Book Name:Rah e Khuda عزوجل Main Kharch Karnay Kay Fazail

الرَّحْمٰن بے مثا ل ذہانت و فَطانت ، کمال دَرَجہ فَقاہت اور قدیم و جدید عُلُوم میں   کامل دَسترس و مُہارت رکھتے تھے ۔ آپ رَحْمَۃُ اللہِ تَعَالٰی عَلَیْہِ کی تقریباً ایک ہزار کُتُب آپ رَحْمَۃُ اللہِ تَعَالٰی عَلَیْہِ کے پچپن سے زائد عُلوم و فُنُون میں   تَبَحُّرِعلمی پردالّہیں  ۔ آپ رَحْمَۃُ اللہِ تَعَالٰی عَلَیْہِ کی جن قلمی کاوشوں    کو بینَ الاقوامی شُہرت حاصل ہوئی اُن میں    کنزالایمان ، حدائقِ بخشش اور فتاوٰی رضویّہ(تخریج شدہ تادمِ تحریر ۲۷ جلدیں    ) بھی شامل ہیں    ، آخِر ا لذّکر  تو عُلوم و فُنُون کا ایسا بَحرِ بیکراں    ہے جو بے شمار و مُستند مسائل او ر تحقیقات ِ نادِرہ کو اپنے اندر سَموئے ہو ئے ہے ، جسے پڑھ کر قدر دان انسان بے ساختہ پُکار اٹھتا ہے کہ امامِ اہلسنّت رَحْمَۃُ اللہِ تَعَالٰی عَلَیْہِ  ، سیِّدُنا امامِ اعظم ابوحنیفہ     رَحْمَۃُ اللہِ تَعَالٰی عَلَیْہِ  کی مجُتَہِدانہ بصیرت کا پَر تَو ہیں    ۔ آپ رَحْمَۃُ اللہِ تَعَالٰی عَلَیْہِ کی کُتُب رَہتی دنیا تک مسلمانوں    کے لئے مشعلِ راہ ہیں  ۔ ہر اسلامی بھائی اور اسلامی بہن کو چاہیے کہ سرکارِ اعلٰیحضرت رَحْمَۃُ اللہِ تَعَالٰی عَلَیْہِ کی جُملہ تصانیف کا حسبِ استطاعت ضَرور مطالَعَہ کرے ۔

       اَلْحَمْدُلِلّٰہِ عَزَّ وَجَلَّتبلیغِ قرآن و سنّت کی عالمگیر غیر سیاسی تحریک ’’دعوتِ اسلامی‘‘نیکی کی دعوت ، اِحیائے سنّت اور اشاعتِ علمِ شریعت کو دنیا بھر میں    عام کرنے کا عزمِ مُصمّم رکھتی ہے ، اِن تمام اُمور کو بحسنِ خوبی سر انجام دینے کے لئے متعدَّد مجالس کا قیام عمل میں    لایا گیا ہے جن میں    سے ایک مجلس’’المد ینۃ العلمیۃ‘‘بھی ہے جو  دعوتِ اسلامی کے عُلماء و مُفتیانِ کرام کَثَّرَ ھُمُ اللہُ تعالٰی پر مشتمل ہے ، جس نے خالص علمی ، تحقیقی او راشاعتی کام کا بیڑا   اٹھایا ہے۔ اس کے مندرجہ ذیل پانچ شعبے ہیں   :

(۱)  شعبۂ کتُبِ اعلیٰ حضرت رَحْمَۃُ اللہِ تَعَالٰی عَلَیْہِ             (۲)  شعبۂ درسی کُتُب     

