمضان کا ایک روزہ بھی جس نے ترک کیا وہ سخت عذابِ نار کا حقدار ہے۔   فتاوٰی رضویہ جلد20 صَفحَہ228پرہے : ‘’ اگر دھوپ میں کام کرنے کے ساتھ روزہ ہوسکے اور آدَمی مقیم ہو مُسافر نہ ہو تو روزہ فرض ہے۔   اور اگر ( دھوپ میں کام کرنے کے ساتھ روزہ)  نہ ہو سکے ،  روزہ رکھنے سے بیمار پڑ جائے،  ضَررِ قوی (یعنی سخت تکلیف)  پہنچے تومقیم غیرمسافر کو ایسا  ( دھوپ میں ) کام کرنا حرام ہے۔  ‘‘ (تفصیلی معلومات کیلئے فیضانِ سنّت جلد اوّل کا باب’’  فیضانِ رمضان‘‘ پڑھئے )

سخت گرمی میں روزے رکھتیں  (حکایت)

 



Total Pages: 7

Go To