Book Name:Fatawa Razawiyya jild 10

فتح القدیر میں ہے:

لافی سرقۃ المصحف وقال الشافعی یقطع وھو روایۃ عن ابی یوسف لانہ مال محرز یباع ویشتری ولان ورقہ مال وبماکتب فیہ از دادبہ ولم ینتقص وجہ الظاھران المالیۃ للتبع وھی الاوراق المتبوع وھوالمکتوب[1]۔

مصحف کی چوری میں قطع ید نہیں اور امام شافعی نے کہا قطع ید ہے۔ امام ابویوسف سے بھی ایك روایت یہی ہے کیونکہ یہ مال محفوظ ہے، بیچا اور خریدا جاتا ہے، اور اس لیے  بھی کہ اس کے اوراق مال ہیں اور جو کچھ اس میں تحریر ہے اس سے مالیت میں اضافہ ہوگا نہ کہ کمی۔ظاہر مذہب کی دلیل یہ ہے ہے کہ مالیت تابع یعنی اوراق کی ہیں نہ کہ متبوع کی جو کہ مکتوب ہے(ت)

اسی طرح کافی شرح وافی وتبیین الحقائق و بحرالرائق و ردالمحتار وغیرہا معتمدات اسفار میں ہے۔ بالجملہ مصحف میں جو چیز بے بہا ہے یعنی قرآن وُہ مال نہیں کہ کفارہ بن سکے، اور جومال ہے یعنی کاغذ وجلد، وُہ بے بہا نہیں کہ عمر بھر کی نمازروزوں کا بدلہ ہوسکے، کاغذ کے اعتبار سے مال ٹھہر ا نا اور مکتوب کے لحاظ سے بیحد قیمت سمجھ کر میت کی تمام عمر بلکہ ہفت پشت کا کفارہ کرنا ایسا ہے جیسے زید پر کسی کے لاکھ روپے آتے ہوں وہ اس کے بدلے ایك روپے کا مصحف شریف بلکہ ایك آنے کا کوئی پارہ دے کر ادا ہوجانا چاہئے کہ یہ لاکھوں کروڑوں روپے کاہے بے بہا ہے یُوں تو ایك آیت بلکہ ناخن برابر کاغذ پر ایك اسم اﷲ لکھ کردے دیجئے اور کروڑوں روپے کا قرضہ اتار دیجئے کہ دُنیا ومافیہا ایك اسمِ جلالت کی قیمت نہیں ہوسکتی جیسے بندوں کے دین میں یہ حیلہ پیش نہیں کیا جاتا ویسے ہی رب العزّت عزّجلالہ کے دین میں۔ حدیث میں ارشاد ہُوا:فدین اﷲاحق ان یقضی[2] (اﷲتعالٰی کا دین زیادہ حق رکھتا ہے کہ اسے پورا کیا جائے۔ت)

دوسرا طریقہ: یہ کہ میّت پر جس قدر نماز روزے وغیرہا قضاہوں سب کا حساب لگائیں اور اس کا کفارہ معین کریں کہ مثلًا ہزار من گندم ہوئے مصحف شریف اُتنے گیہوں یا اُن کی قیمت کے عوض مسکین کے ہاتھ بیع  کریں وُہ قبول کرلے مصحف تو اس نے پایا اور اس پر ہزار من گندم یا مثلًا تین ہزار روپے ثمن مصحف کے دین ہوگئے، اب اس سے کہیں کہ اتنے گیہوں یا روپے جو ہمارے تجھ پر واجب الادا ہیں وہ ہم نے فلاں میّت کے کفارہ میں تجھے دئے، فقیر کہے میں نے قبول کئے۔ یہ حیلہ قرآن عظیم کے ساتھ خاص نہیں بلکہ ہر کتاب یا کپڑے یا


 

 



[1] فتح القدیر         باب مایقطع فیہ ومالا یقطع         المکتبۃ العربیۃ کراچی۵/۱۳۲

[2] صحیح بخاری         باب من مات وعلیہ صوم         قدیمی کتب خانہ کراچی۱/۲۶۲



Total Pages: 836

Go To