Book Name:Islam Ki Bunyadi Batain Part 03

سوال …:                    اگر کسی پر غُسل فرض ہو تو کیا وہ غسل کا تیمم کر کے نماز وغیرہ پڑھ سکتا ہے یا نماز کے لیے الگ سے وُضو کا تیمم کرنا ضروری ہے؟

جواب …:            جی ہاں !  اگر کسی پر غسل فرض ہو تو وہ تیمم کر کے نماز وغیرہ پڑھ سکتا ہے اور اس کے لیے یہ ضروری نہیں کہ غُسل اور وُضو دونوں کے لیے دوتیمم کرے بلکہ ایک ہی میں دونوں کی نیت کرلے دونوں ہو جائیں گے اور اگر صرف غُسل یا وُضو کی نیت کی جب بھی کافی ہے۔

سوال …:           کیا تیمم کا ذکر قرآنِ مجید میں بھی ہے؟

جواب …:            جی ہاں !  تیمم کا ذکر پارہ 6سورۂ مائدہ کی آیت نمبر 6میں کچھ یوں آیا ہے:  

وَ اِنْ كُنْتُمْ مَّرْضٰۤى اَوْ عَلٰى سَفَرٍ اَوْ جَآءَ اَحَدٌ مِّنْكُمْ مِّنَ الْغَآىٕطِ اَوْ لٰمَسْتُمُ النِّسَآءَ فَلَمْ تَجِدُوْا مَآءً فَتَیَمَّمُوْا صَعِیْدًا طَیِّبًا فَامْسَحُوْا بِوُجُوْهِكُمْ وَ اَیْدِیْكُمْ مِّنْهُؕ-ؕ   (پ۶، المائدۃ:  ۶)

ترجَمۂ کنزالایمان:  اور اگر تم بیمار یا سفر میں ہو یا تم میں کوئی قضائے حاجت سے آیا یا تم نے عورتوں سے صحبت کی اور ان صورتوں میں پانی نہ پایا تو پاک مٹی سے تیمّم کرو تو اپنے منھ اور ہاتھوں کا اس سے مسح کرو ۔

تیمم کے فرائض

سوال …:                    تیمم کے کتنے فرض ہیں ؟

جواب …:            تیمم کے تین فرض ہیں :

(۱)… نیت (۲)… سارے منہ پر ہاتھ پھیرنا (۳)… کہنیوں سمیت دونوں ہاتھوں کا مسح کرنا۔

سوال …:                    تیمم میں نیت سے کیا مراد ہے؟

جواب …:            تیمم کرتے وقت یہ نیت ہونا فرض ہے:  بے وضو یا بے غسلی یا دونوں سے پاکی حاصل کرنے اور نماز وغیرہ جائز ہونے کے لئے تیمم کرتا ہوں ۔ یاد رکھئے کہ نیت اگرچہ دل کے ارادے کا نام ہے مگر زبان سے بھی کہہ لینا بہتر ہے۔

سوال …:                    تیمم میں سارے منہ پر ہاتھ پھیرتے ہوئے کن باتوں کو پیشِ نظر رکھنا چاہئے؟

جواب …:            تیمم میں سارے منہ پر ہاتھ پھیرتے ہوئے درج ذیل باتوں کو پیشِ نظر رکھنا چاہئے:  

٭…  ہاتھ اس طرح پھیرا جائے کہ منہ کا کوئی حصہ باقی نہ رہ جائے اگر بال برابر بھی کوئی جگہ رہ گئی تیمم نہ ہوا۔

٭…  داڑھی، مونچھوں اور بھوؤں کے بالوں پر ہاتھ پھر جانا ضروری ہے۔

٭…  بھوؤں کے نیچے اور آنکھوں کے اوپر جو جگہ ہے اس کا اور ناک کے نچلے حصے کا خیال رکھیں کہ اگر خیال نہ رکھیں گے تو ان پر ہاتھ نہ پھرے گا اور تیمم نہ ہوگا۔

٭…  زور سے آنکھیں بند کرلیں جب بھی تیمم نہ ہوگا۔

٭…  ہونٹ کا وہ حصہ جو عادۃً منہ بند ہونے کی حالت میں دکھائی دیتا ہےاس پر بھی مسح ہو جانا ضروری ہے تو اگر کسی نے ہاتھ پھیرتے وقت ہونٹوں کو زور سے دبالیا کہ کچھ حصہ باقی رہ گیا تیمم نہ ہوا۔

سوال …:                    تیمم میں کہنیوں سمیت دونوں ہاتھوں کے مسح کے دوران کیا احتیاط کرنی چاہئے؟

جواب …:            تیمم میں کہنیوں سمیت دونوں ہاتھوں کے مسح کے دوران یہ خیال رکھنا چاہئے کہ کوئی جگہ ذرّہ برابر باقی نہ رہے ورنہ تیمم نہ ہو گا اور اس کے لیے انگوٹھی چھلّے یا کنگن چوڑیاں وغیرہ پہنے ہوں تو انہیں اتار کر ان کے نیچے ہاتھ پھیرنا فرض ہے۔

تیمم کی سنّتیں

سوال …:                    تیمم کی سنتیں کتنی ہیں ؟

جواب …:            تیمم کی دس سنتیں ہیں :

(1)بسم الله شریف کہنا۔                                                (2)… ہاتھوں کو زمین پر مارنا۔

(3)زمین پر ہاتھ مار کر لوٹ دینا۔ )[1](                                                (4)انگلیاں کھلی ہوئی رکھنا۔

(5)… ہاتھوں کو جھاڑ لینا یعنی ایک ہاتھ کے انگوٹھے کی جڑ کو دوسرے ہاتھ کے انگوٹھے کی جڑ پر مارنا مگر یہ احتیاط رہے کہ تالی کی آواز پیدا نہ ہو۔

 



[1]    یعنی ہاتھوں کو پہلے آگے بڑھانا پھر پیچھے لانا۔



Total Pages: 146

Go To