Book Name:Mahboob e Attar ki 122 Hikayaat

زم رضاعطاری عَلَیْہِ رَحمَۃُ اللہِ الباریکے دَم کرنے کی برکت سے میرے ہاتھ کی سُوجن بہت کم ہوگئی ہے اور اس نے کام کرنا بھی شروع کردیا ہے ۔

اللہ     عَزَّوَجَلَّ کی اُن پر رَحمت ہو اور ان کے صَدقے ہماری بے حساب مغفِرت ہو۔  امین بِجاہِ النَّبِیِّ الْاَمین صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وسلَّم

صَلُّوا عَلَی الْحَبِیب !                                                      صلَّی اللہُ تعالٰی علٰی محمَّد

(۵۱بِغیرآپریشن شِفا مل گئی

          وکیلوں اور ججوں میں دعوتِ اسلامی کا مَدَنی کام کرنے کے لئے بنائی گئی ’’مجلسِ وُکَلا‘‘ فاروق نگر (لاڑکانہ باب الاسلام پاکستان) کے رُکن عبدالواحد عطاری کا بیان کچھ یوں ہے کہ میرا ڈیڑھ سالہ بیٹا13  مئی 2012 کو گرمی کی شدت کی وجہ سے شدید بیمار ہوگیا ،اس کے پھیپھڑوں میں پانی بھر گیا تھاجس کی وجہ سے اَسپتال میں داخل کروانا پڑا جہاں وہ14دن زیرِعلاج رہا مگر حالت مزید خراب ہوگئی ۔ چنانچِہ27 مئی2012کوہم اسے بابُ المدینہ کراچی کے ایک اچھے اَسپتال میں لے گئے جہاں وہ مزید 15دن زیرِ علاج رہا ۔بالآخر ڈاکٹروں نے کہا کہ بچّے کے پھیپھڑوں کا بڑا آپریشن ہوگا ۔یہ سن کر ہم بہت پریشان ہوئے ، انہی دنوں محبوبِ عطّار حاجی زم زم رضا عطاری علیہ رحمۃُ اللہِ الباریمیرے بیٹے کی عیادت کرنے کے لئے اَسپتال تشریف لائے۔دعاکرنے کے بعد میرے بیٹے کو دَم کیا اور مجھے تسلّی دی کہ ہمّت رکھئے اِنْ شَآءَ اللہ عَزَّ  وَجَلَّ دواؤں سے ہی فائدہ ہوجائے گا،آپریشن نہیں

 



Total Pages: 208

Go To