Book Name:Jame Ul Ahadees Jild 1

۵۔        پارہ      ۲۲      ع        ۲          الاحزاب

۶۔       پارہ       ۲۱       ع         ۱۸        الاحزاب

امت مسلمہ کو آپکی اتباع اور پیروی کا حکم ہے جس سے اعراض دنیا وآخرت کا خسران مبین ہے ،اور آپکی اطاعت وفرمانبرداری ہدایت ونجات کااہم ذریعہ اور صلاح وفلاح کی ضامن ہے ۔

       قرآن حکیم میں باربار اس کا حکم آیا اور باری تعالیٰ نے اپنا منشاومراد یوں ظاہر فرمایا۔

       فآمنوا باللہ ورسولہ النبی الامی الذی یؤمن باللہ وکلماتہ واتبعوہ لعلکم تہتدون (۷)

        توایمان لاؤ اللہ اوراسکے رسول بے پڑھے غیب بتانے والے پر کہ اللہ اور اسکی باتوں پر ایمان لاتے ہیں ،اور انکی غلامی کرو کہ تم راہ پاؤ ۔

        قل ان کنتم تحبون اللہ فاتبعونی یحببکم اللہ ویغفرلکم ذنوبکم واللہ غفور رحیم۔ (۸)

       اے محبوب ! تم فرمادوکہ لوگو!اگر تم اللہ کو دوست رکھتے ہو تو میرے فرمانبردار ہوجاؤ ، اللہ تمہیں دوست رکھے گا اور تمہارے گناہ بخشدے گا ،اور اللہ تعالیٰ بخشنے والا مہربان ہے ۔

        وماآتکم الرسول فخذوہ ومانہاکم عنہ فانتہوا ،واتقعواللہ ان اللہ شدید العقاب۔(۹)

       اور جو کچھ تمہیں رسول عطافرمائیں وہ لو ،اور جس سے منع فرمائیں باز رہو ، اور اللہ سے ڈرو، بیشک اللہ کا عذاب سخت ہے ۔

       قل اطیعوا اللہ والرسول فان تولوفان اللہ لایحب الکافرین ۔(۱۰)

       تم فرمادو کہ حکم مانو اللہ اور رسول کا ، پھر اگر وہ منہ پھیریں تو اللہ کو خوش نہیں آتے کافر۔

       ان تمام آیات کی روشنی میں یہ بات واضح ہوگئی کہ اللہ تعالیٰ نے اپنے رسول کو امت کا پیشوا بنایا ،انکی پیروی کا حکم دیا ،نمونۂ تقلید بناکر بھیجا اور تشریعی اختیارات عطافرمائے ،آپ نے

اللہ تعالیٰ کے عطاکردہ مناصب کو بروئے کار لاکر بے شمار چیزوں کا حکم بھی دیا اور ان گنت

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

۷۔      پارہ        ۸       ع        ۱۰        الاعراف

۸۔       پارہ       ۳        ع        ۱۲        آل عمران

۹۔       پارہ      ۲۸      ع         ۴         الحشر،

۱۰ ۔    پارہ      ۳        ع          ۱۲       آل عمران

 

 

 



Total Pages: 604

Go To