$header_html

Book Name:Islam Ki Bunyadi Batain Part 03

ترجمہ: اے اللہ عَزَّ وَجَلَّ !  ہم پر علم و حکمت کے دروازے کھول دے اور ہم پر اپنی رحمت نازل فرما!  اے عظمت و بزرگی والے!

زبان کی لکنت دور کرنے کی دُعا

قَالَ رَبِّ اشْرَحْ لِیْ صَدْرِیْۙ(۲۵)وَ یَسِّرْ لِیْۤ اَمْرِیْۙ(۲۶)وَ احْلُلْ عُقْدَةً مِّنْ لِّسَانِیْۙ(۲۷)یَفْقَهُوْا قَوْلِیْ۪(۲۸) (پ۱۶، طٰہٰ:  ۲۵تا۲۸)

ترجمۂ کنز الایمان:   اے میرے  رب  میرے لئے میرا سینہ کھول دے اور میرے لئے میرا کام آسان کر اور میری زبان کی گرہ کھول دے کہ وہ میری بات سمجھیں ۔

مرغ کی بانگ سن کر پڑھنے کی دُعا

اَللّٰھُمَّ اِنِیْۤ اَسْئَلُكَ مِنْ فَضْلِكَ)[1](

ترجمہ:  یا الٰہی !  میں تجھ سے تیرے فضل کا سوال کرتا ہوں ۔ )[2](

شعارِ کفار کودیکھے یاآوازسنے تویہ دُعا پڑھے

اَشْھَدُ اَنْ لَّاۤ اِلٰہَ اِلَّااﷲُ وَحْدَہٗ لَا شَرِیْكَ لَہٗ  اِلٰھًا وَّاحِدًا لَّانَعْبُدُ اِلَّاۤ اِیَّاہُ )[3](

ترجمہ: میں گواہی دیتا ہوں کہ اللہ  عَزَّ وَجَلَّ  کے سوا کوئی معبود نہیں ، وہ یکتا ہے اس کا کوئی شریک نہیں ، وہ معبود یکتا ہے ہم صرف اسی کی عبادت کرتے ہیں ۔

غصہ آنے، کتے کے بھونکنے اور گدھے کے رینگنے پر پڑھنے کی دُعا

اَعُوْذُ بِاﷲِ مِنَ الشَّیْطٰنِ الرَّجِیْمِ)[4](

ترجمہ:  میں شیطان مردود سے اللہ تعالٰی کی پناہ چاہتا ہوں ۔

بارش کے وقت کی دعا

اَللّٰہُمَّ سُقْیًا نَّافِعًا ؕ     )[5](

ترجمہ: یا الٰہی!  ایسا پانی برسا جو نفع پہنچائے۔

آبِ زم زم پیتے وقت کی دُعا

اَللّٰھُمَّ  اَسْئَلُكَ عِلْمًا نَّافِعًا وَّرِزْقًا وَّاسِعًاوَّ شِفَآءً مِّنْ کُلِّ دَآءٍ)[6](

ترجمہ: اے اللہ  عَزَّ وَجَلَّ  !  میں تجھ سے علمِ نافع کا اور رزق کی کشادگی کا اورہر بیماری سے شفایابی کاسوال کرتاہوں ۔

بازار میں داخل ہوتے وقت کی دُعا

لَاۤ اِلٰہَ اِلَّا اﷲُ وَحْدَہٗ لَا شَرِیْكَ لَہٗ لَہُ الْمُلْكُ وَلَہُ الْحَمْدُ یُحْیِیْ وَیُمِیْتُ وَھُوَ حَیٌّ لَّا یَمُوْتُ بِیَدِہِ الْخَیْرُ وَھُوَ عَلٰی کُلِّ شَیْئٍ قَدِیْرٌ ؕ )[7](

ترجمہ:  اللہ  عَزَّ وَجَلَّ  کے سوا کوئی معبود نہیں ، وہ اکیلا ہے، اس کا کوئی شریک نہیں ، اسی کے لئے ہے بادشاہی اور اسی کے لئے حمد ہے، وہی زندہ کرتا اور مارتا ہے وہ زندہ ہے اس کوہرگز موت نہیں آئے گی، تمام بھلائیاں اسی کے دستِ قدرت میں ہیں اور وہ ہر چیز پر قادر ہے۔)[8](

ادائے قرض کی دعا

اَللّٰھُمَّ اکْفِنِیْ بِحَلَالِكَ عَنْ حَرَامِكَ وَاَغْنِنِیْ بِفَضْلِكَ عَمَّنْ سِوَاكَ ؕ )[9](

 



[1]     بخاری،   ۲ / ۴۰۵،  حدیث:۳۳۰۳ ماخوذًا

[2]     مُرغ رحمت کا فرشتہ دیکھ کر بولتا ہے،  اس وقت کی دُعا پر فرشتے کے اٰمین کہنے کی امید ہے۔(مراٰۃالمناجیح،  ۴ / ۳۲)

[3]     ملفوظاتِ اعلیٰ حضرت میں ہے کہ مندروں کے گھنٹے اور سنکھ (ناقوس یعنی بڑی کوڑی جو مندروں میں بجائی جاتی ہے) کی آواز اور گرجا وغیرہ کی عمارت کو دیکھ کر بھی یہ دُعا پڑھے۔ (الملفوظ،   حصہ دوم،   ص۲۳۵)

[4]     بخاری،   کتاب الادب،   باب الحذر من الغضب،   ۴ / ۱۳۰،   حدیث:۶۱۱۵ مسند احمد،   ۵ / ۳۴،   حدیث: ۱۴۲۸۷

[5]     مشكاة المصابیح،   كتاب الصلاة ، باب فی الریاح،   ۱ / ۲۹۲،   حدیث: ۱۵۲۰

[6]     حضرت سیدنا ابن عباس رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہُمَا آبِ زم زم پیتے وقت یہ دعا پڑھا کرتے تھے۔ فرمانِ مصطفٰے صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم ہے: آبِ زم زم جس کام کے لئے پیا جائے (کارآمدہے) اس کو پیتے وقت شفا طلب کریں تو اللہ  عَزَّ وَجَلَّ  شفا عطا فرمائے گااور اگر پناہ مانگیں تواللہ  عَزَّ وَجَلَّ  پناہ عطافرمائے گا۔ (مستدرک،   کتاب المناسک،   ماء زمزم لما شرب لہ،   ۲ / ۱۳۲،   حدیث:۱۷۸۲)

[7]     مُرغ رحمت کا فرشتہ دیکھ کر بولتا ہے،  اس وقت کی دُعا پر فرشتے کے اٰمین کہنے کی امید ہے۔(مراٰۃالمناجیح،  ۴ / ۳۲)

$footer_html