Book Name:Islam Ki Bunyadi Batain Part 03

اِنِّیْ وَجَّھْتُ وَجْھِیَ لِلَّذِیْ فَطَرَ السَّمٰوٰتِ وَالْاَرْضَ عَلٰی مِلَّۃِ اِبْرَاھِیْمَ حَنِیْفًا وَّمَا اَنَا مِنَ الْمُشْرِکِیْنَ اِنَّ صَلَاتِیْ وَ نُسُکِیْ وَمَحْیَایَ وَمَمَاتِیْ لِلّٰہِ رَبِّ الْعٰلَمِیْنَ لَا شَرِیْكَ لَہٗ وَبِذٰلِكَ اُمِرْتُ وَاَنَا مِنَ الْمُسْلِمِیْنَ

سوال …:                      کیا ذبح کے بعد بھی کوئی دعا پڑھی جاتی ہے؟

جواب …:                                              جی ہاں !  قربانی اپنی طرف سے ہو تو ذبح کے بعد یہ دعا پڑھی جاتی ہے:  

اَللّٰھُمَّ تَقَبَّلْ مِنِّی كَمَا تَقَبَّلْتَ مِنْ خَلِیْلِكَ اِبْرَاھِیْمَ عَلَیْہِ الصَّلٰوۃُ وَالسَّلامُ وَحَبِیْبِكَ مُحَمَّدٍ صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم

            اور اگر دوسرے کی طرف سے ہو تو مِنِّی کے بجائے مِنْ کہہ کر اس کا نام لیا جاتا ہے۔ )[1](

قربانی کے متعلق دیگر مدنی پھول

سوال …:                       کیا قربانی کا جانور اپنے ہاتھ سے ذبح کرنا چاہئے؟

جواب …:   جی ہاں !  قربانی کا جانور اپنے ہاتھ سے ذبح کرنا سنت ہے اور بوقت ذبح بہ نیتِ ثوابِ آخرت وہاں حاضر رہنا بھی سنت ہے۔

سوال …:                       گائے، بھینس اور اونٹ میں کتنی قربانیاں ہو سکتی ہیں ؟

جواب …:                         گائے، بھینس اور اونٹ میں سات قربانیاں ہو سکتی ہیں ۔

سوال …:                       جس پر قربانی واجب ہو وہ اگر قربانی کے بجائے اتنی رقم صدقہ کر دے تو کیا اس کے لیے ایسا کرنا جائز ہے؟

جواب …:                         جی نہیں !  قربانی کا بکرا یا اس کی قیمت صدقہ کرد ینے سے قربانی نہیں ہوتی کیونکہ قربانی کے وقت میں قربانی کرنا ہی لازم ہے کوئی دوسری چیز اس کے قائم مقام نہیں ہوسکتی۔  )[2](

سوال …:                        قربانی کے وقت تماشا دیکھنا کیسا ہے؟

جواب …:                                              قربانی کے وقت بطور تفریح ذبح ہونے والے جانور کے گرد گھیرا ڈالنا، اس کے چلانے اور تڑپنے پھڑکنے سے لطف اندو ز ہونا، ہنسنا، قہقہے بلند کرنا اور اس کا تماشا بنانا سراسر غفلت کی علامت ہے۔ ذبح کرتے وقت یا اپنی قربانی ہو رہی ہو اس کے پاس حاضر رہتے وقت ادائے سنت کی نیت ہونی چاہئے۔

سوال …:                                          قربانی کے وقت ادائے سنت کے علاوہ اور کیا کیا نیتیں کی جا سکتی ہیں ؟

جواب …:                                              قربانی کے وقت ادائے سنت کے علاوہ درج ذیل نیتیں بھی کی جا سکتی ہیں :  

٭…  میں راہِ خدا میں جس طرح آج جانور قربان کر رہا ہوں بوقتِ ضرورت اپنی جان بھی قربان کردوں گا۔

٭…  جانور ذبح کر کے اپنے نفسِ امارہ کو بھی ذبح کر رہا ہوں اور آئندہ گناہوں سے بچوں گا۔

سوال …:                       ذبح کے وقت جانور پر رحم کھانا کیسا ہے؟

جواب …:                         ذبح ہونے والے جانور پر رحم کھائے اور غور کرے کہ اگر اس کی جگہ مجھے ذبح کیا جارہا ہوتا تو میری کیا کیفیت ہوتی!  بوقتِ ذبح جانور پر رحم کھانا کارِ ثواب ہے جیسا کہ ایک صحابی نے بارگاہِ رسالت میں عرض کی:  یا رسولَ اللہ صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم ! مجھے بکری ذبح کرنے پر رحم آتا ہے۔ تو آپ صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم نے ارشاد فرمایا:  اگر اس پر رحم کرو گے تو اللہ  عَزَّ وَجَلَّ  بھی تم پر رحم فرمائے گا۔)[3](

٭…٭…٭

 

بہارِ شریعت حِصّہ اَوّل و دَوم سے چند ضروری اصطلاحات کی وضاحت

مُعْجِزہ:                 نبی سے بعد دعوی نبوت خلافِ عقل وعادت صادر ہونے والی چیز جس سے سب منکرین عاجز ہوجاتے ہیں اسے معجزہ کہتے ہیں ۔

اِرہاص :                  نبی سے جوبات خلافِ عادت اعلانِ نبوت سے پہلے ظاہرہواس کوارہا ص کہتے ہیں ۔

کرامت :                ولی سے جوبات خلافِ عادت صادرہواس کوکرامت کہتے ہیں ۔

مَعُونت :               عام مومنین سے جوبات خلافِ عادت صادِر ہو اس کو معونت کہتے ہیں ۔

اِسْتِدراج :                         بے باک فُجّاریاکفارسے جوبات ان کے موافق ظاہر ہو اس کو استدراج کہتے ہیں ۔

 



[1]    ابلق گھوڑے سوار،   ص ۱۴

[2]    بہارِ شریعت،   اضحیہ یعنی قربانی کا بیان،   ۳ / ۳۳۵ ماخوذاً

[3]    مسند احمد،   ۵ / ۳۰۴،   حديث: ۱۵۵۹۲



Total Pages: 146

Go To