Book Name:Sirat ul jinan jild 6

سورۂ نور کے مَضامین:

             اس سورت کا مرکزی مضمون یہ ہے کہ اس میں  پردہ ،  شرم وحیاء اور عِفَّت و عِصمَت کے احکام بیان کئے گئے ہیں  ،  نیز اس سورت میں  یہ مضامین بیان کئے گئے ہیں :

(1) …اس سورت کی ابتداء میں  زنا کرنے والے مردوں  اور عورتوں  کی شرعی سزا بیان کی گئی ، نیز مشرکہ عورت اور زانیہ عورت سے نکاح حرام قرار دے دیا گیا البتہ بعد میں  زانیہ عورت سے نکاح کی حرمت منسوخ کر دی گئی اور مشرکہ عورت سے نکاح کی حرمت باقی رکھی گئی۔

(2) …پاک دامن عورتوں  پر زنا کی تہمت لگانے اور اسے چار گواہوں  سے ثابت نہ کر سکنے والے کی شرعی سزا بیان کی گئی۔

(3) …لِعان کے اَحکام بیان کئے گئے۔

(4) …اُمُّ المؤمنین حضرت عائشہ صدیقہ رَضِیَ  اللہ  تَعَالٰی  عَنْہَا پر منافقین کی طرف سے لگائی جانے والی جھوٹی تہمت کا واقعہ بیان کیاگیا اور جو مردو عورت ا س تہمت لگانے میں  شریک تھا اسے 80کوڑے مارنے کا حکم دیا گیا اور اس معاملے میں  چند مسلمانوں  پر بھی عتاب کیا گیا۔

(5) …حضرت ابو بکر صدیق رَضِیَ  اللہ  تَعَالٰی  عَنْہُ کی شان بیان کی گئی۔

(6) …اجتماعی زندگی گزارنے کے اصول بیان کئے گئے کہ گھروں  میں  داخل ہوتے وقت اجازت لی جائے ، نگاہوں  کو جھکا کر رکھا جائے ،  شرمْگاہوں  کی حفاظت کی جائے ، غیر مَحرم کے سامنے عورتیں  اپنی زینت کی جگہیں  ظاہر نہ کریں  ،  جو لوگ شادی شدہ نہیں  اور شادی کرنے کی اِستطاعت رکھتے ہوں  تو ان کی شادی کر دی جائے اور جو شادی کرنے کی استطاعت نہیں  رکھتے وہ اپنی عفت و عصمت کی حفاظت کریں ۔

(7) …کفار کے اعمال کی مثال بیان کی گئی۔

(8) … اللہ تعالیٰ کے وجود اور وحدانیّت پر دن اور رات کے پلٹنے سے ، بارش نازل کرنے ،  زمین و آسمان کے پیدا کرنے ،  پوری کائنات کے  اللہ تعالیٰ کی بارگاہ میں  جھکنے ،  پرندوں  کی پرواز اور عجیب و غریب قسم کے جانور اور کیڑے مکوڑے پیدا کرنے سے اِستدلال کیاگیا۔

(9) …منافقوں  اور سچے مؤمنوں  کے اَوصاف بیان کئے گئے کہ منافق  اللہ تعالیٰ اور اس کے رسول کے حکم سے اِعراض کرتے ہیں  جبکہ ایمان والے  اللہ تعالیٰ اورا س کے رسول کے احکامات کی اطاعت کرتے ہیں ۔

(10) … نیک اعمال کرنے والے مسلمانوں  سے  اللہ تعالیٰ نے زمین کی خلافت عطا کرنے کا وعدہ فرمایا۔

(11) …تین اوقات میں  غلاموں  اور بچوں  کے گھروں  میں  داخل ہونے کے اَحکام بیان کئے گئے۔

(12) …معذور مسلمانوں  سے جہاد کے حکم میں  تخفیف کی گئی۔

(13) …قریبی رشتہ داروں  اور دوستوں  کے گھروں  سے اجازت کے بغیر کھانے کا حکم بیان کیاگیا۔

(14) … بارگاہِ رسالت کے آداب بیان کئے گئے۔

سورۂ مؤمنون کے ساتھ مناسبت:

