Book Name:Mahboob e Attar ki 122 Hikayaat

نے فرمایا: ’’حاضِرین اور مَدَنی چینل کے ناظِرین سے مَدَنی التجا ہے کہ حاجی زمزم رضا کے لیے خوب خوب اِیصالِ ثواب فرمائیں۔ قرانِ کریم کے تحفے ، درود پاک پڑھنے کے تحفے، مَدَنی قافلے (میں سفرکی نیَّتوں )کے تحفے ، مَدَنی انعامات پر عمل کرکے اس کے تحفے،ہمارے جامعات المدینہ ومدارس المدینہ بھی قرآن خوانیاں کرکے ہمیں جلدی جلدی اِیصالِ ثواب کے تحفے دیں۔‘‘  اَ لْحَمْدُللّٰہعَزَّوَجَلَّ! امیراہلسنّت  دامت برکاتہم العالیہ کی آواز پر لبیک کہتے ہوئے اسلامی بھائیوں اور اسلامی بہنوں نے حاجی زم زم رضا عطاری عَلَیْہِ رَحمَۃُ اللہِ الباری کو خوب خوب اِیصالِ ثواب کیا ، جس کی کچھ تفصیل آخری صفحات پر ملاحظہ کی جاسکتی ہے ۔

صَلُّوا عَلَی الْحَبِیب !                                                                                                      صلَّی اللہُ تعالٰی علٰی محمَّد

(۱۰۵)’’فیضانِ زم زم‘‘مسجد بنانے کی نیتیں

           شیخِ طریقت امیر اہلسنّت  دامت برکاتہم العالیہ نے حاجی زم زم رضا عطاری عَلَیْہِ رَحمَۃُ اللہِ الباری کے وصال کی خبرسنانے کے بعدمرحوم کے اِیصالِ ثواب کے لئے ’’مسجد فیضانِ زم زم ‘‘کے نام سے دنیا بھر میں مسجدیں بنانے کی ترغیب دیتے ہوئے کچھ یوں فرمایا:’’میری خواہش ہے کہ اللہ   کا کوئی نیک بندہ اٹھے اور اللہ عَزَّوَجَلَّ کے اس نیک بندے کی برکتیں لینے کے لیے ایک مسجد بنانے کی مجھے خوشخبری دے دے کہ وہ ’’فیضانِ زمزم ‘‘ نامی ایک مسجد بنادے گا، میں دعا کرتا ہوں کہ اللہ  تعالیٰ اُس کے لیے جنّت میں عالی شان محل عطا فرمائے، میں زم زم رضا سے بَہُتمَحَبّت کرتا رہا


 

 



Total Pages: 208

Go To