$header_html

Book Name:Jame Ul Ahadees Jild 1

  تد وین حدیث کیلئے محدثین نے  جانکاہ مصائب  بر داشت  کئے      

       دوسری طرف ایسی شخصیات کی بھی کمی نہ تھی جنہوں نے فقروفاقہ کی زندگی بسر کی ، جانفشانیاں کیں ، مصائب وآلام برداشت کئے لیکن اس انمول دولت کے حصول کیلئے ہرموقع پر  

خندہ پیشانی کا مظاہرہ کیا ۔

 امام ابوحاتم رازی

        آپ علل حدیث کے امام ہیں ،امام بخاری ، امام ابودائود ، امام نسائی اور امام ابن ماجہ کے شیوخ سے ہیں ۔طلب حدیث میں اس وقت سفر شروع کیا جب ابھی سبزہ کا آغاز نہیں ہوا

تھا ،  مدتوں سفر میں رہتے اورجب گھر آتے تو پھر سفر شروع کردیتے ۔ آپکے صاحبزادے بیان

کرتے ہیں ۔

       سمعت ابی یقول : اول سنۃ خرجت فی طلب الحدیث اقمت سنین احسب ،ومشیت علی قدمی زیادۃ علی الف فرسخ فلما زاد علی الف فرسخ

ترکتہ۔ (۹۹)

        میرے والد فرماتے تھے ،سب سے پہلی مرتبہ علم حدیث کے حصول میں نکلا توچند سال

سفرمیں رہا ،پیدل تین ہزار میل  سے زائدچلا ، جب زیادہ مسافت ہوئی تو میں نے شمارکرنا

چھوڑدیا ۔پیدل کتنی کتنی لمبی مسافتیں اس راہ میں آپ نے طے کیں اس کا اندازہ خود انکے بیان

سے کیجئے ۔

       خرجت  من البحرین الی مصر ماشیا الی الرملۃ ماشیا ، ثم الی طرطوس

ولی عشرون سنۃ۔ (۱۰۰)

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

۹۹۔     تہذیب التہذیب لا بن حجر،            ۵/۲۴

۱۰۰۔

          بحرین سے مصر پیدل گیا ،پھر رملہ سے طرطوس کا سفر پیدل ہی کیا اس وقت میری عمر

بیس سال تھی ۔

 



Total Pages: 604

Go To
$footer_html