Book Name:Mahboob e Attar ki 122 Hikayaat

کارڈ منظرِ عام پر آتا تو ہمیں محبوبِ عطّار کے سینے پر ضَرور دکھائی دیتا ۔یوں یہ چلتے پھرتے خاموش رہ کر بھی کارڈکے ذریعے نیکی کی دعوت دیا کرتے تھے ۔

اللہ     عَزَّوَجَلَّ کی اُن پر رَحمت ہو اور ان کے صَدقے ہماری بے حساب مغفِرت ہو۔  امین بِجاہِ النَّبِیِّ الْاَمین صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وسلَّم

صَلُّوا عَلَی الْحَبِیب !                                                                                                      صلَّی اللہُ تعالٰی علٰی محمَّد

بارگاہِ رسالت میں غیبت کُش کارڈ کی مقبولیَّت

            بابُ المدینہ کراچی کے ایک اسلامی بھائی کی تحرِیر کا اِقتِباس ہے:۱۸ شوال المکرم ۱۴۳۰ھ بمطابق8اکتوبر2009ء شبِ جمعرات( یعنی بدھ اور جمعرات کی درمیانی رات )میں نے خواب میں سرکار مدینہ صلَّی اللہ تعالٰی علیہ واٰلہٖ وسلَّم ، کئی صَحابۂ کرام علیہم الرضوان اورسرکارِ غوثِ پاک رحمۃُ اللہ تعالٰی علیہ کی زیارت کی،ایک مبلغِ دعوتِ اسلامی بھی حاضِرِ خدمت تھے،تاجدارِ رسالت  صلَّی اللہ تعالٰی علیہ واٰلہٖ وسلَّم کی اجازت سے اُس مبلغ  نے غیبت کُش کارڈحاضِرین کو پیش کرنا شروع کئے،اپنے کرمِ خاص سے گدایانِ در کی دلجوئی کی خاطِر ایک کارڈ سرکارِ نامدارصلَّی اللہ تعالٰی علیہ واٰلہٖ وسلَّم نے بھی قَبول فرمایا اوراپنے غلاموں کی حوصلہ افزائی کیلئے اپنے مبارَک سینے پر سجالیا۔

صـلّوا عـلَی الـحبیب !                              صلی اللہ تعالٰی علٰی محمد

         اَلْحَمْدُللّٰہعَزَّوَجَلَّ! دعوتِ اسلامی کی طرف سے غیبت کے خلاف اعلانِ جنگ ہے اور دعوتِ اسلامی کا بچّہ بچّہ نعرہ لگاتا ہے کہ غیبت کریں گے نہ

 



Total Pages: 208

Go To