Book Name:Fatawa Razawiyya jild 13

 

 

 

 

بابُ الحداد
(سوگ کا بیان)

 

مسئلہ٩٢:                        مسئولہ محمد عنایت اﷲ                               ٦ربیع الاول شریف ١٣٠٨ھ

حضرت مولوی تسلیم عرض،وہ لڑکی کہ بیوہ ہوگئی ہے میں اسے شاہجہان پور لے جانا چاہتا ہوں اس میں کیا حکم ہے ؟ اور ایامِ عدتِ وفات میں عورت بضرورت بھی دوسرے مکان یا دوسری جگہ جاسکتی ہے یانہیں؟والسلام محمد عنایت اﷲ 

الجواب:

تاختمِ عدت عورت پر اسی مکان میں رہنا واجب ہے،شاہجہان پور خواہ کسی جگہ لے جاناجائز نہیں،ہاں جس کے پاس کھانے پہننے کو نہیں اور ان چیزوں کی تحصیل میں باہر نکلنے کی ضرورت ہے کہ بغیر اس کے خوردونوش کا سامان گھر میں بیٹھے نہیں کرسکتی تو وہ صبح و شام باہر نکلے اور شب اسی مکان میں بسر کرے دوسرے مکان میں چلے جانا ہر گز جائزنہیں،مگر یہ مکان اس کا نہ تھا مالکانِ مکان نے جبرًا نکال دیا،یا کرایہ پر رہتی تھی اب کرایہ دینے کی طاقت نہیں یا مکان گرپڑایا گرنے کو ہے یا اور کسی طرح اپنی جان یا مال کا اندیشہ ہے غرض اسی طرح کی ضرور تیں ہوں تو وہاں سے نکل کر جو مکان اس کے مکان سے قریب تر ہو اس میں چلی جائے ورنہ ہرگز نہیں درمختار میں ہے:


 

 



Total Pages: 688

Go To