$header_html

Book Name:Jame Ul Ahadees Jild 1

مستفیض بھی کہتے ہیں۔

       بعض کے نزدیک  عموم  خصوص کی نسبت ہے کہ مستفیض خاص ہے،  یعنی  جسکے رواۃ ہر زمانہ میں یکساں ہوں بر خلاف مشہور، بعض  نے اسکے بر عکس کہا ہے۔

 مشہور فقہاء و اصولیین :۔ مشہور کی   غیر اصطلاحی تعبیر  یوں بھی   منقول ہے کہ وہ حدیث کہ

عہد صحابہ میں ناقل  تین سے کم رہے مگر بعد  میں  اضافہ ہو گیا اور  تلقی امت با لقبول سے ممتاز ہو  گئی ، گویا انکے نزدیک  متواتر اور خبر واحد کے درمیان برزخ ہے۔

 مشہور عرفی :۔ جو حدیث عوام و خواص میں مشہور ہوئی  خواہ شرائط شہرت ہوںیا نہ ہوں۔

       یہ محدثین، فقہاء  اصولیین  اور عوام کے اعتبار سے مختلف ہوتی ہے۔ 

 مثال  نزد محدثین  :۔ قنت رسول اللہ صلی اللہ تعالیٰ علیہ وسلم  شہرا بعد

الرکوع یدعو  علی رعل وذکوان۔ (۱۷)

 مثال  نزد فقہائ:۔ من سئل  عن علم فکتمہ الجم بلجام من نار۔ (۱۸)

 مثال  نزد اصولیین رفع عن امتی  الخطاء و النسیان۔( ۱۹)

 مثال نزد عوام:۔   اختلاف امتی رحمۃ۔  (۲۰)

                     العجلۃ من الشیطان۔  (۲۱)

                     لیس الخبر کالمعا نیۃ۔  (۲۲)

 حکم:۔ مشہور کے مراتب مختلف ہیں ، مشہور اصطلاحی  اگر صحیح ہے تو اسکو بعد کی تمام اقسام پر ترجیح

حاصل ہوگی ۔( ۲۳)

 تصانیف   فن

        اس نوع کی احادیث میں مندرجہ ذیل  کتب مشہور ہیں :۔

۱۔      التدکرۃ فی الاحادیث المشہرۃ للزرکشی،             م ۷۹۴ھ

 



Total Pages: 604

Go To
$footer_html