Book Name:Rasail e Madani Bahar

صَلُّوْاعَلَی الْحَبِیب!       صلَّی اللّٰہُ تعالٰی عَلٰی محمَّد

(5) بارانِ رحمت نازل ہو گئی

        میٹھے میٹھے اسلامی بھائیو! دعوتِ اسلامی کے شعبہ جات میں سے  ایک اہم شعبہ جامعۃالمدینہ بھی ہے جہاں کثیر اسلامی بھائی اور اسلامی بہنیں علیحدہ علیحدہ جامعات میں درسِ نظامی (عالم و عالمہ کورس) کی سعادت حاصل کرنے میں مصروف ہیں ۔ جامعات المدینہ کے طلبہ جہاں جدول کے مطابق مدنی کاموں میں حصہ لیتے وہیں مدنی قافلوں میں بھی سفر کرتے ہیں چنانچہ باب المدینہ (کراچی) کے ایک جامعۃالمدینہ کے مدنی قافلے کی مدنی بہار کا لُبِّ لُباب ہے کہ جامعۃ المدینہ کے طلبہ کا مدنی قافلہ باب الاسلام (سندھ) کے علاقے تھرپارکر کی ایک مسجد میں جمعۃ المبارک کے دن پہنچا۔ عاشقانِ رسول کی آمد پر علاقے کے لوگ خوشی سے پھولے نہ سماتے تھے انہوں نے عقیدت کا اظہار کرتے ہوئے امیرِقافلہ سے عرض کی کہ نمازِجمعہ آپ پڑھائیے۔ نماز کے بعد لوگوں نے بتایا کہ ایک عرصہ سے ہمارے علاقے میں بارش نہیں ہوئی آپ راہِ خدا کے مسافر ہیں دعا فرمائیں اللّٰہ  عَزَّوَجَلَّ  بارانِ رحمت نازل فرما ئے۔ چنانچہ مدنی قافلے کے شرکاء نے اللّٰہ  عَزَّوَجَلَّ  کی رحمت پر بھروسہ کرتے ہوئے دعا کے لیے ہاتھ اٹھا دئیے۔ امیرِ قافلہ نے رو رو کر دعا مانگی رب  عَزَّوَجَلَّ  کی رحمت کو جوش آگیا  عاشِقانِ رسول نے ابھی دعا ختم بھی نہ کی تھی کہ دیکھتے ہی دیکھتے گھنگھور گھٹائیں امنڈ آئیں آسمان نے بادلوں کی سیاہ چادر اوڑھ لی اور چھما چھم بارش شروع ہوگئی۔ وہاں موجود لوگوں نے جب مدنی قافلے میں مانگی جانے والی دعا کا اثر دیکھا تو انہوں نے بھی مدنی قافلے میں سفر کی نیت کر لی۔

اللّٰہ  عَزّوَجَلَّ کی امیرِاہلسنّت  پَررَحمت ہواوران کے صد قے ہماری مغفِرت ہو۔

صَلُّوْاعَلَی الْحَبِیب!       صلَّی اللّٰہُ تعالٰی عَلٰی محمَّد

(6)روحانی و جسمانی مرض کافور ہو گئے

       مرادآباد (یوپی، ہند) کے محلہ نئی بستی میں مُقیم اسلامی بھائی کی تحریر کا خلاصہ ہے : تبلیغِ قراٰن وسنّت کی عالمگیر غیرسیاسی تحریک دعوتِ اسلامی کے مشکبار مدنی ماحول سے وابستگی سے قبل مجھے نہ نمازوں کا ہوش تھا نہ ہی سنّتوں پرعمل کا جذبہ مزید یہ کہ نت نئے فیشن اپنانا اور بے حیائی کے کاموں میں مبتلا رہنامیرا معمول بن چکا تھا۔ گناہوں کا مریض ہونے کے ساتھ ساتھ میں جسمانی طور پر بھی بیمار تھا۔ ناک کی ہڈی بڑھ چکی تھی اور دل میں بھی درد رہتا تھا جس کی وجہ سے میں ذہنی اذیت میں مبتلا تھا۔ آخرکار اللّٰہ  عَزَّوَجَلَّ  کے فضل وکرم اور دعوتِ اسلامی کے مدنی ماحول کی برکت سے گناہوں کی تاریک را ت رخصت ہوئی اور میری زندگی میں مدنی ماحول کا سورج طلوع ہو گیا۔ ہوا یوں کہ خوش قسمتی سے ایک مرتبہ اتفاقاً مجھے دعوتِ اسلامی کے تحت سنّتوں کی تربیت کیلئے سفر کرنے والے مدنی قافلے میں سفر کی سعادت نصیب ہو گئی، عاشقانِ رسول کی صحبت تو کیا میسر آئی میری تو زندگی میں مدنی انقلاب برپاہوگیا راہ خدا میں بسر ہونے والے اوقات کی بدولت مجھے رہ رہ کر اپنی بداعمالیوں پر شرمندگی ہونے لگی۔ میں نے اپنے تمام گناہوں سے توبہ کر کے دعوتِ اسلامی کے مدنی ماحول سے رشتہ جوڑلیا۔ کرم بالائے کرم یہ کہ اَلْحَمْدُلِلّٰہِ   عَزَّوَجَلَّ  مدنی قافلے سے واپسی پر راہِ خدا میں مانگی جانے والی دعا کی برکت سے نہ صرف میری ناک کی بڑھی ہوئی ہڈی درست ہو چکی تھی بلکہ کچھ ہی دنوں بعد میرے دل کا مرض بھی ختم ہوگیا۔

