Book Name:Doodh Pita Madani Munna

  حضرت عبدُاللّٰہ ابنِ عمر رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہُمَا ایک چھوٹی لڑکی کے پاس سے گزرے جو گانا  (Songگارہی تھی،  آپ نے ارشاد فرمایا: ’’ اگرشیطان کسی کو چھوڑتا تو اسے ضَرور چھوڑدیتا۔ ‘‘  (شُعَبُ الْاِیمان ج ۴ ص ۲۷۹رقم۵۱۰۲) 

                                

مطلب یہ ہے کہ اگرشیطان کسی کو چھوڑتا تو کم از کم اس چھوٹی بچّی کو چھوڑ دیتا مگر شیطان کسی کو بھی نہیں چھوڑتا لہٰذا چھوٹوں کو بھی شیطان سے ہوشیار رہنا چاہیے۔  

      میٹھے میٹھے مَدَنی منو اورمَدَنی منیو!  گانے باجے سننااور گانا شیطانی کام ہے،  آپ ہر گز یہ شیطانی کام نہ کیجئے ،    اللّٰہ کی رحمت سے تلاوت قراٰن سنئے،   نعت شریف اور سنتوں بھرے بیانات سنئے ،   اِنْ شَآءَ اللہ عَزَّ  وَجَلَّآپ کو بہت سارا ثواب ملے گا ۔

{۱۵} گدھے پر سُوار مَدَنی مُنّا

            (پہلے کے زمانے میں اسکوٹریں اور کاریں نہیں ہوتی تھیں،   اس لئے)  ایک شخص گدھے   (Donkey)   پر سوار ہو کر اپنے بیمار دوست کی عیادت کے لئے اس کے گھر گیا اور اپنا گدھا   (Donkey دروازے پرکسی حفاظتی انتِظام کے بغیر چھوڑدیا۔  جب واپس نکلا تو دیکھا گدھے کے اوپر ایک بچہ بیٹھا اس کی حفاظت کررہا ہے،  اس شخص نے ناراض ہوتے ہوئے پوچھا: تم میری اجازت کے بغیر اس پر کیسے سوار ہوئے؟ بچے نے کہا: مجھے ڈر تھا کہ یہ کہیں بھاگ نہ جائے اس لئے اس پر سوار ہوگیا۔ وہ بولا: میرے نزدیک اس کا بھاگ جانا یہاں کھڑے رہنے سے بہتر تھا ۔  یہ سن کر بچے نے جواب دیا: اگر ایسی بات ہے تو یہ گدھا مجھے تحفے   (Giftمیں دے دیجئے اور سمجھ لیجئے کہ گدھا بھاگ گیا ہے ،  میں آپ کا شکریہ بھی ادا کروں گا۔ وہ شخص کہتا ہے کہ میں اس بچّے کی یہ بات سن کر لاجواب ہوگیا۔   (کتابُ الاذکیاء لابن الجَوزی ص۲۴۸) 

        میٹھے میٹھے مَدَنی منو اورمَدَنی منیو!  اپنی چیزیں کھلونے ،   جوتے وغیرہ اِدھر اُدھر رکھ دینے کے بجائے اُنہیں رکھنے کی جو جگہ مقرر   (Fix ہے وہیں رکھنے کی عادت بنایئے،   ورنہ گم ہونے کا خطرہ   (Riskہے۔  یہاں تک کی تمام   (15)   کہانیاںسچی کہانیاں تھیں اب دو سبق آموز فرضی   (یعنی من گھڑت ۔ بناوٹی)   کہانیاں پیش کی جاتی ہیں،  سنئے:

{۱۶}غصّے والے بچّے  کا انوکھا علاج

  ایک بچہ غصّے کا بہت تیز تھا ،  بات بات پر غصے میں آکر دوسروں کو برا بھلا کہتا اور جھگڑاکیا کرتا ،   اس کے



Total Pages: 15

Go To