Book Name:Anokhi Kamae

           بابُ المدینہ( کراچی) کے علاقہ پراناگولی مار ڈویژن ’’ فیضِ مرشد ‘‘  کی ایک اسلامی بہن کے تحریری بیان کا خلاصہ ہے کہ میرے دعوت ِاسلامی کے مشکبار مدنی ماحول سے وابستگی کا سبب کچھ یوں بناکہ دعوتِ اسلامی کے مدنی ماحول سے وابستہ ایک اسلامی بہن نے انفرادی کوشش کرتے ہوئے امیرِ اہلسنّت دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ  کا عطا کردہ ’’  نیک بننے کا نسخہ ‘‘  یعنی مدنی انعامات کا رسالہ تحفہ میں دیا اور اس کامطالعہ کرنے اور روزانہ فکرِ مدینہ کرتے ہوئے اسے پُر کرنے کا ذہن دیا۔ میں نے نیّت کرلی کہ روزانہ فکرِ مدینہ کرتے ہوئے مدنی انعامات کے رسالے کو ضرور پُر کروں گی۔ میں نے جب مدنی انعامات کے رسالے میں دیے ہوئے سوالات پڑھے تو میری حیرت کی انتہا نہ رہی کیونکہ اس میں ایسی ایسی نیکیوں کی ترغیب دلائی گئی تھی کہ جن سے میں یکسر غافل تھی۔اس کے بعد اَلْحَمْدُ لِلّٰہ عَزَّوَجَلَّمیں نے مدنی انعامات پر عمل کو اپنی زندگی کا معمول بنالیا ، جس کی برکت سے مجھے نمازوں کی پابندی نصیب ہو ئی ، نیکیوں سے محبت ہوئی اور گناہوں سے بچنے کا ذہن بنا۔ اَلْحَمْدُ لِلّٰہ عَزَّوَجَلَّ تادمِ تحریر مُبلِّغۂ دعوتِ اسلامی کی حیثیّت سے مدنی کاموں میں ترقی وعروج کے لیے کوشاں ہوں۔ اللہ عَزَّوَجَلَّ  امیرِ اہلسنّت  دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ  پر اپنی خاص رحمتوں کا نزول فرمائے اور دعوتِ اسلامی کو ترقی و عروج عطا فرمائے ۔

اللہ عَزَّوَجَلَّ کی امیرِاہلسنّت پَر رَحمت ہو اور ان کے صد قے ہماری بے حسا ب مغفِرت ہو

صلُّوْاعَلَی الْحَبِیْب!            صلَّی اللہ تعالٰی علٰی محمَّد

 {۱۶} رقّت انگیز دعا کی برکت

           بابُ المدینہ (کراچی) کے علاقہ نیاآبادکی ایک اسلامی بہن کی تحریر کا خلاصہ ہے کہ دعوتِ اسلامی کے مدنی ماحول سے وابستگی سے قبل میں گناہوں کے دلدل میں بُری طرح دھنسی ہوئی تھی۔ نت نئے فیشن کی دلدادہ تھی۔ سنّتوں سے کوسوں دور اغیار کے فیشن کو اپنائے ہوئے تھی ، نمازکی بھی کوئی پابندی نہیں تھی، بدزبان اتنی تھی کہ کسی کا ادب کرنا گویامجھے آتا ہی نہیں تھا ، میرے گھر والے میری حرکتوں کی وجہ سے مجھ سے بیزار تھے۔ چنانچہ میری بگڑی قسمت یوں سنوری کہ ایک اسلامی بہن نے مجھ پرانفرادی کوشش کی ، جس کی برکت یہ ظاہر ہوئی کہ مجھےدعوتِ اسلامی کا میٹھا میٹھا مدنی ماحول میسر آگیا، چنانچہ ایک مرتبہ میں نے دعوتِ اسلامی کے تحت ہونے والے اسلامی بہنوں کے ہفتہ وار سنّتوں بھرے اجتماع میں شرکت کی سعادت حاصل کی تو وہاں کے مسحور کُن ماحول ، ذکرو نعت ، سنّتوں بھرے بیانات اور رِقَّت انگیز دعا نے مجھے روحانی لذّت سے آشنا کیا۔ اجتماع کے اختتام پرجب رقت انگیز دعاہوئی تو میرے دل پرخوفِ خدا طاری ہو گیا، مجھے اپنے گناہوں پر ندامت ہونے لگی اور اس بات کا شدت سے احساس ہونے لگا کہ افسوس! میں نے زندگی کے قیمتی لمحات غفلت کی نذر کر دیئے۔ چنانچہ میں نے اپنے سابقہ گناہوں سے توبہ کی اورمدنی ماحول کے رنگ میں رنگ گئی، جس کی بدولت مجھے نمازوں کی پابندی ملی، بڑوں کا ادب نصیب ہوا۔ سب سے بڑھ کر یہ کہ مجھے دین کے بارے میں صحیح معنوں میں سمجھ بوجھ اوردینی معلومات حاصل کرنے کی سعادت حاصل ہوئی، اللہ عَزَّوَجَلَّ  ہمیں اس پاکیزہ ماحول میں جینا مرنا نصیب فرمائے۔آمِیْن بِجَاہِ النَّبِیِّ الْاَمِیْن  صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم

 اللہ عَزَّوَجَلَّ کی امیرِاہلسنّت پَر رَحمت ہو اور ان کے صد قے ہماری بے حسا ب مغفِرت ہو

صلُّوْاعَلَی الْحَبِیْب!            صلَّی اللہ تعالٰی علٰی محمَّد

مجلسِ اَلْمَدِیْنَۃُ الْعِلْمِیّہ  {دعوتِ اسلامی}       شعبہ امیرِاہلسنّت

۱۱ صفر المظفر ۱۴۳۵؁ ھ بمطابق 15دسمبر 2014 ؁ء  

آپ بھی مَدَنی ماحول سے وابستہ ہوجائیے

          خربوزے کودیکھ کرخربوزہ رنگ پکڑتاہے، تِل کوگلاب کے پھول میں رکھ دو تو اُس کی صُحبت میں رَہ کرگلابی ہو جاتا ہے۔ اِسی طرح تبلیغِ قراٰن و سنّت کی عالمگیر غیر سیاسی تحریک دعوتِ اسلامی کے مَدَنی ماحول سے وابَستہ ہو کر عاشقانِ رسول کی صُحبت میں رہنے والا بے وَقعت پتّھر بھی اللہ عَزَّوَجَلَّ اور اس کے رسول صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیہِ وَاٰلہٖ وَ سَلَّم کی مہربانی سے انمول ہیرا بن جاتا، خوب جگمگاتا اور ایسی شان سے پَیکِ اَجَل کو لَبَّیْک کہتاہے کہ دیکھنے سننے والا اس پر رَشک کرتا اور ایسی ہی موت کی آرزو کرنے لگتا ہے۔ آپ بھی تبلیغِ قراٰن و سنّت کی عالمگیر غیر سیاسی تحریک دعوتِ اسلامی کے مَدَنی ماحول سے وابستہ ہو جائیے۔



Total Pages: 11

Go To