We have moved all non-book items like Speeches, Madani Pearls, Pamphlets, Catalogs etc. in "Pamphlet Library"

Book Name:Sirat ul Jinan jild 4

اِنَّاۤ اَنۡزَلْنٰہُ قُرْءٰنًا عَرَبِیًّا لَّعَلَّکُمْ تَعْقِلُوۡنَ ﴿۲

ترجمۂکنزالایمان: بیشک ہم نے اسے عربی قرآن اتارا کہ تم سمجھو۔

 

 

ترجمۂکنزُالعِرفان: بیشک ہم نے اس قرآن کو عربی نازل فرمایا تا کہ تم سمجھو۔

{ اِنَّاۤ اَنۡزَلْنٰہُ قُرْءٰنًا عَرَبِیًّا:بیشک ہم نے اس قرآن کو عربی نازل فرمایا۔} اس آیت کا معنی یہ ہے کہ اللہ تعالیٰ نے قرآنِ کریم کو عربی زبان میں نازل فرمایا کیونکہ عربی زبان سب زبانوں سے زیادہ فصیح ہے اور جنت میں جنتیوں کی زبان بھی عربی ہو گی اوراسے عربی میں نازل کرنے کی ایک حکمت یہ ہے کہ تم اس کے معنی سمجھ کر ان میں غوروفکر کرو اور یہ بھی جان لو کہ قرآن اللہ تعالیٰ کا کلام ہے۔ (1)

قرآنِ مجید کو سمجھ کر پڑھنا چاہئے

        اس آیت سے معلوم ہوا کہ قرآنِ مجید کا مسلمانوں پر ایک حق یہ بھی ہے کہ وہ اسے سمجھیں اور اس میں غورو فکر کریں اور اسے سمجھنے کے لئے عربی زبان پر عبور ہونا ضروری ہے کیونکہ یہ کلام عربی زبان میں نازل ہوا ہے اس لئے جو لوگ عربی زبان سے ناواقف ہیں یا جنہیں عربی زبان پر عبور حاصل نہیں تو انہیں چاہئے کہ اہلِ حق کے مُسْتَنَد علما کے تراجم اور ان کی تفاسیر کا مطالعہ فرمائیں تاکہ وہ قرآنِ مجید کو سمجھ سکیں۔ افسوس! فی زمانہ مسلمانوں کی کثیر تعداد قرآنِ مجید کو سمجھنے اور اس میں غور وفکر کرنے سے بہت دور ہو چکی ہے، اللہ تعالیٰ انہیں ہدایت عطا فرمائے۔ عربی کا سیکھنا بحیثیت ِ مجموعی اُمت ِمُسلمہ کیلئے فرضِ کفایہ ہے۔

نَحْنُ نَقُصُّ عَلَیۡکَ اَحْسَنَ الْقَصَصِ بِمَاۤ اَوْحَیۡنَاۤ اِلَیۡکَ ہٰذَا الْقُرْاٰنَ ٭ۖ وَ اِنۡ کُنۡتَ مِنۡ قَبْلِہٖ لَمِنَ الْغٰفِلِیۡنَ ﴿۳

ترجمۂکنزالایمان: ہم تمہیں سب سے اچھا بیان سناتے ہیں اس لیے کہ ہم نے تمہاری طرف اس قرآن کی وحی بھیجی

ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ

1صاوی، یوسف، تحت الآیۃ: ۲، ۳/۹۴۱۔