Book Name:Fatawa Razawiyya jild 8

 

 

 

 

سرور العید السعید فی حل الدعاء بعد صلٰوۃ العید ١٣٣٩ھ
(نمازِ عید کے بعد ہاتھ اٹھا کر دُعاء مانگنے کا ثبوت)

بسم اﷲ الرحمن الرحیم

مسئلہ نمبر ١٤١٣: کیا فرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ مولوی عبدالحَی صاحب لکھنوی نے اپنے فتاوٰی کی جلد ثانی میں یہ امر تحریر فرمایا کہ بعد دوگانہ عیدین یا بعد خطبہ عیدین دُعا مانگناحضور سرور عالم صلی اﷲ تعالٰی علیہ وسلم و صحابہ وتابعین رضوان اﷲ تعالٰی علیہم اجمعین سے کسی طرح ثابت نہیں اب وہابیہ نے اس پر بڑا غل شور کیا ہے دعائے مذکور کو ناجائز کہتے اور مسلمانوں کواس سے منع کرتے اور تحریر مذکور سے سند لاتے ہیں کہ مولوی عبدالَحی صاحب فتوٰی دے گئے ہیں اُن کی ممانعتوں نے یہاں تك اثر ڈالا کہ لوگوں نے بعد فرائض پنجگانہ بھی دعا چھوڑ دی اس بارے میں حق کیا ہے؟بینو توجروا۔

الجواب:

بسم اﷲ الرحمٰن الرحیم۵ الحمدﷲ الذی حبّبنا العید وجعلہ مقر با لکل بعید و امرنا بالدعاء فی الیوم السعید ووعدنا بالاجابۃ فی الکلام الحمید والصلٰوۃ والسلام علی من وجہہ عید ولقاؤہ عید ومولدہ عید وای عیدوعلٰی اٰلہ الکرام وصحبہ

اﷲ کے نام سے شروع جو رحمٰن ورحیم ہے سب تعریف اﷲ تعالٰی کے لئے جس نے ہمارے لئے عید کو محبوب بنایا اور اسے ہربعید کوقریب کرنیوالا بنایا، یومِ سعید میں دعاکا حکم دیا، کلامِ حمید میں قبولیت کا وعدہ فرمایا ،اور صلوۃ وسلام ہواس ذاتِ اقدس پر جس کا چہرہ عید، دیدار عید، میلاد عید، آپ کی آل محترم اورصحابہ عظام

 


 

 



Total Pages: 673

Go To