Book Name:Anokhi Kamae

شرکت کی بَرَکت سے میں نے اپنے سر پر مدنی برقع سجالیا اوراب تک اَلْحَمْدُ لِلّٰہعَزَّوَجَلَّ اس پر استقامت حاصل ہے۔ تادمِ تحریر حلقہ مشاورت کی ذمّہ دار ہونے کی حیثیّت سے مدنی کاموں کی ترقی وعروج کے لیے کوشاں ہوں۔

 اللہعَزَّوَجَلَّ کی امیرِاہلسنّت پَر رَحمت ہو اور ان کے صد قے ہماری بے حسا ب مغفِرت ہو

صلُّوْاعَلَی الْحَبِیْب!                   صلَّی اللہ تعالٰی علٰی محمَّد

{۹}  T.V گھر سے نکال باہر کیا

          بابُ المدینہ(کراچی)کی ایک اسلامی بہن اپنی داستانِ عشرت کے خاتمے کے اَحوال کچھ یوں بیان کرتی ہیں کہدعوتِ اسلامی کے مَدَنی ماحول میں آنے سے پہلے گناہوں کے تاریک رستے پر چل رہی تھی جس کی منزل جہنم کا پُر ہول گڑھا ہی تھا۔ افسوس!مجھے اپنی قبر وحشر کی تیاری کا ذرہ بھی احساس نہ تھا۔ میں نے قراٰن مجیدحفظ کرنے کی سعادت تو حاصل کی تھی مگر حافِظۂِ قراٰن ہونے کے باوجود میری عملی حالت ناگفتہ بہ تھی ، فلمیں ڈرامے دیکھنے کی بے حد شوقین تھی، گھر والوں سے زبان درازی کرنا میری عادت میں شامل تھا۔ میری زندگی میں کچھ اس طرح بہار آئی کہ خوش قسمتی سے میری والدہ کو دعوتِ اسلامی کا مشکبار مدنی ماحول مل گیا۔ جہاں انہیں اپنی قبر وآخرت کی تیاری کاذہن ملا وہیں دیگر گھر والوں کی اصلاح کے جذبے سے سرشار ہوئیں۔اَلْحَمْدُلِلّٰہ عَزَّوَجَلَّمجھے اپنی امی جان کے بار بار سمجھانے ، مدنی ماحول کی برکتیں بتانے اور گناہوں کی آفات سے ڈرانے کی بدولت دعوتِ اسلامی کا پیارا پیارا مدنی ماحول میسر آگیا ۔ میں نے اپنے تمام گناہوں سے تو بہ کرلی اورامیرِاہلسنّت دَامَت بَرَکَاتُہُمُ العَالِیَہ  سے بیعت ہو کر سلسلہ عالیہ قادریہ عطاریہ میں داخل ہوگئی۔مدنی ماحول سے وابستگی سے قبل میں T.V بہت شوق سے دیکھا کرتی تھی مگر مدنی ماحول سے منسلک ہوتے ہی میں نے ٹی وی کو گھر سے نکال باہر کیا اور اَلْحَمْدُلِلّٰہ عَزَّوَجَلَّ  مدنی ماحول کی برکت سے نہ صرف قراٰن پاک یاد رکھنے کا ذہن ملابلکہ دوسروں کو قراٰن پاک پڑھانے والی بن گئی۔اَلْحَمْدُ لِلّٰہ عَزَّوَجَلَّ تادمِ تحریر دعوتِ اسلامی کے تحت قائم شدہ مدرسۃ المدینہ للبنات میں پڑھانے کی سعادت حاصل کررہی ہوں۔اللہعَزَّوَجَلَّ مجھے امیرِ اہلسنّت دَامَت بَرَکَاتُہُمُ العَالِیَہ کی غلامی اور دعوت ِاسلامی کے مدنی ماحول میں استقامت عطا فرمائے۔

 اللہ عَزَّوَجَلَّ کی امیرِاہلسنّت پَر رَحمت ہو اور ان کے صد قے ہماری بے حسا ب مغفِرت ہو

صلُّوْاعَلَی الْحَبِیْب!                   صلَّی اللہ تعالٰی علٰی محمَّد

 {۱۰} پُرتاثیر بیان کی برکت

          اندرون مدینۃُ الاولیاء (ملتان شریف) کی ایک اسلامی بہن کے بیان کا لُبِّ لُباب ہے کہ دعوتِ اسلامی کے مدنی ماحول سے منسلک ہونے سے پہلے میں بھی عام لڑکیوں کی طرح سنّتوں سے دور، دنیا کی رنگینیوں میں مَسرُور فلمیں ڈرامے دیکھنے میں مَخمور اور شرعی پردے سے دور تھی، نیز لڑائی جھگڑے کی بھی عادی تھی، دیگر گناہوں کے ساتھ ساتھ ماں باپ کی نافرمان بھی تھی۔ الغرض میرے ہر طرف گناہوں کادور دورہ تھا۔خوش قسمتی سے میرے بھائی کو دعوتِ اسلامی کا مدنی ماحول میسر آگیا، چنانچہ ان کی انفرادی کوشش سے میں بھی دعوتِ اسلامی کے مدنی ماحول سے منسلک ہوگئی ا ورامیرِ اہلسنّت دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ سے مرید ہو کر عطاریہ بھی بن گئی، کرم بالائے کرم یہ کہ ایک دن امیرِ اہلسنّت دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ کارقت انگیز بیان  ’’ قبر کی پہلی رات ‘‘ سنا۔ امیرِ اہلسنّت دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ کی زبانی قبر میں پیش آنے والے ہولناک معاملات کا دل ہلا دینے والا ذکرسن کر میری غفلت کافور ہو گئی۔موت وقبر وحشر کی تیاری کا ذہن بنا، گناہوں سے دامن بچانے کی نیّت کی اور دعوتِ اسلامی کے مشکبارمدنی ماحول سے وابستہ ہوگئی ، شرعی پردہ میرا معمول بن گیا ، نمازوں کی پابندی کرنے لگی ۔  اَلْحَمْدُ لِلّٰہعَزَّوَجَلَّ  تا دمِ تحریر علاقائی مجلسِ مشاورت کی ذمہ دار کی حیثیّت سے سنّتوں کی خدمت سرانجام دے رہی ہوں۔ 

اللہ عَزَّوَجَلَّ کی امیرِاہلسنّت پَر رَحمت ہو اور ان کے صد قے ہماری بے حسا ب مغفِرت ہو

صلُّوْاعَلَی الْحَبِیْب!                   صلَّی اللہ تعالٰی علٰی محمَّد

 



Total Pages: 11

Go To