Book Name:Aik Aankh wala Aadmi

حفاظت کی عادت بنانے کے لئے سونے کے اوقات کے علاوہ کم از کم 12 منٹ آنکھیں بند رکھیں؟‘‘ پر عمل کی سَعادَت حاصِل ہوجائے۔نىت کرلىجئے کہ نظر کی حفاظت کی عادت بنانے کی خاطر روزانہ کم ازکم12 منٹ آنکھىں بند رکھوں گا اور اس دوران فضول نہ بیٹھئے بلکہ آخِرَت کے بارے مىں غور وفکر کرتے رہئے، اىمان کی سلامتی،سکرات کی سختیوں اور قَبر وحشر کے اَحوال کے متعلق غور وفکر کیجئے، کبھى جنّت کا تو کبھی جہنّم کا تصوّر کیجئے، اللہ عَزَّوَجَلَّ  کی عطا کردہ نعمتوں پر غور کیجئے،اپنے گناہوں کو ىاد کیجئےاور اپنے آپ کو اس طرح ڈرائیےکہ اگر اللہ عَزَّ  وَجَلَّ  ناراض ہوگىا، رسول پاک صَلَّی اللّٰہ تعالٰی علیہ واٰلہٖ وسلَّم روٹھ گئے تو مىرا کىا بنے گا؟کىا عجب!  ندامت سے آنسو بہہ جائىں اور ہمارا بیڑا پار ہوجائے۔

ہمیں ہر وقت  اللہ عَزَّ  وَجَلَّ  کی بے نیازی سے ڈرتے رہنا اور ہر گناہ سے بچنا چاہئے اگرچہ بظاہروہ گناہ  ہمیں چھوٹا نظر آئے۔ممکن ہے کہ ہم جس گناہ کو چھوٹا سمجھ رہے ہیں وہی رب تعالیٰ کی دائمی ناراضی کا سبب بن جائے۔لہٰذاہمیں  اپنے ہر ہرعضو کى حفاظت  کر نی چاہئے۔اسی مضمون کوشیخِ طریقت، امِیرِ اہلسنّت، بانیِ دعوتِ اسلامی حضرت علامہ مولانا ابو بلال محمد الیاس عطّار قادری رضوی ضیائی  دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہ نے اپنے ایک شعر میں کچھ یوں ذکر فرمایا ہے:

دوزخ کى کہاں تاب ہے کمزور بدن مىں

ہر عضو کا عطار لگا قفلِ مدىنہ

موٹر سائیکل بیچ دی

مفتیِ دعوتِ اسلامی حضرت مولانا مفتی محمد فاروق عطاری مدنی عَلَیْہِ رَحمَۃُ اللّٰہ ِالْغَنِی آنکھوں کے قفلِ مدينہ کے تعلق سے زبردست ذِہن رکھتےاور اس پر سختی سے عامل تھے،اس کا اندازہ اس بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ آپ نے اپنی موٹر سائيکل اس لئے بيچ دی کہ چلاتے ہوئے غير محرم عورَت آڑے آجانے کی صورت میں نظر کی حفاظت بے حد کٹھن ہے۔ایک اسلامی بھائی کا بیان ہے کہ مجھے ايک بار کسی گاڑی ميں مفتی فاروق عطاری عَلَیْہِ رَحمَۃُ اللّٰہ ِالْبَارِی  کے ساتھ سفر کا موقع ملا ميں نے انہيں شيشوں کے باہر نظر ڈالتے ہوئے نہيں ديکھا ۔

میٹھے میٹھے اسلامی بھائیو! ڈرائیونگ کرتے ہوئے غیر عورتوں سے اپنی نظر کی حفاظَت کرنا  انتہائی مشکل ہے ۔ىہ مُفْتى فاروق رَحْمَۃُ اللّٰہ ِتعالٰی علیہ کا تقوىٰ اورخوفِ خدا تھا کہ انہوں نے بدنِگاہى کے اندیشہ سے ڈرائىونگ چھوڑ دى اور بائىک بىچ دى۔

میٹھے میٹھے اسلامی بھائیو! خود کو گناہوں سے بچانے اور نیکیوں کا جذبہ پانے کی خاطر دعوتِ اسلامی کےسنتوں کی تربیت کے مدنی قافلوں میں سفر کو اپنا معمول بنا لیجئے۔اللہ عَزَّ وَجَلَّ  ہم سب کوبدنِگاہی سے بچنے کے ساتھ ساتھ فضول نظری اور ہر طرح کی فضولیات سے بچنے کی توفیق عطا فرمائے۔ اٰمین بجاہِ النبی الامین صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم

ماخذ  ومراجع

نمبر شمار

کتاب

مصنف/ مولف/ مطبوعہ

1

قرآن مجید

کلام باری تعالٰی مکتبة المدینه باب المدینہ کراچی

2

کنز الایمان

اعلٰی حضرت امام احمد رضاخان، متوفی ۱۳۴۰ھ،مکتبة المدینه باب المدینه کراچی

3

مسند امام احمد

امام احمد بن محمد بن حنبل، متوفی ۲۴۱ھ ،دار الفکر، بیروت۱۴۱۴ھ

4

صحیح بخاری

امام ابو عبد الله محمد بن اسماعیل بخاری، متوفی ۲۵۶ھ،دار الکتب العلمیة

5

صحیح مسلم

امام مسلم بن حجاج قشیری، متوفی ۲۶۱ھ،دار ابن حزم، بیروت۱۴۱۹ھ

6

سنن ابن ماجه

امام ابو عبد الله محمد بن یزید ابن ماجه، متوفی ۲۷۳ھ،دار المعرفه، بیروت۱۴۲۰ھ

7

سنن الترمذی

امام ابو عیسیٰ محمد بن عیسیٰ ترمذی، متوفی ۲۷۹ھ،دار الفکر ، بیروت۱۴۱۴ھ

8

سنن ابی داود

امام ابوداودسلیمان بن اشعث سجستانی،متوفی۲۷۵ھ، داراحیاءالتراث العربی،بیروت ۱۴۲۱ھ

 



Total Pages: 16

Go To