$header_html

Book Name:Jame Ul Ahadees Jild 1

       خودفر ماتے ہیں :۔

        ہذہ  الصادقۃ فیہا ماسمعتہ من رسول اللہ صلی اللہ تعالیٰ علیہ وسلم ولیس بینی وبینہ فیہااحد ۔  ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

۶۳۔    السنن للدارمی،     ۶۷      ٭         جامع  بیان العلم لا بن عبد البر،           ۴۰

۶۴۔     السنۃ قبل التدوین،  ۳۲۰

       یہ صحیفہ صادقہ ہے ، اس میں وہ احادیث درج ہیں جو میں نے خود حضور   صلی اللہ  تعالیٰ علیہ وسلم سے سنی ہیں ، اسکی روایت کیلئے میرے اورحضور کے درمیان کوئی واسطہ نہیں ۔

        آپ کو یہ صحیفہ بہت عزیز تھا ،فرماتے تھے ۔

        مایرغبنی فی الحیوۃ الاالصادقۃ والوہط ۔

        زندگی میں میری دلچسپی جن چیزوں سے ہے ان میں ایک یہ صحیفہ ہے اور دوسری ’’وھط‘‘ نامی میری زمین ہے ۔

        حفاظت کیلئے آپ اس صحیفے کو ایک صندوق میں بند رکھتے تھے ۔ آپ کے بعد آپ کے اہل خانہ نے بھی اس صحیفے کی حفاظت کی ۔اغلب یہ ہے کہ آپ کے پوتے حضرت عمرو بن  شعیب اس صحیفے سے روایت کرتے تھے ۔ گو حضرت عمرو بن  شعیب سے ساراصحیفہ مروی نہیں لیکن امام احمد بن حنبل نے اپنی مسند میں اسکے مندرجات کو روایت کردیا ہے ۔احادیث کی   دوسری کتابوں میں بھی اس صحیفے کی احادیث ملتی ہیں ۔

       اس صحیفے کی علمی اہمیت بہت زیادہ ہے ،کیونکہ یہ ایک تاریخی دستاویز ہے اور اس سے حضور   صلی اللہ  تعالیٰ علیہ وسلم کے سامنے احادیث لکھنے کا واضح ثبوت بھی ملتاہے ۔(۶۵)

       کہتے ہیں اس میں ایک ہزار حدیثیں تھیں ۔

 حضرت زید بن ثابت کی  مرویات

       آپ جلیل القدر صحابی اور جامع قرآن ہیں ،عہد صدیقی میں جمع وتدوین قرآن کاکام آپ ہی نے انجام دیا ۔پھر دورعثمانی میں مصحف شریف کی نقلیں آپ ہی نے تیار کیں اور دسرے علاقوں میں اسکو تقسیم کیاگیا ۔

        کاتب وحی تھے اورحضور اقدس   صلی اللہ  تعالیٰ علیہ وسلم کے فرمان کے مطابق عبرانی زبان سیکھی تھی ، احادیث کا عظیم ذخیرہ آپکو محفوظ تھا، لیکن مشکل یہ تھی کہ آپ کتابت کے مخالف تھے ،ایک مرتبہ حضرت امیر



Total Pages: 604

Go To
$footer_html