Book Name:Fatawa Razawiyya jild 10

مسئلہ ٢٣١ :            از موضع درؤ ضلع نینی تال مسئولہ عبد الجلیل خاں          ١٣ صفر المظفر١٣٣٤ھ

کیا فرماتے ہیں علمائے دین ومفتیانِ شرع متین اس مسئلہ میں کہ زید نے طعام سحری ساڑھے چار بجے سے پانچ بجے تك کھانا باہر صحنِ مکان میں نکلنے سے کچھ سفیدی شرق میں آسمان پر معلوم ہوئی اور اذانِ صبح بھی ہوگئی چونکہ تین روزے ہوچکے تھے روزہ رکھ لیا گیا دن میں کچھ اشخاص نے کہا یہ روزہ نہیں ہوا اس واسطے ایك بجے دن کو توڑ ڈالا، پس اندریں صورت ایك روزہ قضا واجب ہوا یا ساٹھ؟ دیگر یہ کہ ماہ صیام میں جو روزے قضا ہوگئے ہوں اور وُہ قضا بھی ادانہ ہُوئے تو بقول بعض بالعوض ایك قضاکے کیا ساٹھ کا حکم ہے یا ہر وقت میں ایك ہی رکھنا ہوگا؟ بینوا توجروا

الجواب:

اس رمضان شریف میں پانچ بجے تك کسی طرح وقت نہ تھا جبکہ پانچ بجے تك سحری کھائی تور وزہ بلاشبہ ہواہی نہیں کہ توڑنا صادق آئے قضا لازم ہے اور کفارہ نہیں، ہاں رمضان مبارك میں اگر کسی وجہ سے روزہ نہ ہوتو غیر معذور شرعی کو دن بھر روزہ کی طرح رہنا واجب اور کھانا پینا حرام، ایك بجے کھانا کھالیا یہ دوسرا گناہ ہوا، تو بہ فرض ہے واﷲتعالٰی اعلم ایك روزہ کی قضا ایك ہی ہے ساٹھ کا حکم کفارہ میں ہے کہ کسی نے بلاعذر شرعی رمضان المبارك کا ادا روزہ جس کی نیت رات سے کی تھی بالقصد کسی غذا یا دوا یا نفع رساں شئی سے توڑ ڈالا اور شام تك کوئی ایسا عارضہ لاحق نہ ہوا جس کے باعث شرعًا آج روزہ رکھنا ضرورت نہ ہوتا تو اُس جُرم کے جرمانہ میں ساٹھ روزے پے درپے رکھنے ہوتے ہیں ویسے جو روزہ نہ رکھا ہو اس کی قضا صرف ایك روزہ ہے واﷲتعالٰی اعلم۔

مسئلہ ٢٣٢:            ازگونڈل علاقہ کاٹھیاواڑ مسئولہ عبدالستار بن محمد اسمٰعیل                                ١٤رجب ١٣٣٤ھ

ماہ رمضان المبارك میں ایك شخص نے قبل صبح صادق سحری کا کھانا کھا کر روزے کی نیت کرکے کھانا پینا بند کیا، بعد اس کے اپنی منکوحہ سے خوش طبعی کرتے ہوئے بلاجماع منزّل ہوا اور یہ امر قبل صبح صادق یا بعد صبح صادق ہوا اب اس کا روزہ رہا یا قضا کرے یا کفارہ دے؟ اور عورت کے لیے کیا حکم ہے؟

الجواب:

عورت کے لئے کچھ حکم نہیں اور مرد پر بھی کفارہ نہیں، اور اگر انزال قبل صادق ہُوا تو قضا بھی نہیں، اور بعد صبح صادق ہوا اور اس وقت مس وغیرہ نہیں کررہا تھا اُس کے بعد مجردبقائے تصور سے واقع ہُوا جب بھی قضا نہیں، ورنہ اس روزہ کو پُورا کرے اور ایك روزہ اس کے عوض رکھے۔واﷲتعالٰی اعلم۔


 

 



Total Pages: 836

Go To