Book Name:Fatawa Razawiyya jild 13

 

 

 

 

مفصل فہرست

باب تعلیق الطلاق

١٠١

محض طلاق کی قسم سے طلاق واقع نہیں ہوتی بلکہ وقوع شرط کے بعد واقع ہوتی ہے۔

١٠٢

خالد سے زمینداری کا کام کراؤں تو میری عورت کو طلاق،طلاق معلق ہوگئی۔

١٠١

طلاق کی قسم کھائی تو اب نکاح قائم رہنے کی صورت یہ ہے کہ شرط واقع نہ ہو یا اگر ایك یا دو طلاق رجعی کی قسم کھائی ہے تو بعد وقوع شرط رجوع کرے۔

١٠٢

ائمہ دین کا اجماع ہے کہ جب طلاق کسی شرط پر مشروط کی جائے تو اس شرط کے وقوع سے واقع ہوجائے گی۔

١٠١

نکاح سے قبل کہا"اگر زوجہ ہندہ کی اجازت کے بغیر نکاح ثانی کروں تو زوجہ ثانی کو تین طلاق"تعلیق صحیح ہوگئی۔

١٠٣

آیہ کریمہ الطلاق مرتٰن میں طلاق دونوں قسموں یعنی منجز ومعلق کو شامل ہے۔ 

١٠٢

صورت مذکورہ بالامیں اگر ہندہ سے نکاح سے قبل کوئی اور عقد کرے اس پر یہ شرط اثر انداز نہ ہوگی۔

١٠٤

تعلیق کو اصطلاحات شرع میں یمین اور حلف کہا گیا ہے۔

١٠٢

ہندہ کی موت کے بعد کسی سے عقد کرے یہ شرط اس پر بھی اثر انداز ہوگی۔

١٠٤

تحریم حلال یمین ہے۔

١٠٢

میّت صالح اذن نہیں۔

١٠٤

طلاق کی قسم کھانے پر کفارہ نہیں بلکہ کفارہ الله عزوجل کی قسم میں ہے۔

١٠٢

طرفین کے نزدیك بقائے یمین کے لئے امکان بر شرط ہے جیسا کہ انعقاد یمین کے لئے شرط ہے۔ 

١٠٤


 

 



Total Pages: 688

Go To