Book Name:Faizan e Farooq e Azam jild 1

شبہ ہو ،  اُسے بھی چھوڑ دو۔ ‘‘  ([1])

سود جیسی گندی بیماری سے اپنے آپ کو بچائیے:

میٹھے میٹھے اسلامی بھائیو! فی زمانہ جہاں   ہمارا معاشرہ بے شمار برائیوں   میں   مبتلا ہے وہیں   سود جیسی گندی بیماری بھی اب تیزی سے پھیلتی چلی جارہی ہے ،  حالانکہ اس بیماری میں   سراسرنقصان ہی نقصان ہے ،  سود کھانا ایسے ہے جیسے اپنی ماں   سے زنا کرنا ،  سود سے پاگل پن پھیلتا ہے ،  سودی کاروبار میں   شرکت باعث لعنت ہے ،  سودخود کی اُخروی سزا یہ ہے کہ اُس کا پیٹ کمرے جیسا بڑا ہوگااور اُس میں   سانپ بھردیے جائیں   گے ،  سود خور کو اللہ عَزَّ وَجَلَّ اور اس کے رسول صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمکی طرف سے اعلان جنگ ہے ،  سودخور حاسد ،  بے رحم اور مال کا حریص یعنی لالچی بن جاتاہے ،  سود خور کا نہ تو کوئی فرض قبول ہوگا اور نہ ہی کوئی نفل ،  سود خور کا مال اُسے کوئی نفع نہیں   دیتا ،  سود سے معیشت تباہ وبرباد ہوجاتی ہے۔ لہٰذا اپنے آپ کو سود جیسی گندی بیماری سے بچائیے۔([2])یا اللہ عَزَّ وَجَلَّ! ہمیں   سود جیسی نحوست سے محفوظ فرما  ،  ہمیں    حلال  ، طیب روزی کمانے اور کھانے کی توفیق عطا فرما ،  ہمیں   اپنے حبیب صَلَّی اللّٰہُ تَعَا لٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمکے صدقے دنیا وآخرت کی تمام بھلائیاں   عطا فرما۔                    آمِیْنْ بِجَاہِ النَّبِیِّ الْاَمِیْنْ صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم

صَلُّوا عَلَی الْحَبِیْب!          صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلٰی مُحَمَّد

چوتھا باب

اوصافِ فاروقِ اعظم

اس باب کو ملاحظہ کیجئے۔۔۔۔۔۔۔۔۔

سیِّدُنا فاروقِ اعظم رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہکے مختلف  فرامین مبارکہ

سیِّدُنا فاروقِ اعظم رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہ کے مختلف اصلاحی مدنی پھولوں سے معطر مدنی گلدستے

سیِّدُنا فاروقِ اعظم رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہ کے خُطبات کا بیان

سیِّدُنا فاروقِ اعظم رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہ کے مکتوبات کا بیان

سیِّدُنا فاروقِ اعظم رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہ کے مختلف  لوگو ں کو لکھے گئے سیاسی ،  اصلاح وعلمی مکتوبات

سیِّدُنا فاروقِ اعظم رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہ کی وصیتوں کا بیان

سیِّدُنا فاروقِ اعظم رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہ کی وقتِ وصال اور دیگر اوقات میں کی گئی وصیتیں

سیِّدُنا فاروقِ اعظم رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہ سے منقول مختلف دعائیں

٭…٭…٭…٭…٭…٭

ملفوظاتِ فاروقِ اعظم

میٹھے میٹھے اسلامی بھائیو! امیر المؤمنین حضرت سیِّدُنا عمر فاروقِ اعظم رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہ چشمۂ ہدایت تھے ،  آپ رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہ کبھی فضول گفتگو نہ فرمایا کرتے ، آپ کی زبان مبارکہ سے جو کلمات صادر ہوتے وہ اُمت مسلمہ کے لیے مشعل راہ ہوتے ،  آپ رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہنے مختلف مواقع پر مختلف ملفوظات بطور اقوال ،  خطبات ،  وصایا اور دعاؤں   کی صورت میں  اِرشاد فرمائے جو اصلاح احوال ،  اصلاح اعمال ،  خوف خدا ،  عجزوانکساری ودیگر فکر آخرت سے بھرپور مواد پر مشتمل ہیں  ۔ آپ رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہ کے تمام ملفوظات کا احاطہ کرنا بہت مشکل بلکہ تقریباً ناممکن ہے ،  اس باب میں    ’’ فرامینِ فاروقِ اعظم ‘‘   ،   ’’ خطباتِ فاروقِ اعظم ‘‘   ،   ’’ وصایائے فاروقِ اعظم ‘‘   ،   ’’ فاروقِ اعظم کی دعائیں   ‘‘  شامل ہیں  ۔

فرامینِ فاروقِ اعظم

سیِّدُنا فاروقِ اعظم رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہ کے بعض فرامین تو آپ کے اَوصاف کے ضمن میں   مختلف موضوعات کے تحت گزرچکے ہیں   ، حصولِ علم اور ترغیب وتحریص کے لیے مزید چند فرامین پیشِ خدمت ہیں  :

شیطان کی اولاد اور اُس کےکرتوت:

امیر المؤمنین حضرت سیِّدُنا عمر فاروقِ اعظم رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہ ارشاد فرماتے ہیں  :  ’’ اِنَّ ذُرِّیَّۃَ الشَّیْطَانِ تِسْعَۃٌ زَلِیْتُوْنٌ وَوَثِیْنٌ وَلَقُوْسٌ وَاَعْوَانٌ وَھَفَّافٌ وَمُرَّۃٌ وَالْمُسَوِّطُ وَدَاسِمٌ وَوَلَھَانٌ یعنی شیطان کی یہ نو اولادیں   ہیں  :   ‘‘  پھر ارشاد فرمایا: ٭ ’’ زَلِیْتُوْن بازاروں   کے شیطان ہیں   اور یہ بازاروں   میں   اپنے جھنڈے گاڑ کر خرید وفروخت کرنے والوں   کو گمراہ کرتے ہیں  ۔ ‘‘  ٭ ’’ وَثِیْن مصیبتیں   کھڑی کرنے والے شیطان ہیں  ۔ ‘‘  ٭ ’’ اَعْوَان بادشاہوں   وحکمرانوں   کے شیطان ہیں   جوانہیں   گمراہ کرنے پر مامور ہیں۔ ‘‘  ٭ ’’ ھَفَّاف شراب پلانے



[1]     ابن ماجہ ، کتاب التجارات ، باب التغلیظ فی الریا ،  ج۳ ،  ص۷۳ ،  حدیث: ۲۲۷۶ مختصرا۔

[2]     سود ،  اس کی نحوستوں   اور اس سے بچنے کے طریقے جاننے کے لیےدعوت اسلامی کے اشاعتی ادارے مکتبۃ المدینہ کی مطبوعہ ۹۲صفحات پر مشتمل کتاب  ’’ سود اور اس کا علاج ‘‘   کا مطالعہ کیجئے۔



Total Pages: 349

Go To