Book Name:Faizan e Khadija tul Kubra

باتیں معلوم کرتی جائیے، چنانچہ

وِلادت اور نام ونسب

وِلادت باسعادت عامُ  الْفِیْل سے 15 سال پہلے ہے۔ ([1])  نام خدیجہ، والِد کا نام خُوَیْلِد اور والِدہ کا نام فاطمہ ہے۔ والِد کی طرف سے آپ کا نسب اس طرح ہے:  ”خُوَیْلِد بن اَسَد بن عَبْدُ الْعُزّٰی بن قُصَیّ بن کِلَاب بن مُرَّة بن کَعْب بن لُؤَیّ بن غالِب بن فَهِرّ“ اور والِدہ کی طرف سے یہ ہے:  ”فاطِمہ بنتِ زَائِدة بن اَصَمّ بن ھرم بن رواحہ بن حَجَر بن عَبْد بن مَعِیْص بن عامِر بن لُؤَیّ بن غالِب بن فَهِرّ ([2])

رسولِ خُدا صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم سے نسب کا اِتِّصال

نسب کے حوالے سے آپ رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنۡہَا کو یہ فضیلت حاصِل ہے کہ دیگر ازواجِ مطہرات رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنۡہُنَّ کی نسبت سب سے کم واسِطوں سے آپ کا نسب رسولِ کریم صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم کے نسب شریف سے مل جاتا ہے۔ واضح رہے کہ آپ رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنۡہَا کے نسب کے حُضُورِ اقدس صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم کے نسب شریف کے ساتھ ملنے میں صرف تین واسطے پائے جاتے ہیں:  

 (۱) خُوَیْلِد                  (۲) اَسَد      (۳) عَبْدُ الْعُزّی۔

چوتھے جدِّ امجد حضرتِ قُصَیّ میں آپ کا نسب حُضُور عَلَیْہِ الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَام کے نسب سے ملتا ہے جو پیارے آقا صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم کے پانچویں جدِّ محترم ہیں جبکہ اُمُّ المؤمنین حضرتِ سیدتنا اُمِّ حبیبہ رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنۡہَا کے نسب کے پیارے آقا صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم کے نسب شریف کے ساتھ ملنے میں واسطے زیادہ (چار واسطے) پائے جاتے ہیں:  

           (۱) ...ابو سُفْیَان                         (۲) ...حَرْب

           (۳) ...اُمَیَّہ                              (۴) ...عبدِ شَمْس

لیکن سب سے قریب عبدِ مناف میں ملتا ہے جو پیارے آقا صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم کے چوتھے اور حضرتِ اُمِّ حبیبہ رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنۡہَا کے پانچویں جد محترم ہیں۔ حضرتِ سیِّدنا علّامہ نورُ الدِّین علی بن ابراہیم عَلَیْہِ رَحْمَۃُ اللہِ الْکَرِیْم نے نسب کے حوالے سے آپ رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنۡہَا کی ایک اور خصوصیت بیان فرمائی ہے، فرماتے ہیں کہ قُصَیّ کی اولاد میں سے صرف آپ اور حضرت اُمِّ حبیبہ رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنۡہُمَا ہیں جنہوں نے سیِّدُ الْاَنبیا، محبوبِ کِبْرِیَا صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم کے ساتھ رشتہ اِزْدِواج میں مُنْسَلِک ہونے کا شرف حاصل کیا۔ ([3])

کنیت

آپ رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنۡہَا کی  کُنْیَت اُمُّ الْقَاسِم ([4]) اور اُمِّ ھِند  ہے۔ ([5])

 



[1]    الطبقات الكبرى، ذكر تزويج رسول الله صلى الله عليه وسلم خديجة..الخ، ۱ / ۱۰۵

[2]    المرجع السابق، تسمية نساء المسلمات   الخ، ۳۰۹۶-ذكر خديجة   الخ ، ۸ / ۱۱.

[3]    السيرة الحلبية، باب تزویجه صلى الله عليه وسلم   الخ، ۱ / ۱۹۹.

[4]    سیر اعلام النبلاء، ۱۶-خدیجة ام المؤمنین، ۲ / ۱۰۹.

[5]    معرفة الصحابة للاصبهانى، ذكر الصحابيات   الخ، ۳۷۴۶-خديجة   الخ، ۶ / ۳۲۰۰.



Total Pages: 39

Go To