Book Name:Mahboob e Attar ki 122 Hikayaat

عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وسلَّم  

صَلُّوا عَلَی الْحَبِیب !                                                                                                      صلَّی اللہُ تعالٰی علٰی محمَّد

(۱۰۹)حاجی مشتاق کی حاجی زم زم سے ملاقات

          حاجی زم زم رضا عطاری علیہ رحمۃُ اللہِ الباری کے تیجے (سِوُم)کے موقع پر دعوتِ اسلامی کے مَدَنی مراکز پر ۲۳ذوالقعدہ ۱۴۳۳ھ بروز جمعرات کو اِیصالِ ثواب کا اہتمام کیا گیا،عَصْر تا مغرِب قرآن خوانی ہوئی اورنَمازِ مغرِب کے بعد عالَمی مَدَنی مرکز فیضانِ مدینہ بابُ المدینہ کراچی میں ہفتہ وار سنّتوں بھرے اجتِماع میں بیان کرتے ہوئے شیخِ طریقت، امیرِ اہلسنّت بانیٔ دعوتِ اسلامی حضرت علامہ مولانا ابوبلال محمد الیاس عطارؔ قادری دامت برکاتہم العالیہ نے فرمایا:غلامزادۂ عطّارؔ حاجی عُبید رضا نے مجھے کچھ یوں بتایا: حاجی زم زم رضا عطاری عَلَیْہِ رَحمَۃُ اللہِ الباری کے وصال سے کم وبیش تین ہفتے پہلے 14ستمبر2012ء کی رات میں نے خواب میں ایک منظر کچھ یوں دیکھا کہ مرحوم نگرانِ شوریٰ حاجی مشتاق عطاری عَلَیْہِ رَحمَۃُ اللہِ الباری تیزی سے کہیں جارہے ہیں ، میں نے بے تکلُّفی والے انداز میں پوچھا: حاجی مشتاق !آپ اتنی جلدی جلدی کہاں جارہے ہیں ؟ فرمایا: زم زم بھائی کو لینے جارہا ہوں ، میرے ساتھ پیارے آقا صلَّی اللہ تعالٰی علیہ واٰلہٖ وسلَّم بھی ہیں۔میں نے جوں ہی نگاہ اٹھائی میری نظرسرکارِ مدینہ  صلَّی اللہ تعالٰی علیہ واٰلہٖ وسلَّمکے چہرۂ انور پر پڑی جو کہ حاجی مشتاق کے ساتھ ہی جلوہ فرما تھے، ایک دم میرے ہونٹ بند ہو گئے، مجھ سے کچھ بھی


 

 



Total Pages: 208

Go To