Book Name:Fatawa Razawiyya jild 27

 

 

 

رسالہ

الفضل الموھبی فی معنی اذا صح الحدیث فھو مذہبی

(فضل(الہٰی)کا عطیّہ(امام ابوحنیفہ علیہ الرحمہ کے اس قول کے)

معنی میں کہ جب کوئی حدیث صحت کو پہنچے تو وہی میرا مذہب ہے)

ملقّب بلقب تاریخی

اعزّالنّکات بجواب سوال ارکات ۱۳۱۳ھ

 

مسئلہ۱۶:                  از گڑامپور علاقہ نارتھ ارکاٹ مرسلہ کاکا محمد عمر                              ۱۳ رجب ۱۳۱۳ھ

کیا فرماتے ہیں علمائے دین و مفتیانِ شرع متین اس امر میں کہ کوئی حنفی المذہب حدیث صحیح غیر منسوخ وغیر متروك جس پر کوئی ایك امام آئمۃ اربعہ وغیرہم سے عمل کیا ہو۔جیسے آمین بالجہر اور رفع یدین قبل الرکوع و بعدالرکوع اور وتر تین رکعتیں ساتھ ایك قعدہ اور ایك سلام کے ادا کرے تو مذہب حنفی سے خارج ہوجاتا ہے یا حنفی ہی رہتا ہے۔اگر خارج ہوجاتا ہے کہیں تو رد المحتار میں جو حنفیہ کی معتبر کتاب ہے اس میں امام ابن الشحنہ سے نقل کیا۔


 

 



Total Pages: 682

Go To