$header_html

Book Name:Jame Ul Ahadees Jild 1

صفحات میں بیان کی ہیں،ان سے مستشرقین کے اس تاثرکی تردید ہوجاتی ہے کہ احادیث کی تدوین دوسری یاتیسری صدی ہجری میں ہوئی اوراس سے پہلے صرف زبانی طور پراحادیث کی روایت کارواج تھا ۔حقیقت یہ کہ تاریخ اسلام کے ابتدائی زمانہ میں گو احادیث کی حفاظت کیلئے زیادہ انحصار زبانی یاد کرنے اور ان فرامین رسول   صلی اللہ  تعالیٰ علیہ وسلم کو امت کی عملی زندگی میں نافذ کرنے پر تھا لیکن اسکے باوجود حفاظت حدیث کیلئے کتابت کے ذریعہ کو مسلمانوں  نے

تاریخ اسلام کے ہردور میں استعمال کیا ہے ۔

       ملت اسلامیہ چند غیر منظم لوگوں کے ہجوم کا نام نہ تھا بلکہ یہ تاریخ انسانی  کی  منظم ترین جماعت تھی ۔اس ملت کو اپنے الہامی پیغام پر صرف خود ہی عمل پیرا نہ ہونا تھا  بلکہ ساری نسل انسانی کو اس حیات بخش پیغام کی طرف بلانا ان کا ملی فریضہ تھا ۔ملت اسلامیہ نے ریاست کے داخلی مسائل کو بھی حل کرنا تھا اور خارجی اور بین الاقوامی مسائل سے بھی نبٹنا تھا ۔ اس ملت کا اپنا ایک علیحدہ آئین بھی تھا اور قانون بھی ۔ملت کے مقتدر حضرات کے سامنے قوم کے سیاسی معاشی اور دینی مسائل کو حل کرنے کا چیلج بھی تھا ۔ان کیلئے زندگی کے ان تمام شعبوں کے متعلق تفصیلی ہدایات احادیث پاک میں موجود تھیں ۔ملت  کی ان گوناگوں ذمہ داریوں کو سرسری نظر سے دیکھ کر ہی انسان اس نتیجہ پر پہونچ جاتا ہے کہ مسلمان احایث طیبہ کی حفاظت کیلئے کتابت کے ذریعہ کونظر  اندازکرنے کے متحمل نہیں ہوسکتے تھے ۔وہ قوم جس کے آئین کی ایک شق یہ ہو :۔

        ولاتسئموا ان تکتبوہ صغیرا اوکبیرا الی اجلہ۔

        ’’اور نہ اکتایا کرو اسے لکھنے سے خواہ (رقم قرضہ ) تھوڑی ہویا زیادہ ،اس کی

میعاد تک ‘‘

        اس ملت سے یہ توقع نہیں کی جاسکتی کہ وہ زبان رسالت سے حاصل ہونے والے علوم

ومعارف کی حفاظت کیلئے کتابت  کے ذریعہ کو نظر انداز کردے ۔

        جو دین آپس کے معمولی لین دین کو تحریر کرنے کا حکم دیتاہے ،یہ بات اس دین کے مزاج ہی کے  خلاف ہے کہ وہ ان ہدایات کو ریکارڈ کرنے پرتوجہ نہ دے جو قیامت تک ملت کی رہنمائی کیلئے ضروری ہیں ۔ یہ ہی وجہ ہے کہ ملت کے مزاج کے عین مطابق مسلمانوں نے کسی   دور میں کتابت حدیث کو نظر انداز نہیں کیا ، البتہ  ابتدائی زمانہ میں انکا زیادہ انحصار حفظ پر تھا ۔ جولوگ احادیث طیبہ کے  مجموعے تیار کرتے تھے وہ بھی انکو حفظ کرنے کی کوشش



Total Pages: 604

Go To
$footer_html