(۳)  شعبۂ اصلاحی کُتُب (۴)  شعبۂ تراجمِ کتب        (۵)  شعبۂ تفتیشِ کُتُب

          المد ینۃالعلمیۃکی اوّلین ترجیح سرکارِ اعلٰیحضرت رَحْمَۃُ اللہِ تَعَالٰی عَلَیْہِ کی گِراں    مایہ تصانیف کو عصرِ حاضر کے تقاضوں    کے مطابق حتَّی الْوَسع سَہْل اُسلُوب میں    پیش کرنا ہے ۔ تمام اسلامی بھائی اور اسلامی بہنیں    اِس عِلمی ، تحقیقی اور اشاعتی مدنی کام میں    ہر ممکن تعاون فرمائیں    اورمجلس کی طرف سے شائع ہونے والی کُتُب کا خود بھی مطالَعہ فرمائیں    اور دوسروں    کو بھی اِ س کی ترغیب دلائیں۔

        اللہ عَزَّ وَجَلَّ  ’’دعوتِ اسلامی‘‘ کی تمام مجالس بَشُمُول ’’المد  ینۃ العلمیۃ‘‘ کو   دن گیارہویں    اور رات بارہویں    ترقّی عطا فرمائے اور ہمارے ہر عملِ خیر کو زیورِ اخلاص سے آراستہ فرماکر دونو ں    جہاں    کی بھلائی کا سبب بنائے۔ ہمیں    زیرِ گنبدِ خضرا  شہادت ، جنّت البقیع میں    مدفن اور جنّت الفردوس میں   اپنے مدنی حبیب صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ کا پڑوس نصیب فرمائے ۔      اٰمِیْن بِجَاہِ النَّبِیِّ الْاَمِیْن صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّم

                                      

 رمضان المبارک۱۴۲۵ ھ

پیش لفظ

           زیرِ نظر رسالہ ’’راد القحط والوباء بدعوۃ الجیران ومواساۃ الفقراء‘‘در حقیقت صدقہ و خیرات کی اہمیت و فضیلت سے متعلق ہے ۔    اعلیٰ حضرت ، عظیم البرکت ، مجددِ دین و ملت مولانا الشاہ امام احمد رضا خان علیہ رحمۃ الرحمن نے مذکورہ رسالے میں   ساٹھ (۶۰)احادیث کریمہ اوران سے ماخوذ پچیس فوائد کے ذریعے صدقہ وخیرات کی اہمیت وفضیلت کو ثابت کیا ہے ، علاوہ ازیں    موضوع کی مناسبت سے بطورِ ترغیب چند واقعات بھی اس رسالے میں    شامل ہیں    نیز صدقہ وخیرات کو زیادہ نافع بنانے کے لیے اعلیٰ حضرت علیہ رحمۃ الرحمن نے چند اہم امور بھی ارشاد فرمائے ہیں    جو اس رسالے کی زینت میں    اضافے کاسبب ہیں   ، یہ رسالۂ مبارکہ تقریباًایک سوبارہ سال قبل  ۱۳۱۲ھ میں    قلمِ رضا کی جنبش سے صفحۂ قرطاس پر ابھرااور اپنے موضوع کے اعتبار سے امت مسلمہ کو رہتی دنیا تک ان شاء اللہعَزَّ وَجَلَّ فائدہ پہنچاتا رہے گا ، اسی بات کے پیش نظر ’’مجلس : المد ینۃ العلمیۃ (شعبۂ کتب اعلی حضرت رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہُ)‘‘نے اس کی اشاعت کا اہتمام فرمایاہے۔

          عوام کی سہولت کے پیش نظر عربی عبارات اورجگہ جگہ مشکل مقامات پر حواشی کی صورت میں    حتی المقدور ترجمہ اورتسہیل کی بھی کوشش کی گئی ہے تاکہ کتاب پڑھنے اورسمجھنے میں    دشواری پیش نہ آئے نیز علمائے کرام اورمحققین صاحبان کے لیے حواشی ہی کے مابین تخریجات بھی درج کردی گئیں    ہیں    تاکہ اصل ماخذ سے رجوع کرنے میں  آسانی رہے۔ اس سلسلہ میں    مولانا عبدالرشید ہمایوں المدنی کی خدمات سے استفادہ کیا گیا ہے ، جبکہ نظر ثانی کا کام مولانا



Total Pages: 17

Go To