Book Name:Mahboob e Attar ki 122 Hikayaat

کہ لکھ کر بات کرنا ناممکن نہیں ہے۔امیر اہل سنت  دامت برکاتہم العالیہنے ہمیں جو مَدَنی انعام دیا ہے کہ آج چار مرتبہ لکھ کر بات کی یا نہیں ؟ تو آپکا اپنا عالَم یہ ہے کہ کبھی کبھی کئی دن تک سخت ضرورت کے علاوہ بولتے ہی نہیں ہیں ،آپ دامت برکاتہم العالیہ خود کہتے ہیں ایک بارمدینۂ منوَّرہزادَھَااللہُ شَرَفًاوَّ تَعظِیْماًسے جدائی کے بعدزبان پرایساقفلِ مدینہ لگاکہ تقریباً 15دن تک (سوائے سلام ،جوابِ سلام،چھینک پرحمد، چھینکنے والے کی حمد پرجواب وغیرہ کے )بولنے سے بچارہا۔اتنا خاموش رہنے اور قفلِ مدینہ لگانے کے بعد ہمیں صِرْف اتنا ارشاد فرمایا ہے کہ کم از کم چار بار لکھ کر بات کیجئے۔مکتبۃ المدینہ نے ایک ’’قفلِ مدینہ پیڈ‘‘ شائع کیا ہے جس میں تحریری گفتگو کا طریقۂ کار بھی لکھ ہوا ہے اسے حاصل کریں۔(سلسلہ ’’کھلے آنکھ صلِّ علیٰ کہتے کہتے‘‘ بتغیّرِقلیل۵ محرم الحرام ۱۴۳۲ھ بمطابق  12دسمبر 2010ء) اللہ     عَزَّوَجَلَّ کی اُن پر رَحمت ہو اور ان کے صَدقے ہماری بے حساب مغفِرت ہو۔  امین بِجاہِ النَّبِیِّ الْاَمین صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وسلَّم

صَلُّوا عَلَی الْحَبِیب !                                                                                                 صلَّی اللہُ تعالٰی علٰی محمَّد

نگاہیں نیچی ر کھنے کی اَہَمّیَّت

          منقول ہے:جو شخص اپنی آنکھ کو حرام سے پُر کرتا ہے اللہ عَزَّوَجَلَّ  بروزِ قیامت اسکی آنکھ میں جہَنَّم کی آگ بھر دے گا۔(مُکاشَفَۃُ الْقُلُوب ص۱۰)

          اپنی آنکھوں کو جہنَّم کی آگ سے بچانے کے لئے نگاہوں کی حفاظت نہایت ضروری ہے اور اس کے لئے نگاہیں نیچی رکھنے کی عادت بنانا بے حد مُفید ہے ، چنانچہ

 



Total Pages: 208

Go To