Book Name:Fatawa Razawiyya jild 19

 

 

 

 

 

 

 

کتاب المضاربۃ

(مضاربت کا بیان)

 

مسئلہ ۱۹:                                 از میران پور کٹرہ ضلع شاہجہان پور مسئولہ محمد صدیق بیگ صاحب                  ۲۵ محرم الحرام ۱۳۳۹ھ

کیا فرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ کسی اہل ہنود کو روپیہ تجارت کے لئے دیا جائے او ر اس طرح پر کہ وہ کہے کہ جو نفع ہو اس میں سے نصف نصف تقسیم کرلیں گے۔اکثر اس طریقہ سے روپیہ دیا بھی تھا۔

الجواب:

یہ طریقہ مضاربت کا ہے۔مسلمان کے ساتھ بھی جائز ہے۔مگر اس پر نقصان کی شرط حرام ہے۔اور ہندو کے ساتھ شرط نقصان بھی کرلینا جائز۔

لانہ من عقد فاسد وھم لیسوابا ھل ذمۃ ولا مستامنین۔واﷲ تعالٰی اعلم۔

کیونکہ یہ عقد فاسد ہے اور یہ ہند و نہ تو ذمی ہیں او رنہ ہی مستامن ہیں۔والله تعالٰی اعلم۔(ت)

مسئلہ ۲۰:                ا زموضع مخدوم پور دیہہ ڈاکخانہ مخدوم پور گیا ضلع گیا مرسلہ سید مخدوم بخش صاحب حنفی                 ۲۹ شوال ۱۳۱۵ھ

کیا فرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ ایك شخص تجارت کرتاہے دوسرے لوگو ں کے روپے سے اس طریقہ پر کہ ہر سال بعد تمام اخراجات کے جو نفع ہوتا ہے اس میں سے ایك رُبع خود اجرت محنت


 

 



Total Pages: 692

Go To