Book Name:Mahboob e Attar ki 122 Hikayaat

لئے تیّار ہو جائیں۔ اللہ     عَزَّوَجَلَّ کی اُن پر رَحمت ہو اور ان کے صَدقے ہماری بے حساب مغفِرت ہو۔  امین بِجاہِ النَّبِیِّ الْاَمین صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وسلَّم

صَلُّوا عَلَی الْحَبِیب !                                                                                                                                                      صلَّی اللہُ تعالٰی علٰی محمَّد

(۸۳)بیماری میں بھی دکھیاروں کی خیرخواہی

           مجلس مَدَنی بہاروں کے پاکستان سطح کے نگران ،مبلغِ دعوتِ اسلامی حاجی محمدامتیاز عطّاری کا بیان ہے کہ میں فیضانِ مدینہ باب المدینہ کراچی کے مُستَشْفٰی (اَسپتال ) میں حاجی زَم زَم رضا عطاری عَلَیْہِ رَحمَۃُ اللہِ الباری کی عیادت کے لئے موجود تھا کہ اچانک ان کی طبیعت بگڑی اور سارا جسم نہایت شدت سے کانپنے لگا، ڈاکٹر نے ان کو انجکشن لگایا ،تھوڑی دیر بعد کپکپی جاتی رہی اور ان کی طبیعت کچھ سنبھل سی گئی ، اُسی وَقْت ایک اسلامی بھائی کا فون آیا، انہوں نے نہ صرف فون سنا بلکہ اُن کی پریشانی سن کر ان کی دلجوئی کی اور امیرِ اہلسنّت  دامت برکاتہم العالیہکے رسالے ’’رُوحانی علاج ‘‘ سے وظائف بھی بتائے۔ میں نے یہ دیکھ کر عرض کی کہ حضور آپ کی تو اپنی طبیعت ناساز ہے، فی الحال فون رسیو (Receive)نہ کیا کریں تو کچھ اِس طرح فرمایا: بے چارے دُکھیارے کتنی آس سے فون کرتے ہوں گے میں ان کی دلجوئی کی نیّت سے فون وُصول کرلیتا ہوں۔

اللہ     عَزَّوَجَلَّ کی اُن پر رَحمت ہو اور ان کے صَدقے ہماری بے حساب مغفِرت ہو۔  امین بِجاہِ النَّبِیِّ الْاَمین صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وسلَّم

صَلُّوا عَلَی الْحَبِیب !                                                                                                      صلَّی اللہُ تعالٰی علٰی محمَّد


 

 



Total Pages: 208

Go To