Book Name:Nisab-ul-Mantiq

نوع کی تعریف :

            ’’ھُوَکُلِّیٌّ مَقُوْلٌ عَلیٰ کَثِیْرِیْنَ مُتَّفِقِیْنَ بِالْحَقَائِقِ فِیْ جَوَابِ مَاھُوَ‘‘نوع ایسی کلی ہے جو ماھو کے جواب میں ایسے بہت سارے افراد پر بولی جائے جن کی حقیقتیں ایک جیسی ہوں  ۔ جیسے :  انسان  ۔

وضاحت :

            جیسے زید ، عمر، بکران تینوں کی حقیقتیں ایک جیسی ہیں (یعنی تینوں حیوان ناطق ہیں ) جب ہم ان کے بارے میں ما ھم سے سوال کریں گے توجواب میں انسان آئے گا لہذا معلوم ہواکہ انسان نوع ہے ۔  

فصل :

            ’’ھُوَ کُلِّیٌّ مَقُوْلٌ عَلَی الشَّیْ ئِ  فِی جَوَابِ ’’أَ یُّ شَیْئٍ ھُوَ فِیْ ذَاتِہِ‘‘ یعنی فصل ایسی کلی ہے جو ای شی ھو فی ذاتہ کے جواب میں کسی شی پر بولی جائے جیسے :  ناطق ۔

وضاحت :

            جب ہم انسان کے بارے میں سوال کریں کہ أَلْاِنْسَانُ أَیُّ شَیْ ئٍ ھُوَ فِیْ ذَاتِہٖ یعنی انسان اپنی ذات کے اعتبار سے کیا ہے تو جواب دیا جائے گا کہ وہ ناطق ہے لہذا معلوم ہوا کہ ناطق انسان کیلئے فصل ہے ۔

٭٭٭٭٭

 

سبق نمبر :  21

{…جنس کی تقسیمات…}

 جنس کی دوطرح سے تقسیم کی جاتی ہے ۔  

(۱)…قُرْب و بُعد کے اعتبار سے          (۲)… ترتیب کے اعتبار سے

۱ ۔ قُرْب وبُعد کے اعتبار سے جنس کی تقسیم

اس اعتبار سے جنس کی دوقسمیں ہیں  ۔

۱ ۔ جنس قریب                 ۲ ۔ جنس بعید

۱ ۔ جنس قریب :

             کسی ماہیت کی جنس قریب وہ جنس ہے کہ اس جنس کے جس کسی فرد کو بھی اس ماہیت کے ساتھ ملا کر ماہما؟کے ذریعہ سوال کیا جائے تو جواب میں وہ جنس بولی جائے ۔ جیسے :  انسان کی جنس قریب حیوان ہے کیونکہ حیوان کے جس فرد کو انسان کے ساتھ ملا کر ماہما؟سے سوال کریں تو جواب میں حیوان واقع ہوگا ۔ مثلا الانسان والاسد ماہما؟ الانسان والحمار ماہما؟ الانسان والبغل ماہما؟ ان سب سوالوں کاجواب ’’حیوان‘‘آئے گا ۔ لہذا ثابت ہوا کہ انسان کی جنس قریب حیوان ہے ۔

۲ ۔  جنس بعید :

            کسی ماہیت کی جنس بعید وہ جنس ہے جس کے بعض افراد کو جب اس ماہیت کے ساتھ ملا کر ماہما؟کے ذریعہ سوال کیا جائے تو جواب میں وہ جنس واقع ہواور جب بعض دوسرے افراد کو اس ماہیت کے ساتھ ملا کر ماہما؟کے ذریعہ سوال کیا جائے تووہ جنس جواب میں نہ بولی جائے بلکہ کوئی دوسری جنس جواب میں بولی جائے ۔ جیسے :  انسان کی جنس بعید جسم نامی ہے کیونکہ جسم نامی کے افراد میں کچھ ایسے افراد ہیں کہ جب ان کو انسان کے ساتھ ملاکرماہما؟کے ذریعہ سوال کیا جائے توجواب میں جسم نامی آئے گا اور بعض دوسرے ایسے افراد ہیں کہ جب ان کو انسان کے ساتھ ملا کر ماہما؟کے ذریعہ سوال کیا جائے تو جواب میں جسم نامی واقع نہ ہوگا ۔ چنانچہ جب سوال کیا جائے :  الانسان والنخل ماہما؟ الانسان والجامون(جامن)ماہما؟ توجواب میں جسم نامی آئے گا اور جب سوال کریں کہ الانسان والحمار ماہما؟ الانسان والکلب ماہما؟توجواب میں جسم نامی نہیں بلکہ حیوان آئے گا حالا نکہ نخل اورجامن کی طرح حمار اور کلب بھی جسم ِنامی کے افراد میں داخل ہیں  ۔

۲ ۔  ترتیب کے اعتبار سے جنس کی تقسیم

اس اعتبار سے جنس کی چار قسمیں ہیں  :

۱ ۔  جنس عالی                     ۲ ۔  جنس سافل      ۳ ۔  جنس متوسط                  ۴ ۔  جنس مفرد

۱ ۔ جنس عالی :

            ’’ھُوَ مَالاَیَکُوْنُ فَوْقَہٗ جِنْسٌ وَیَکُوْنُ تَحْتَہٗ جِنْسٌ‘‘یعنی وہ جنس جس کے اوپر توکوئی جنس نہ ہو لیکن اس کے نیچے جنس پائی جائے ۔ جیسے :  جوہر  ۔

فائدہ :

             جنس عالی کو جنس الاجناس بھی کہتے ہیں  ۔

 

 



Total Pages: 54

Go To