Book Name:Jame Ul Ahadees Jild 1

بعینہ ان الفاظ کا ہونا ضروری نہیں۔

۷۔        بعض مقامات پر روایت با لمعنی بھی کر تے ہیں اور اسکا حق بلا شبہ آپ کو حاصل تھا۔

۸۔       مکر احادیث کو حذف کر دیا گیا ہے پھر بھی بعض مقامات پر مختلف ابواب کے تحت کچھ احادیث آگئی ہیں ۔

           ایسی احادیث کی تعداد نہایت قلیل ہے ، اگر تمام احادیث مکررہ کو لکھا جاتا اور ہر راوی سے علیحدہ روایت لی جاتی، یا اختلاف الفاظ سے حدیث علیحدہ شمار کی جاتی تو ایک اندازے کے مطابق احادیث کی تعداد دس ہزار سے کم نہ ہوتی ۔

۹۔      کثیر احادیث وہ ہیں جن کے متون نقل کرنے کی اعلی حضرت کو ضرورت پیش نہ آئی، ہم نے جدو جہد کر کے ایسی تمام احادیث کے متون نقل کئے ہیں اور پھر ترجمہ اسکے ساتھ لکھ دیا  ہے۔ بعض جگہ متن کے مقابل جزوی طور پر ترجمہ کا اختلاف نظر آئے تو اس کو اسی طرز پر محمول  کریں، نسخوں اور طرق کے تعدد سے معمولی رد و بدل ہوتی رہتی ہے جیسا کہ مشاہدہ ہے۔

          پوری کتاب میں صرف ایک حدیث ایسی ہے جسکا متن مجھے نہیں مل سکا اسکے لئے بیاض چھوڑ دی گئی ہے کہ اگر کسی صاحب کو وہ متن مل جائے تو اپنے نسخہ میں تحریر کر لیں  اور ہمیں  مطلع فرمائیں، ہم شکریہ کے ساتھ آئندہ ایڈیشن میں شائع کر دیں گے۔

۱۰۔      بعض جگہوں پر امام احمد رضا بریلوی نے موقع کے مناسبت سے حدیث کا صرف ایک جملہ نقل کر دیا  تھا ،ہم نے ایسی احادیث اکثر مقامات پر پوری لکھی ہیں تاکہ ہمارے قائم کردہ عنوان پر مکمل روشنی  پڑ جائے،  اور قارئین کو دیگر ضروری معلومات بھی فراہم ہو جائیں۔

۱۱۔    بعض جگہ ایسا بھی ہے کہ حدیث نقل فرما کربقیہ کی طرف مطالعہ کی دعوت دیتے ہیں ، نیز   کبھی اس طرز کی دوسری احادیث کی طرف رغبت دلا تے،  لہذا ایسی احادیث بھی نقل کر دی گئی  ہیں۔

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 



Total Pages: 604

Go To