Book Name:Fatawa Razawiyya jild 17

 

 

 

 

باب البیع السلم

(بیع سلم کا بیان)

 

مسئلہ ۲۲۳:از فیروز پور ۲۹جمادی الآخرہ۱۳۰۶ھ

کیا فرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ کٹوتی کا روپیہ پیشگی دے دیا اور ناج فصل پرلینا ٹھہرا کن کن شرطوں سے جائز ہے۔ بینوا توجروا

الجواب:

اسے بیع سلم کہتے ہیں،یہ بارہ شرطوں سے جائز ہوتی ہے اگر ان میں سے ایك بھی کم ہوگی تو بالکل ناجائز اور سود ہوجائے گی:

(۱)اس شیئ کی جنس بیان کردی جائے مثلا گیہوں یا چاول یا گھی یاتیل،اگر ایك عام بات کہی مثلا غلہ میں لیں گے تو ناجائز ہے۔

(۲)وہ جنس اگر کئی قسم کی ہوتی ہے تو اس کی قسم معین کردی جائے جیسے چاول میں باسمتی ہنس راج،اگر نرے چاول کہے بیع صحیح نہ ہوگی۔

(۳)اس کی صفت بیان کردی جائے مثلا عمدہ یاناقص جیسے چنوں میں فردیا کسیلے

(۴)اس کی مقدار معین کردی جائے مثلا اتنے من،اوریہ بات بھاؤ کاٹ دینے سے بھی حاصل ہوجاتی ہے یعنی فی روپیہ اتنے سیر کہ روپوں کی گنتی معلوم ہونے سے کل مقدار خود معلوم ہوجائیگی۔


 

 



Total Pages: 715

Go To