We have moved all non-book items like Speeches, Madani Pearls, Pamphlets, Catalogs etc. in "Pamphlet Library"

Book Name:Fatawa Razawiyya jild 17

 

 

 

 

باب المرابحۃ

(بیع مرابحہ کا بیان)

 

 

مسئلہ ۱۰۳:                      ۱۰ جمادی الاولٰی ۱۳۱۹ھ

زید نے عمرو سے کہا کہ تم عہ/ روپیہ کا مال اپنے روپے سے خرید لو بعد خریدنے تمھارے کے میں تم سے عہ اِ ایك روپیہ آنہ دے کر خرید لوں گا اور ایك ماہ میں دوں لگا کیونکہ میرے پاس روپیہ نہیں تو اس صورت میں نفع جائز ہے یانہیں ؟ بینوا توجروا

الجواب:

جائزہے مگر یہ ثمن کی زیادتی اگر معمولی نرخ سے اس بناء پر بڑھائی گئی کہ زید قرض خریدتاہے تو بہتر نہیں

لما فیہ من الاعراض عن مبرۃ الاقراض کما افادہ فی الفتح وردالمحتار وغیرھما من الاسفار،واﷲ تعالٰی اعلم۔

کیونکہ اس میں قرض دینے کی نیکی اور مروت سے اعراض ہے جیسا کہ اس کا فائدہ فتح اور ردالمحتاروغیرہ کتابوں نے دیا ہے۔والله تعالٰی اعلم۔(ت)

مسئلہ ۱۰۴:                              از کاٹھیا وارر دھوراجی محلہ سیاہی گراں مسئولہ حاجی عیسٰی خاں محمد صاحب       ۸ جمادی الاولٰی ۱۳۳۰ھ

نوٹ کی بیع مرابحہ یعنی نوٹ بیچا اور کہا کہ فی روپیہ ایك آنہ لکھی ہوئی رقم سے زیادہ لوں گاجائز ہے یانہیں ؟


 

 



Total Pages: 715

Go To