Book Name:Fatawa Razawiyya jild 8

 

 

بسم اﷲ الرحمن الرحیم

 

 

با ب احکام المسجد
احکام مسجد کا بیان

مسئلہ ۱۱۱۵:                              ازلکھنو محلہ علی گنج مرسلہ حا فظ عبد اﷲ                      ٥ذی الحجہ ١٣٠٦ھ

کیا فر ماتے ہیں علما ئے دین جواب اس مسئلہ کا کہہ سقفِ مسجد پر بسبب گرمی کے نما ز پڑھنا جا ئز ہے یا نہیں۔ بینوا توجروا۔
   الجواب:

 مکروہ ہے کہ مسجد کی بے ادبی ہے، ہا ں اگر مسجد جماعت پر تنگی کرے نیچے جگہ نہ رہے تو باقی ماند ہ لوگ چھت پر صف بندی کر لیں یہ بلا کر اہت جائز ہے کہ اس میں ضرورت ہے بشرطیکہ حال اما م مشتبہ نہ ہو۔

فی العلمگیریۃ الصعود علی کل مسجد مکروہ ولھذا اذا اشتد الحریکرہ ان یصلوا بالجماعۃ فوقہ الااذاضاق المسجد فحٍ لایکرہ الصعود علی سطحہ لضرورۃ کذا فی الغرائب[1] واﷲ تعالٰی اعلم۔

عالمگیری میں ہے ہر مسجد کے اوپر چڑھنا مکروہ ہے ، یہی وجہ ہے کہ شدید گرمی کے وقت اس کے اوپر جماعت کرانا مکروہ ہے البتہ اس صورت میں کہ مسجد نمازیوں پر تنگ ہو جا ئے تو ضرورت کی وجہ سے مسجد کی چھت پر چڑھنا مکروہ نہیں ۔ جیسا کہ غرائب میں ہے۔ واﷲ تعالٰی اعلم (ت)

 


 

 



[1] فتاوٰی ہندیۃ الباب الخامس فی آداب المسجد مطبوعہ نورانی کتب خا نہ پشاور ٢/۳۲۲



Total Pages: 673

Go To