Book Name:Fatawa Razawiyya jild 27

زیادتِ افادت

عرب صاحب کی خوبی تہذیب اور اس کے جواب میں حضرت عالمِ اہلسنت کا حلمِ عجیب ناظرین نے ملاحظہ فرمایا اب مستفیدانِ بارگاہِ سنّت کا ادب اجمل اور کریمہ۔" وَ اَعْرِضْ عَنِ الْجٰہِلِیۡنَ ﴿۱۹۹"[1]۔یہ کریمانہ عمل بنظرِ اعتبار مشاہدہ کیجئے۔مکرمنا مولوی محمد واعظ الدین صاحب اسلام آبادی قادری برکاتی سلمہ الہادی نے اگرچہ عرب صاحب کے خطِ سوم میں کلماتِ جہل و اشتلم ملاحظہ فرما کر آیہ کریمہ " وَاغْلُظْ عَلَیۡہِمْ ؕ"[2] پر عمل چاہا مگر اثر تادیب و کمال تہذیب کہ عرب صاحب کو معذور ہی رکھا اور ان کی نسبت کلام خوبی و اکرام ہی لکھا سارا قصور نفس امارہ پر طویلے کی بلا بندر کے سر۔

نامی نامہ مولانا واعظ الدین صاحب بجواب ہماں خط سوم عرب صاحب

بسم اﷲ الرحمن الرحیم

نحمدہ ونصلی علی رسولہ الکریم،

الی جناب الفاصل الوسیع المناقب السنیع المناصب المولوی طیبّ صاحب دامت عنایتھم

امّا بعد فاتت الیوم کریمتکم المسطورۃ ونمیقتکم الغیر المسطورۃ ضحی تاسع ذی القعدۃ یوم الاربعاء فوجدنا ھا علٰی خلاف ماھو الما مول من العلماء وایضًا علٰی خلاف ما عہد منکم فی اختیہا السالفتین فعلمنا انہا لیست من قبل قلبکم بل رشحۃ من النفس الامارۃ بالشین اذلیس فیہا

بسم اﷲ الرحمن الرحیم ط

نحمدہ ونصلی علی رسولہ الکریم ط

بجناب فاضلِ فراخ مناقب نیکی مناصب مولوی طیب صاحب دام عنایتہم۔

بعد حمد و صلوۃ واضح ہو آج نہم ذی القعدہ روز چار شنبہ وقت چاشت آپ کی گرامی کتابت اور بے پردہ عــــــہ تحریر آئی ہم نے اس رنگ کے خلاف پائی جس کی علماء سے توقع تھی نیز اس طرز کے مخالف آئی جو اس کی دو اگلی بہنوں میں آپ کی طرف سے معرو ف رہے تو ہم نے جانا کہ وہ آپ کے قلب کی طرف سے نہیں بلکہ نفس امارہ کے چھینٹوں سے جو بکثرت عیب کی طرف داعی ہے اس لیے  

 

عــــــہ:بے پردہ دووجہ سے،ایك تو کارڈ پرتھی دوسرے برہنہ گوئی ۱۲مترجم


 

 



[1] القرآن الکریم ۷/ ۱۹۹

[2] القرآن الکریم ۹ /۷۳



Total Pages: 682

Go To