$header_html

Book Name:Jame Ul Ahadees Jild 1

خوف خدا:۔ امام ترمذی زہدوورع اور خوف خدا میں ضرب المثل تھے ، خشیت الہی کے غلبہ

سے اتنا روتے تھے کہ آخر میں آپ کی بینائی بھی جاتی رہی تھی ۔

        ۱۳؍رجب ۲۷۹ھ مقام ترمذ میں شب دوشنبہ آپ کا وصال ہوااور وہیں مدفون

ہوئے ۔  ستر سال کی عمر پائی ۔سنہ وفات اور مدت عمر اس شعر سے ظاہر ہے ۔

               الترمذی محمد ذوزین     ٭    عطر وفاتہ عمرہ        فی عین

                                                         ۲۷۹                                  ۷۰

 تصانیف ۔ آپکی تصانیف مندرجہ ذیل ہیں ۔

        جامع ترمذی ،کتاب العلل ،کتاب التاریخ ،کتاب الزھد ،کتاب الاسماء والکنی ،کتاب

الشمائل النبویہ ۔

 جامع ترمذی

       آپ کی تصانیف میں خاص شہرت جامع ترمذی کو حاصل ہے ، اور یہ اپنی جودت ترتیب اور افادیت وجامعیت کے اعتبار سے صحیحین کے بعد شمار کی جاتی ہے ۔

       اسکے نام میں اختلا ف ہے ،بعض حضرات اسکو سنن ترمذی کے نام سے موسوم کرتے ہیں ، لیکن مشہور جامع ترمذی ہے کہ اسکی جامعیت کے پیش نظر اسکو اصطلاحاً جامع کہنا بالکل درست ہے ۔

 خصائص ۔جامع ترمذی میں آپ نے مندرجہ ذیل اسلوب اختیار فرمائے ہیں ۔

۱۔    حدیث ذکر کرکے ائمہ مذاہب کے اقوال اور ان کا اختلاف بیان کرتے ہیں ۔

 ۲۔    یہ التزام رہاہے کہ وہ حدیث بیان کی جائے جو کسی امام کا مذہب ہے ۔

 ۳۔   جب حدیث چند صحابہ سے مروی ہوتو مشہور راوی سے روایت کرتے ہیں اور باقی کو

وفی الباب عن فلان الخ ، سے بیان کرتے ہیں ۔

 ۴۔    راوی کی روایت کے بعد ’وفی الباب الخ ‘ میں بھی ان کا نام لیں تو ان سے اسی معنی کی

دوسری روایت مراد ہوتی ہے ۔

 



Total Pages: 604

Go To
$footer_html