Book Name:Rehnuma e Mudarriseen

 

طریقۂ تَدْرِیس

ترتیب : اس سبق کی ترتیب بھی  قریبُ الصَّوت و قریبُ الْمَخْرَج کے اعتبار سے رکھی گئی ہے تاکہ حُرُوف کی ادائیگی میں فرق واضح ہوسکے  ۔

قواعِد سمجھانااورسبق پڑھانا :

    مُدَرِّس کو چاہیے کہ٭ سب سے پہلے مدنی منّے کو سمجھائے کہ دو زبر   (  ً)دو زیر (  ٍ)  اور دو پیش –(’‘) کو تنوین کہتے ہیں ۔ ٭ تنوین در اصل نون ساکِن (نْ)ہوتا ہے جو کلمے کے آخر میں آتا ہے اسی لئے تنوین کی آواز نون ساکِن کی طرح ہوتی ہے ۔ ٭ جس حَرْف پر تنوین ہو اس حرف کو مُنَوَّنْ کہتے ہیں  ۔ ٭مدنی منّیکو تنوین کی مشق کرواتے وقت  تنوین میں قلقلہ نہ کرنے دیجئییعنی تنوین کی آواز ہلنے نہ پائے ۔ ٭چونکہ تنوین درحقیقت نون ساکن ہوتا ہے لہٰذا اس کا سکون صحیح ادا کروایا جائے  ۔ ٭ نو ن ساکِن کو حذف کرنے سے بچاتے ہوئے نو ن ساکِن کی آواز کو ظاہر کر کے پڑھائیے ۔ ٭زبر کی تنوین کے بعد کہیں (الف) اور کہیں (ی) لکھا جاتا ہے ہجے کرواتے وقت اس کا نام نہ لیں جیسے ( تًا)  ،  (دًی) ۔ ٭ اس سبق میں غنہ کرنے کی مشق نہ کروائی جائے ۔

٭ تنوین کے ہجے اس طرح کروائیے ۔   مًا =  میم دو زبر مَنْ ۔   مٍ =میم دو زیر مِنْ ۔   م’‘  =میم دو پیش مُنْ ۔   مَنْ، مِنْ، مُنْ ۔ ٭ اس سبق میں بھی حُرُوف قریبُ الصَّوت یعنی ملتی جلتی آواز والے



Total Pages: 39

Go To