 اللّٰہ  عَزّوَجَلَّ کی امیرِاہلسنّت  پَررَحمت ہواوران کے صد قے ہماری مغفِرت ہو۔

صَلُّوْاعَلَی الْحَبِیب!      صلَّی اللّٰہُ تعالٰی عَلٰی محمَّد

 (7)روزگار مل گیا

        مدینۃ الاولیاء ملتان (پنجاب، پاکستان) کے رہائشی اسلامی بھائی کا کچھ اس طرح بیان ہے کہ 2008 ء کی بات ہے جب میں کافی عرصہ سے روز گار کے سلسلے میں مارا مارا پھر رہا تھا متعدد جگہوں پر انٹرویو بھی دئیے مگر کوئی جواب نہ آیا۔ اسی دوران خوش قسمتی سے میری ملاقات دعوتِ اسلامی سے وابستہ ایک اسلامی بھائی سے ہو گئی میں ان کے اخلاق اور گفتگو کے انداز سے بَہُت متأثر ہوا۔ ان کا اپنائیت بھرا انداز دیکھ کر میں نے انہیں اپنی آپ بیتی کہہ سنائی۔ انہوں نے تسلی دیتے ہوئے مَدَنی ماحول کی برکتوں اور مَدَنی قافلے کی بہاروں کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا :      

’’پیارے بھائی گھبرانے کی کوئی بات نہیں آپ بھی دعوتِ اسلامی کے مَدَنی قافلے میں سفر کرکے بیروزگاری سے نجات کی دعا کیجئے، جہاں بے شمار اسلامی بھائیوں کی بگڑی بنی ہے وہیں اِنْ شَائَ اللّٰہ  عَزَّوَجَلَّ  آپ پر بھی کرم ہو جائے گا‘‘۔ چنانچہ میں نے ہاتھوں ہاتھ مَدَنی قافلے میں سفر کی نیت کر لی۔ اللّٰہ  عَزَّوَجَلَّ  کا کرنا ایسا ہوا کہ کچھ ہی دنوں بعد ایک کمپنی میں میرا انٹرویو تھا، میں نے ارادہ کر لیا کہ انٹرویو کے بعد اِنْ شَائَ اللّٰہ  عَزَّوَجَلَّ  تین دن کے مَدَنی قافلے میں سفر کروں گا۔

        چنانچہ انٹرویو کے بعدمیں تین دن کے مَدَنی قافلے کا مسافر بن گیا۔ ابھی مدنی قافلے کا دوسراہی دن تھا کہ مجھے خبر ملی آپ انٹرویو میں کامیاب ہو چکے ہیں ، چنانچہ مدنی قافلے سے واپسی کے چند روز بعدہی مجھے کمپنی کی طرف سے لیٹر بھی مل گیا۔ یوں اَلْحَمْدُلِلّٰہِ   عَزَّوَجَلَّ    مَدَنی قافلے کی برکت سے مجھے روز گار مل گیا۔

نوکری چاہئے، آئیے آئیے       قافلے میں چلیں ، قافلے میں چلو

تنگدستی مٹے دور آفت ہٹے        لینے کو بَرَکتیں ، قافلے میں چلو

صَلُّوْاعَلَی الْحَبِیب!          صلَّی اللّٰہُ تعالٰی عَلٰی محمَّد

(8)ناک کی ٹیڑھی ہڈی درست ہوگئی

            مرکزالاولیاء (لاہور، پنجاب) کے مقیم اسلامی بھائی کے بیان کاخلاصہ ہے کہ میری ناک کی ہڈی پیدائشی طور پر ٹیڑھی تھی جس کی وجہ سے مجھے سانس لینے  میں بے حد دشواری کاسامنا کرنا پڑتا۔ منہ سے سانس لینے کی وجہ سے بسا اوقات نہ صرف گلا خشک ہو جاتا بلکہ زبان بھی سوکھ کر کانٹا ہو جاتی ساری ساری رات کروٹیں بدلتے گزر جاتی مگرنیند آنے کانام نہ لیتی۔ حکیموں



Total Pages: 81

Go To