$header_html

Book Name:Miraat-ul-Manajeeh Sharah Mishkaat-ul-Masabeeh jild 4

نہ ہوں گے کھائے لہذا حدیث پر یہ اعتراض نہیں کہ جب یہ چڑیاں حضرت طلحہ کے لیے لائی گئیں تھیں تو دوسروں نے کیوں کھائیں کیونکہ یہ کھانے والے ان کے بے تکلف دوست تھے۔

۳؎ غالبًا فاکلنا کی ف تعلیلیہ ہے یعنی آپ نے فرمایا کہ یہ گوشت ہمارے لیے حلال ہے کیونکہ ہم نے اس قسم کے ہدایا حضور انور صلی اللہ علیہ و سلم کے ساتھ کھائے ہیں۔اس سے بھی مذہب حنفی ثابت ہوتا ہے کہ جس شکار میں محرم نے مدد نہ دی ہو محرموں کو اس کا کھانا حلال ہے۔


 



Total Pages: 445

Go To
$footer_html