Book Name:Mahboob e Attar ki 122 Hikayaat

مدنی قافلے کے مسافر بن گئے ہیں۔

صَلُّوا عَلَی الْحَبِیب !                                                                           صلَّی اللہُ تعالٰی علٰی محمَّد

(۱۷) شدید بیماری میں بھی نمازکی فِکر

          زم زم نگر حیدر آباد(باب الاسلام سندھ) کے اسلامی بھائی ساجِد عطّاری کا بیان ہے کہ مَدَنی انعامات کے تاجدار علیہ رحمۃُ اللہ الغفّار کا شدیدبیماری میں بھی نماز کی حفاظت کا بہت ہی ذہن تھا ۔ ایک مرتبہ میں رات کو ان کی دیکھ بھال کے لئے اَسپتال میں موجود تھا کہ مجھ سے فرمایا : مجھے فجر کی نماز میں اٹھا دیجئے گا۔میں نے جب فَجْر میں اذان کے بعد آپ کو آواز دی تو ایک ہی آواز پر اٹھ گئے اورمجھ سے فرمانے لگے: ’’جَزَاکَ اللہُ خَیْرًا، شکریہ بیٹا!آپ نے مجھے نماز فجر کے لئے جگایا۔‘‘میں نے یہ بھی دیکھا کہ شدید بیمار ہونے کے باوجودکہ آپ سے بیٹھا بھی نہیں جاتا تھا تو آپ لیٹے لیٹے مٹّی کی پلیٹ اپنے سینے پر اُلٹی رکھ کر اس سے تَیَمُّم کرتے اور اِشاروں سے نماز ادا کرلیا کرتے۔ میں نے نہیں دیکھا کہ حاجی زم زم رضا عطاری علیہ رحمۃُ اللہِ الباری کی بیماری کے اندر ہوش وحواس کے عالَم میں کوئی نماز چھوٹی ہو ۔

اللہ     عَزَّوَجَلَّ کی اُن پر رَحمت ہو اور ان کے صَدقے ہماری بے حساب مغفِرت ہو۔  امین بِجاہِ النَّبِیِّ الْاَمین صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وسلَّم

صَلُّوا عَلَی الْحَبِیب !                                                                                                             صلَّی اللہُ تعالٰی علٰی محمَّد

 



Total Pages: 208

Go To