            سورۂ نور کی اپنے سے ماقبل سورت ’’مؤمنون‘‘ کے ساتھ مناسبت یہ ہے کہ سورۂ مؤمنون میں  ایمان والوں  کا ایک وصف یہ بیان کیا گیا کہ وہ اپنی شرمگاہوں  کی حفاظت کرتے ہیں  اور سورۂ نور میں  ان لوگوں  کے احکام بیان کئے گئے جو اپنی شرمگاہوں  کی حفاظت نہیں  کرتے۔( تناسق الدرر ،  سورۃ النور ،  ص۱۰۴)نیز سورہ مومنون میں  صالحین کے اوصاف بیان کئے گئے ہیں  جبکہ سورۂ نور میں  فاسقین کے اعمال بیان کئے گئے ہیں ۔

بِسْمِ اللّٰهِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِیْمِ

ترجمۂ کنزالایمان:  اللہ کے نام سے شروع جو نہایت مہربان رحم والا۔

ترجمۂ کنزُالعِرفان:  اللہ کے نام سے شروع جو نہایت مہربان ،  رحمت والاہے۔

سُوْرَةٌ اَنْزَلْنٰهَا وَ فَرَضْنٰهَا وَ اَنْزَلْنَا فِیْهَاۤ اٰیٰتٍۭ بَیِّنٰتٍ لَّعَلَّكُمْ تَذَكَّرُوْنَ(۱)

ترجمۂ کنزالایمان: یہ ایک سورت ہے کہ ہم نے اُتاری اور ہم نے اس کے احکام فرض کئے اور ہم نے اس میں  روشن آیتیں  نازل فرمائیں  کہ تم دھیان کرو۔

ترجمۂ کنزُالعِرفان: یہ ایک سورت ہے جو ہم نے نازل فرمائی اور ہم نے اس کے احکام فرض کئے اور ہم نے اس میں  روشن آیتیں  نازل فرمائیں  تاکہ تم نصیحت حاصل کرو۔

{سُوْرَةٌ: یہ ایک سورت ہے۔} سورۂ نور کی ابتداء میں   اللہ تعالیٰ نے حدود اور مختلف اَحکام بیان فرمائے جبکہ ا س سورت کے آخرمیں  توحید کے دلائل ذکر فرمائے اور ا س آیت میں  بیان فرمایا کہ یہ ایک سورت ہے جو ہم نے نازل فرمائی اور ہم نے اس میں  موجود اَحکام مسلمانوں  پرفرض کئے اور ان پر عمل کرنا بندوں  پر لازم کیا اور ہم نے اس میں  ضروری احکام اور اپنی وحدانیّت کے دلائل پر مشتمل روشن آیتیں  نازل فرمائیں  تاکہ تم نصیحت حاصل کرو۔( خازن ،  النور ،  تحت الآیۃ: ۱ ،  ۳ / ۳۳۴ ،  صاوی ،  النور ،  تحت الآیۃ: ۱ ،  ۴ / ۱۳۸۲ ،  ملتقطاً)

اَلزَّانِیَةُ وَ الزَّانِیْ فَاجْلِدُوْا كُلَّ وَاحِدٍ مِّنْهُمَا مِائَةَ جَلْدَةٍ۪-وَّ لَا تَاْخُذْكُمْ بِهِمَا رَاْفَةٌ فِیْ دِیْنِ اللّٰهِ اِنْ كُنْتُمْ تُؤْمِنُوْنَ بِاللّٰهِ وَ الْیَوْمِ الْاٰخِرِۚ-وَ لْیَشْهَدْ عَذَابَهُمَا طَآىٕفَةٌ مِّنَ الْمُؤْمِنِیْنَ(۲)

ترجمۂ کنزالایمان: جو عورت بدکار ہو اور جو مرد تو ان میں  ہر ایک کو سو کوڑے لگاؤ اور تمہیں  ان پر ترس نہ آئے  اللہ کے دین میں  اگر تم ایمان لاتے ہو  اللہ اور پچھلے دن پر اور چاہیے کہ ان



Total Pages: 235

Go To